20 اپريل, 2014 | 19 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاکستان کا ملا برادر کو رہا کرنے پر غور، حکام

اس تصویر میں افغان امن کونسل کے سربراہ صلاح الدین ربانی پاکستان کے چیف آف آرمی اسٹاف جنرل اشفاق پرویز کیانی سے ملاقات کررہے ہیں۔ تصویر بشکریہ آئی ایس پی آر

کابل: اگر طالبان کی کم اہم درجے کے رہنماوں کی رہائی کے بعد امن کی کوششیں آگے بڑھتی ہیں تو پاکستان افغان طالبان کے دوسرے اہم کمانڈر، ملا عبدالغنی برادر کو رہا کرنے پر غور کرسکتا ہے۔

 یہ بات جمعرات کے روز پاکستان اور افغانستان کے آفیشلز نے خبررساں ادارے رائٹرز بتائی۔

اسلام آباد اور کابل کے درمیان قریبی مذاکرات کے بعد ایک سینیئر افغان آفیشل نے بتایا کہ تیرہ طالبان کو رہا کرنے کے بعد، پاکستان نے وعدہ کیا ہے کہ اگر ان اقدامات سے امن کا سلسلہ آگے بڑھتا ہے تو وہ ملا برادر کو رہا کردے گا۔

افغانستان پاکستان پر زور دیتا آیا ہے کہ وہ افغان طالبان کو رہا کرے تاکہ امن مذاکرات کو آگے بڑھایا جاسکے۔

پاکستان نے گزشتہ دو دنوں میں درمیانے درجے کے طالبان کو رہا کیا ہے۔

لیکن برادر جیسے اہم رہنما کو رہا کرنے کے لئے پاکستان پر دباو بڑھ رہا ہے کیونکہ دوہزار چودہ کے اختتام تک نیٹو افواج کی بڑی تعداد افغانستان سے واپس چلی جائیں گی۔

 دوسری جانب پاکستان کی وزارتِ خارجہ کے ایک اہم افسر نے کہا ہے کہ اگر درمیانے درجے کے طالبان کی رہائی سے مطلوبہ نتائج حاصل ہوتے ہیں تو ملا برادر کو رہا کیا جاسکتا ہے۔

اس حصے سے مزید

وزیرِ اعظم نے حامد میر حملے کی جوڈیشل تحقیقات کا حکم دیدیا

کمیشن کیلئے سپریم کورٹ سے درخواست کی جائے گی، قاتلوں کی اطلاع پر ایک کروڑ روپے انعام کا اعلان۔

اقوامِ متحدہ نے اپنے دوکارکن لاپتہ ہونے کی تصدیق کردی

اقوامِ متحدہ کی ذیلی تنظیم یونیسیف کے مقامی ارکان کراچی کے باہر ایک تفریحی مقام سے لاپتہ ہوئے ہیں۔

'دہشت گردی ختم کیے بغیر مضبوط دفاع کا قیام ناممکن'

مضبوط معیشت اور دہشت گردی ختم کیے بغیر ملکی دفاع کا قیام ناممکن ہے،وزیر اعظم کا کاکول اکیڈمی میں پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے

دو قومی نظریہ اور ہندوستانی اقلیتیں

دو قومی نظریہ مسلمانوں اور ہندوؤں میں تو تفریق کرتا ہے لیکن دیگر اقلیتوں، خاص کر دلتوں کو یکسر فراموش کرتا ہے۔