19 ستمبر, 2014 | 23 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

آئی ایس آئی سیاسی سیل پانچ سال قبل ختم کردیا گیا تھا'

سینیٹ کے اجلاس کا ایک منظر۔ فائل تصویر

اسلام آباد: سیکریٹری دفاع لیفٹنٹ جنرل ریٹائرڈ آصف یاسین ملک نے سینیٹ میں بتایا کہ انٹر سروسز انٹیلی جنس (آئی ایس آئی) میں سیاسی سیل پانچ سال قبل ختم کردیا گیا تھا اور آئی ایس آئی ایسے کسی سیل کو نہیں چلاتی۔

ڈان نیوز کے مطابق سینیٹ میں دفاعی پیداوار پر قائمہ کمیٹی کی میٹنگ کے دوران ملک نے بتایا کہ فی الحال آئی ایس آئی میں کوئی سیاسی سیل کام نہیں کررہا۔

سیکریٹری دفاع نے مزید کہا کہ جب شمسی ایئر بیس امریکہ کے زیرِ استعمال تھا تو وہاں سے ڈرون حملے کئے جاتے تھے اور یہ فضائی حملے حکومت کی اجازت سے ہوتے تھے۔

بیس اکتوبر دوہزار گیارہ کو یہ ایئر بیس امریکہ کے بعد متحدہ عرب امارات کو سب لیز کردیا گیا تھا جس کی اجازت پرویز مشرف نے دی تھی۔ امریکہ نے گیارہ دسمبر دوہزار گیارہ کو یہ ایئربیس خالی کردیا گیا تھا۔

اجلاس کے دوران سیکریٹری دفاع نے رواں سال کی دفاعی بجٹ کی تفصیلات سینیٹ کی دفاعی کمیٹی میں پیش کی۔

انہوں نے  بتایا کہ رواں سال کا مجموعی دفاعی بجٹ پانچ سو پینتالیس ارب روپے ہے۔

دفاعی بجٹ میں سے فوج کا حصہ دو سو چونسٹھ ارب ،ایئر فورس کا بجٹ  ایک سو  چودہ  ارب اورنیوی کا  باون ارب  روپے ہے۔ دفاعی بجٹ میں سے  بانوے ارب کی رقم ائی ایس ائی، جوائنٹ اسٹاف ہیڈ کورٹر، ائی ایس پی ار اور دفاعی پیداوار کے اداروں کو فراہم کی جاتی ہے۔

سیکریٹری دفاع کا کہنا تھا کہ دفاعی اداروں، بشمول ائی ایس ائی کا بجٹ باقاعدہ آڈٹ کیا جاتا ہے۔  فوج ٹیکسوں کی مد میں اٹھائیس ارب روپے واپس کرتی ہے۔

امریکا نے نائین الیون کے بعد اب تک پاکستان کو بارہ ارب ڈالر دیے ہیں اور شمسی ائیر بیس استعمال کرنے پر امریکہ نے پاکستان کو ایک پائی بھی ادا نہیں کی۔

انہوں نے بتایا کہ نیٹو سپلائی کے بعد سے امریکا کی جانب سے دفاعی امداد بحال ہوچکی ہے۔

اجلاس میں شامل سینیٹر مشاہد حسین نے بتایا کہ کہ تینوں مسلح افراد کے سربراہاں دفاعی کمیٹی کے بلانے پر مستقبل میں پیش ہوں گے۔

سیکریٹری دفاع نے مزید بتایا کہ کوای لیشن اور اتحادی سپورٹ فنڈ کی امداد براہ راست جی ایچ کیو کونہیں ملتی۔

اس حصے سے مزید

کسی کو جمہوریت پر کلہاڑا نہیں چلانے دیں گے، وزیراعظم

قومی اسمبلی میں اظہارِ خیال کرتے ہوئے نواز شریف کا کہنا تھا کہ حکومت کسی کو بھی قومی سلامتی سے کھیلنے نہیں دے سکتی ہے۔

منی لانڈرنگ کیس: شریف خاندان باعزت بری

غیر قانونی اثاثہ جات، حدیبیہ پیپر مل اور رائے ونڈ محل کے ریفرنسز میں شریف خاندان کے دیگر افراد کے نام بھی شامل تھے۔

اجنبی سرزمین پر خطرات سے دوچار زندگی

ہزاروں پاکستانی بحرین کی پولیس اور شاہی افواج میں کام کررہے ہیں، جنہیں فسادات کے دوران شدید خطرات کا سامنا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

رودرہیم کا سبق

بچوں پر ہونیوالے جنسی تشدد پر ہماری شرمندگی کی سمت غلط ہے۔ شرم کی بات تو یہ ہے کہ ہم اس کو روکنے کی کوشش نہ کریں-

رکاوٹیں توڑ دو

اشرافیہ تعلیمی نظام کا بیڑہ غرق کرنے پر تلی ہوئی ہے جو خاص طور سے 1970ء کی دہائی کے بعد سے بد سے بدتر ہورہاہے۔

بلاگ

مووی ریویو: دختر -- دلوں کو چُھو لینے والی کہانی

اپنی تمام تر خوبیوں اور کچھ خامیوں کے ساتھ اس فلم کو پاکستانی نکتہ نگاہ سے پیش کیا گیا ہے۔

پھر وہی ڈیموں پر بحث

ڈیموں سے زراعت کے لیے پانی ملتا ہے، پانی پر کنٹرول سے بجلی پیدا کی جاسکتی ہے اور توانائی بحران ختم کیا جاسکتا ہے۔

شاہد آفریدی دوبارہ کپتان، ایک قدم آگے، دو قدم پیچھے

اس بات کی ضمانت کون دے گا کہ ماضی کی طرح وقار یونس اور شاہد آفریدی کے مفادات میں ٹکراؤ پیدا نہیں ہوگا۔

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔