17 ستمبر, 2014 | 21 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

سی این جی اسٹیشنز کا آڈٹ کروانے کا فیصلہ کرلیا گیا

سی این جی اسٹیشن۔ فائل فوٹو آن لائن

اسلام آباد: اوگرا نے سی این جی اسٹیشنز کے اخراجات اور منافع کا آڈٹ کروانے کا فیصلہ کرلیا ہے جبکہ سی این جی ایسوسی ایشن نے زبردستی نقصان پر گیس بیچنے پر وزارت پیٹرولیم اور اوگرا کو قانونی نوٹس جاری کردیا ہے۔

ڈان نیوز کو موصول ہونے والی دستاویز کے مطابق اوگرا نے آڈٹ کیلئے رجسٹرڈ فرموں سے پیشکشیں طلب کرلیں ہیں۔

 آڈٹ فرم ہر صوبے کے دس فیصد اسٹیشنز کا آڈٹ کرے گی۔ فرم فی کلو منافع اور حقیقی پیداواری لاگت کا تعین کرے گی۔

 فرم اس حوالے سے ابتدائی رپورٹ پینتالیس روز میں جمع کروانے کی پابند ہوگی اور حتمی رپورٹ ساٹھ روز میں جمع کرائے گی۔

 آڈٹ فرمز لیبر، کمرپیشن لاگت اور دیگر اخراجات کا بھی آڈٹ کرے گی۔ اوگرا نے آڈٹ کروانے کا فیصلہ سپریم کورٹ کے حکم کی روشنی میں کیا ہے۔

دوسری جانب سی این جی ایسوسی ایشن نے وزارت پیٹرولیم اور اوگرا کو قانونی نوٹس جاری کردیا ہے جس میں مؤقف اختیار کیا ہے کہ اسٹیشنز کو زبردستی نقصان پر گیس بیچنے پر مجبور کرنا غیر قانونی ہے جبکہ عدالت عظمیٰ نے نقصان پر گیس بیچنے کا حکم نہیں دیا۔

 نوٹس  میں مزید کہا گیا ہے کہ سی این جی اسٹیشن مالکان کو ہراساں کرنا اور دھمکانا بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔

 اس حوالے سے سرکاری حکام بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے مرتکب ہو رہے ہیں۔

اس حصے سے مزید

دھاندلی کے الزامات: الیکشن کمیشن کا ہنگامی اجلاس طلب

آج کے اجلاس میں الیکشن کمیشن پر عمران خان اور افضل خان کےالزامات کا جائزہ لیا جائے گا،اس سلسلے میں اہم فیصلے متوقع ہیں۔

'بطور آرمی چیف ایمرجنسی کے حکم پر دستخط مشرف کی غلطی تھی'

وزیراعظم کے مشورے پر وہ بطور صدر ایمرجنسی نافذ کرسکتے تھے، لیکن انہوں نے یہ حکم فوجی سربراہ کے طور پر دیا۔

تین چار سال میں بجلی کی قلّت ختم کردیں گے، وزیراعظم

اس موقع پر وزیراعظم نے یہ بھی کہا کہ دھرنے کرکے پاکستان کی ترقی میں رکاوٹیں ڈالی جارہی ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ڈیم، کینال، بیراج، اور ماحول

ہندوستانی پنجاب میں زیادہ بارشیں ہوئیں، جسکی وجہ سے اپ سٹریم کا پانی پاکستانی چناب اور جہلم میں بہہ آیا ہے

انتخابی اصلاحات: اگلا قدم

بحیثیت قوم ہمیں اس بات کو یقینی بنانا ہوگا، کہ اس معاملے میں سچ سب کے سامنے آئے، اور کوئی شک شبہہ باقی نا رہے۔

بلاگ

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔

کریچر - تھری ڈی: گوڈزیلا یا ڈیوی جونز کا کزن؟

یہ کہنا غلط نہ ہوگا بپاشا ہارر تھرلرز تک محدود ہوگئی ہیں جبکہ عمران عبّاس نے انکے گرد چکر کاٹنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔

جب خاموشی بہتر سمجھی جائے

اس بات کو تسلیم کرنا ہو گا کہ برطانوی پاکستانیوں کے پاس جنسی استحصال پر بات کرنے کے لیے آزادی نہیں ہے۔

نائنٹیز کا پاکستان - 6

اندازے کے مطابق اس دور میں پاکستانی فوج ہر ماہ اوسط ساڑھے سات کروڑ ڈالر ’مجاہدین‘ پر خرچ کر رہی تھی۔