24 جولائ, 2014 | 25 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

کراچی بدامنی: فیڈرل بی ایریا میں پانچ افراد ہلاک

دہشت گردی اور فائرنگ کے واقعات میں دو سگے بھائیوں سمیت مجموعی طور پر دس افراد ہلاک ہوگئے۔ – فائل فوٹو

کراچی: کراچی میں دہشت گردی اور فائرنگ کے واقعات میں دو سگے بھائیوں سمیت دس افراد ہلاک ہوگئے۔ جبکہ صرف ایک واقعہ میں پانچ افراد لقمہ اجل بن گئے۔

جمعرات کے روز فیڈرل بی ایریا بلاک بائیس میں نامعلوم افراد نے ایک مقامی ریستوران پر فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں دو افراد موقعہ پر ہلاک اور تین زخمی ہوگئے جنہیں فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا۔ البتہ زخمی ہونے والے تینوں افراد بھی دوران طبی امداد دم توڑ گئے۔

واقعہ کے بعد علاقے میں کشیدگی پھیل گئی۔ دکانیں اور بازار بند ہوگیا اور پولیس اور رینجرز کی نفری بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئی۔

ہلاک ہونے والوں میں مذہبی جماعت کے کارکنان قاری رفیق، خدائے نور اس کا بھائی جبرائیل جبکہ ہوٹل مالک عامر اور راہ گیر ساجد شامل ہیں۔ پولیس کے مطابق واردات مین نائن ایم ایم پستول استعمال ہوا ہے۔

اس سے قبل نپیئر تھانے کی حدود فقیر محمد درہ روڈ پر فائرنگ سے پچاس سالہ عبداللہ بلوچ ہلاک ہوگیا تھا۔ جبکہ لیاری موسیٰ لین میں فائرنگ سے ایک شخص چل بسا اورنگی ٹاؤن میں اقبال کو گولیوں کا نشانہ بنایا گیا۔

فیڈرل بی ایریا بلاک سولہ میں فائرنگ سے سیاسی جماعت کا کارکن کامران ہلاک ہوا۔ جبکہ کلری میں کراون سینما کے عقب سے ایک شخص کی تشدد زدہ لاش  بھی ملی تھی۔

اس حصے سے مزید

'این آر او کے تحت پندرہ سال تک مارشل لاء نافذ نہیں ہو سکتا'

شہلا رضا نے انکشاف کیا ہے کہ امریکہ، برطانیہ ، یواے ای اور جنرل پرویز اشفاق کیانی نےبھی اس کی گارنٹی دی تھی۔

کراچی: فائرنگ کے مختلف واقعات میں پانچ افراد ہلاک

دوسری جانب گودھرا میں ایک پولیس مقابلے میں مشتبہ ملزمان کی فائرنگ سے اے ایس آئی ہلاک ہوگیا۔

کراچی: مائی کولاچی روڈ پر ٹرالر اور ڈمپر میں تصادم، تین زخمی

بدھ کے روز علی الصبح ہونے والی ہلکی بارش سے سڑک پر پھسلن بڑھ جانے سے ڈمپر اور ٹرالر بے قابو ہوکر ایک دوسرے سے ٹکرا گئے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

بلاگ

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

شکایتوں کا بن جو میرا دیس ہے

شکایتی ٹٹو زنده قوم کی نشانی ہوتے ہیں۔ مستقل شکایت کرتے رہنا اب ہماری پہچان بن چکا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-