21 اپريل, 2014 | 20 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

قومی مینڈیٹ پر ڈاکہ مارنے کی معافی مانگی جائے، کائرہ

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات قمر زمان کائرہ اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے ہیں۔ فوٹو اے پی پی

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ قوم کے مینڈیٹ پر ڈاکہ مارنے کی معافی مانگی جائے، چوری کے مینڈیٹ پر بننے والی حکومت کا فیصلہ ہونا ابھی باقی ہے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ دہائیوں کے بعد تاریخ نے سچ اُگل دیا ہے۔ سیاستدانوں میں رقوم کی تقسیم پر سپریم کورٹ کا فیصلہ تاریخی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے مخالفین غیرقانونی ہتھکنڈوں سے اقتدار میں آتے رہے۔1990 کے انتخابات میں عوامی مینڈیٹ پر ڈاکہ مارا گیا جبکہ 1993 اور 1997 کے انتخابات میں بھی دھاندلی کی گئی۔

قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ سابق صدر جنرل (ر) ضیا الحق کا طیارہ پھٹنے کے بعد آئی ایس آئی کے سابق سربراہ جنرل(ر) حمید گُل نے آئی جے آئی کی بنیاد رکھی تھی۔ 25 اکتوبر 1990 میں سابق وزیراعظم محترمہ بینظیر بھٹو شہید نے کہہ دیا تھا کہ عوامی مینڈیٹ چُرا لیا گیا۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات نے کہا کہ بینظیر بھٹو کو دھمکی دی گئی کے اگر انہوں نے فیصلہ تسلیم نہ کیا تو ان کے شوہر کو قتل کر دیا جائے گا اور سابق صدر جسٹس (ر) رفیق تارڑ کو محترمہ بینظیر بھٹو کے خلاف فیصلہ دینے کے انعام میں صدر پاکستان بنا دیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ جو گنہگار ہیں وہ بھی آج اصغر خان کیس میں سپریم کورٹ کے فیصلے پر اعتراض کر رہے ہیں۔

وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ قائد حزب اختلاف چودھری نثار اتنے سادہ نہ بنیں کیونکہ وہ بھی تمام کاموں میں حصہ دار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ اس بار 1990 سے بڑا ڈاکہ مارنے کا کوئی پروگرام ہے لیکن اس بار جھوٹے پراپیگنڈے سے الیکشن نہیں جیتا جا سکتا۔

اس حصے سے مزید

وزیرِ اعظم نے حامد میر حملے کی جوڈیشل تحقیقات کا حکم دیدیا

کمیشن کیلئے سپریم کورٹ سے درخواست کی جائے گی، قاتلوں کی اطلاع پر ایک کروڑ روپے انعام کا اعلان۔

اقوامِ متحدہ نے اپنے دوکارکن لاپتہ ہونے کی تصدیق کردی

اقوامِ متحدہ کی ذیلی تنظیم یونیسیف کے مقامی ارکان کراچی کے باہر ایک تفریحی مقام سے لاپتہ ہوئے ہیں۔

'دہشت گردی ختم کیے بغیر مضبوط دفاع کا قیام ناممکن'

مضبوط معیشت اور دہشت گردی ختم کیے بغیر ملکی دفاع کا قیام ناممکن ہے،وزیر اعظم کا کاکول اکیڈمی میں پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے

دو قومی نظریہ اور ہندوستانی اقلیتیں

دو قومی نظریہ مسلمانوں اور ہندوؤں میں تو تفریق کرتا ہے لیکن دیگر اقلیتوں، خاص کر دلتوں کو یکسر فراموش کرتا ہے۔