21 اگست, 2014 | 24 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

پیپلز پارٹی کارکنان اور اے ایس ایف اہلکاروں کے درمیان تصادم

پیپلز پارٹی کارکنوں اور ایئر پورٹ سکیورٹی فورس کے جوانوں کے درمیان لاٹھیوں اور گھوسوں کا تبادلہ۔ – پی پی آئی فوٹو

لاہور: لاہور ایئر پورٹ پر پیپلز پارٹی پنجاب کے نو منتخب صدرمیاں منظور وٹو کے استقبال کیلئے آنے والے پارٹی کارکنوں اور ایئر پورٹ سکیورٹی فورس کے جوانوں کے درمیان لاٹھیوں اور گھوسوں کا تبادلہ ہوا۔

پیر کے روز ملک کے مصروف اور حساس ترین ہوائی اڈے پر منظور وٹو کے استقبال کے لیے آئے پیپلز پارٹی کے کارکنوں نے ائیرپورٹ لاؤنج میں زبردستی گھسنے کی کوشش کی جسکے باعث ان کا اے ایس ایف اہلکاروں سے تصادم ہو گیا۔

لڑائی کے دوران کم از کم تین اے ایس ایف اہلکاروں کے زخمی ہونے کی اطلاعات بھی موصول ہوئی ہیں۔

پیپپلز پارٹی پنجاب کے صدر منتخب ہونے کے بعد منظور وٹو کا یہ لاہور آنے کا  پہلا موقع تھا۔

انکی آمد اور اے ایس ایف اہلکاروں کے ائیرپورٹ کے اندر جانے کے بعد حالات پرامن ہو گئے۔ منظور وٹو جب ائیر پورٹ سے باہر آئے تو ڈھول کی تھاپ اور گھوڑوں کے رقص کے ساتھ ان کا استقبال کیا گیا۔

اس دھینگا مشتی کے بعد پارٹی جیالوں کا جلوس پہنچا ناصر باغ پہنچا  جہاں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے منظور وٹو نے مسلم لیگ نون  کو چلینج کیا کہ پنجاب میں آئندہ حکومت پیپلز پارٹی کی ہو گی۔ ان کا کہنا تھا کہ صدر زردای نے انھیں خاص مقصد کے لیے پنجاب بھیجا ہے  اور وہ اسے ضرور پورا کریں گے۔

اس موقعے پر تنویر اشرف کائرہ، فردوس عاشق اعوان اور ثمینہ خالد گھرکی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ پنجاب نون لیگ سے واپس لے کر تخت لاہور کے جھوٹے دعویداروں کو یہاں سے بھگا دیں گے۔

اس حصے سے مزید

ماڈل ٹاؤن کیس: چار پولیس اہلکاروں کا جوڈیشل ریمانڈ

انسپکٹر عامر سلیم سمیت چاروں اہلکاروں پر منہاج القرآن کے کارکنون کو قتل کرنے کا الزام ہے۔

ٹوبہ ٹیک سنگھ : آتشی مواد سے پانچ ہلاکتیں

کمالیہ میں ایک گھر میں رکھا بارودی مواد دھماکے سے پھٹ گیا، جس سے ایک خاندان کے پانچ افراد ہلاک ہو گئے۔

اسلام آباد دھرنوں کے خلاف وکلاء کی ملک گیر ہڑتال

جمعرات کے روز وکلاء کی نمائندہ تنظیموں کے لاہور میں ہونے والے اجلاس میں دھرنوں کے خلاف لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مضبوط ادارے

ریاستی اداروں پر تمام جماعتوں کی جانب سے حملہ تب کیا گیا جب وہ ابتدائی طور پر ہی سہی پر قابلیت کا مظاہرہ کرنے لگے تھے۔

آئینی نظام کو لاحق خطرات

پی ٹی آئی کی سیاست کے ساتھ مسئلہ یہ ہے کہ یہ کسی طرح موجودہ آئینی صورت حال میں ممکن سیاسی حل کیلئے تیار نہیں ہے-

بلاگ

!جس کی لاٹھی اُس کا گلّو

ہر دکاندار اور ریڑھی والے سے پِٹنا کوئی آسان عمل نہیں ہوگا شاید یہی وجہ ہے کہ سول نافرمانی کوئی آسان کام نہیں۔

ہمارے کپتانوں کے ساتھ مسئلہ کیا ہے؟

اس بات کا پتہ لگانا مشکل ہے کہ مصباح الحق اور عمران خان میں سے زیادہ کون بچوں کی طرح اپنی غلطی ماننے سے انکاری ہے۔

پاک سری لنکا ٹیسٹ سیریز – ایک جائزہ

امید کی جانی چاہئے کہ پاکستانی ٹیم ٹیسٹ سیریز میں اپنی شکست کا بدلہ ون ڈے سیریز میں لینے کی پوری کوشش کرے گی۔

جارج اورویل کی جائے پیدائش کا دورہ

حکومت نے ان کی جائے پیدائش پرایک میوزیم کی تعمیر کا بھی اعلان کیا ہے، جس سے اس عظیم لکھاری کی یاد قائم رکھی جا سکے گی۔