23 اگست, 2014 | 26 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

سی این جی اسٹیشنز کا آڈٹ کروانے کا فیصلہ کرلیا گیا

سی این جی اسٹیشن۔ فائل فوٹو آن لائن

اسلام آباد: اوگرا نے سی این جی اسٹیشنز کے اخراجات اور منافع کا آڈٹ کروانے کا فیصلہ کرلیا ہے جبکہ سی این جی ایسوسی ایشن نے زبردستی نقصان پر گیس بیچنے پر وزارت پیٹرولیم اور اوگرا کو قانونی نوٹس جاری کردیا ہے۔

ڈان نیوز کو موصول ہونے والی دستاویز کے مطابق اوگرا نے آڈٹ کیلئے رجسٹرڈ فرموں سے پیشکشیں طلب کرلیں ہیں۔

 آڈٹ فرم ہر صوبے کے دس فیصد اسٹیشنز کا آڈٹ کرے گی۔ فرم فی کلو منافع اور حقیقی پیداواری لاگت کا تعین کرے گی۔

 فرم اس حوالے سے ابتدائی رپورٹ پینتالیس روز میں جمع کروانے کی پابند ہوگی اور حتمی رپورٹ ساٹھ روز میں جمع کرائے گی۔

 آڈٹ فرمز لیبر، کمرپیشن لاگت اور دیگر اخراجات کا بھی آڈٹ کرے گی۔ اوگرا نے آڈٹ کروانے کا فیصلہ سپریم کورٹ کے حکم کی روشنی میں کیا ہے۔

دوسری جانب سی این جی ایسوسی ایشن نے وزارت پیٹرولیم اور اوگرا کو قانونی نوٹس جاری کردیا ہے جس میں مؤقف اختیار کیا ہے کہ اسٹیشنز کو زبردستی نقصان پر گیس بیچنے پر مجبور کرنا غیر قانونی ہے جبکہ عدالت عظمیٰ نے نقصان پر گیس بیچنے کا حکم نہیں دیا۔

 نوٹس  میں مزید کہا گیا ہے کہ سی این جی اسٹیشن مالکان کو ہراساں کرنا اور دھمکانا بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔

 اس حوالے سے سرکاری حکام بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے مرتکب ہو رہے ہیں۔

اس حصے سے مزید

اسلام آباد دھرنے: حکومت اوراحتجاجی جماعتوں میں مذاکرات جاری

ابھی تک یہ واضح نہیں ہوسکا کہ تحریک انصاف اور عوامی تحریک کے دھرنوں کے باعث موجودہ سیاسی صورتحال کیا رخ اختیار کرے گی۔

مانسہرہ: ریپ کے ملزم کی جان سے مارنے کی دھمکیاں

ریپ کی شکار لڑکی نے الزام عائد کیا ہے کہ پولیس اہلکار عدالت سے باہر معاملہ طے نہ کرنے پر قتل کی دھمکیاں دے رہا ہے۔

اورکزئی ایجنسی: امن لشکر اور شدت پسندوں میں جھڑپ، پانچ ہلاک

ذرائع کے مطابق مارے جاے والے مبینہ شدت پسند درّۂ آدم خیل میں طالبان کے مومن گروپ سے تعلق رکھتے تھے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

کچھ جوابات

وزیر اعظم کا اعلان کردہ کمیشن مسئلے سلجھانے کے بجائے زیادہ الجھا دے گا۔

بڑھتی مایوسی

مایوسی تب اور بڑھتی ہے جب عوام دیکھتے ہیں کہ حکمران عوامی پیسے سے اپنے کام چلانے میں شرم بھی محسوس نہیں کرتے۔

بلاگ

پکوان کہانی : شاہی قورمہ

جو اکبر اعظم کے شاہی باورچی خانے کی نگرانی میں راجپوت خانساماؤں کے تجربات کا نتیجہ ہے۔

پاکستان ایک "ساس" کی نظر سے

68 سالہ جین والر کو پاکستان بہت پسند آیا، اتنا زیادہ کہ بقول ان کے مجھے پاکستان سے محبت ہوگئی ہے۔

مووی ریویو: گارڈینز آف گیلیکسی ایک ویژول ٹریٹ ہے

جو یادوں کے ایسے دور میں لے جاتی ہے جب ایکشن کے بجائے مزاح کسی کامک کا سرمایہ اور اسے بیان کرنے کا ذریعہ ہوا کرتا تھا۔

اب مارشل لاء کیوں ناممکن؟

ایوب، ضیاء اور مشرّف، تینوں ہی مغربی قوّتوں کے جغرافیائی سیاسی کھیلوں میں اسٹریٹجک کردار کے بدلے جیتے تھے۔