29 جولائ, 2014 | 1 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

اقبال حیدر انتقال کر گئے

اقبال حیدر۔— فائل فوٹو

کراچی: پاکستان کے معروف قانون دان، سیاستدان اور انسانی حقوق کے علمبرداراقبال حیدر انتقال کرگئے۔

سڑسٹھ سالہ سابق سینیٹر اقبال حیدر پھیپھڑوں کے عارضےمیں مبتلا تھے، ان کا انتقال اتوار کی صبح کراچی کے ایک نجی ہسپتال میں ہوا۔

ڈان نیوز کے مطابق، ان کی نماز جنازہ کل ڈیفنس میں ادا کی جائے گی۔

چودہ جنوری انیس سو پینتالیس کو آگرہ میں پیدا ہونے والے اقبال حیدر نے پاکستان ہجرت کے بعد ابتدائی تعلیم کراچی سے حاصل کی۔

معاشیات اور کامرس میں بی اے کرنے بعد انیس سو چھیاسٹھ میں پنجاب یونیورسٹی لاء کالج سے قانون میں ڈگری حاصل کی۔

بعد ازاں، انہوں نے امریکی وبرطانوی تعلیمی اداروں سےقانون کی اعلٰی ڈگریاں بھی حاصل کیں۔

اقبال حیدرنے عملی زندگی کاآغاز وکالت سے کیااور قانون میں مہارت کے باعث انیس سو بہترمیں انہیں سپریم کورٹ میں وکالت کرنے کااجازت نامہ مل گیا۔

اقبال حیدرنے سیاست کا آغاز پیپلزپارٹی سے کیا تاہم انیس سو ستترسے انیس سو بیاسی تک قومی محاذ آزادی سے بھی منسلک رہے۔

انیس سوتراسی میں ضیاء الحق کے دورمیں چلنے والی تحریک بحالی جمہوریت میں پیش پیش رہے۔اس دوران انہیں زیرحراست بھی رکھاگیا۔

انیس سو اٹھاسی میں انہوں نے دوبارہ پی پی پی میں شمولیت اختیارکی اورانیس سو نواسی میں وزیراعلٰی سندھ کے مشیرمقررہوئے۔

وہ پہلی بار انیس سو اکیانوے میں سینیٹ کے رکن منتخب ہوئےجس کے بعد انیس سوستانوے میں دوبارہ چھ سال کےلیے سینیٹرمنتخب ہوئے۔

انہوں نے نومبرانیس سوترانوے میں وفاقی وزیرقانون کے عہدے کاحلف اٹھایا۔

انیس سو چورانوے میں پاکستان میں پہلے وزیرانسانی حقوق اور اٹارنی جنرل مقرر ہوئےجس پروہ انیس سوستانوے تک فائزرہے۔

اقبال حیدر انسانی حقوق کمیشن کے چیئرمین بھی تھے۔

اس حصے سے مزید

منی لانڈرنگ کیس: الطاف حسین کی ضمانت میں توسیع

لندن پولیس نے منی لانڈرنگ کیس میں ایم کیو ایم سربراہ کی ضمانت میں دسمبر، 2014 تک توسیع کر دی۔

کراچی: لیاقت علی خان کے بیٹے انتقال کر گئے

اشرف علی خان اپنے والد کی وفات کے وقت محض 14 برس کے تھے، اُن کو کراچی میں سپرد خاک کیا جا ئے گا۔

کراچی: جمشید ٹاؤن تھانے کے قریب بم ناکارہ بنا دیا گیا

حکام کا کہنا ہے کہ پانچ کلو وزنی دھماکا خیز مواد ایک موٹر سائیکل میں نصب تھا، جسے ناکارہ بنایا دیا گیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

جنگ اور ہوائی سفر

پرواز کرنے کا معجزہ، جو انسانی ذہانت کا خوشگوار مظہر ہے، انسان کے انتقامی جذبات اور خون کی پیاس کی نذر ہوگیا ہے

تھوڑا سا احترام

آپ ایک مایوس، خوفزدہ بیوروکریسی سے کیا توقع کرسکتے ہیں جنہیں اپنی سمت کا علم نہ ہو؟

بلاگ

ترغیب و خواہشات: رمضان کا نیا چہرہ؟

کسی مقامی رمضان ٹرانسمیشن کو لگائیں اور وہ سب کچھ جان لیں جو اب اس مقدس مہینے کے نئے چہرے کو جاننے کے لیے ضروری ہے

نائنٹیز کا پاکستان -- 1

ضیا سے مشرف کے بیچ گیارہ سال میں کبھی کرپشن کے بہانے تو کبھی وسیع تر قومی مفاد کے نام پر پانچ جمہوری حکومتیں تبدیل ہوئیں

ٹوٹے برتن

امّی کا خیال ہے کہ ایسے برتن پورے گاؤں میں کسی کے پاس نہیں۔ وہ تو ان برتنوں کو استعمال کرنے ہی نہیں دیتی

مجرم کون؟

کچھ چیزیں ڈنڈے کے زور پہ ہی چلتی ہیں، پھر آہستہ آہستہ عادت اور عادت سے فطرت بن جاتی ہیں۔