31 جولائ, 2014 | 3 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

قبائلی علاقوں میں بم دھماکوں سے پانچ افراد ہلاک

شمالی وزیرستان میں ریموٹ کنٹرول حملے میں دو سیکیورٹی اہلکار ہلاک ، سات زخمی۔ فائل تصویر

پشاور میرانشاہ:افغان سرحمد کے قریب پاکستان کے قبائلی علاقوں میں سڑک کنارے نصب کیے گئے دو علیحدہ بم دھماکوں میں پانچ افراد ہلاک اور دس زخمی ہو گئے۔

ڈان نیوز کے مطابق شمالی وزیرستان کےعلاقے میرعلی میں سیکیورٹی فورسز کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا جس دو اہلکار ہلاک اور سات زخمی ہوگئے ہیں۔

سیکیورٹی فورسز کا کانوائے میرعلی میں معمول کے گشت پر تھاکہ روڈ کےقریب نصب بم پھٹ گیا۔ دھماکہ اتنا شدید تھاکہ دو اہلکار موقع پر ہی لقمہ اجل بن گئے۔

 دھماکےمیں سات اہلکارزخمی بھی ہوئےجنہیں فوری طورپر اسپتال منتقل کردیاگیا، جہاں ان کی حالت تسلی بخش بتائی جاتی ہے۔

سیکیورٹی فورسز ذرائع کا کہناہےکہ دھماکہ ریموٹ کنڑول کےذریعے کیاگیا۔ فورسزنے علاقے کوگھیرےمیں لیکردہشتگردوں کی تلاش شروع کردی ہے۔

ڈان سے گفتگو کے بعد تحریکِ طالبان پاکستان کے جنداللہ گروپ نے اس حملے کی ذمے داری قبول کرتے ہوئے اسے ڈرون حملے میں مرنے  والے کمانڈر احمد بنگالی کی ہلاکت کا ردِ عمل قرار دیا۔

دریں اثنا سینئر مقامی افسر شین قمر کے مطابق اتوار کو خیبر کے قبائلی علاقے شن قمر میں سڑک کنارے نصب بم پھٹنے سے تین مزدور ہلاک اور تین زخمی ہو گئے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ مزدور گدھے پر تعمیراتی سامان لے کر جا رہے تھے کہ دھماکہ ہو گیا، انٹیلی جنس ذرائع نے بھی حادثے کی تصدیق کی ہے۔

اس حصے سے مزید

وزیراعلیٰ پنجاب کا بنوں میں آئی ڈی پیز کیمپوں کا دورہ

شہباز شریف کا کہنا تھا ان حالات کو درست کرنے کا وقت ہے اور وہ ملک میں قیامِ امن تک چین سے نہیں بیٹھیں گئے۔

پاک افغان سر حد پر دہشت گردوں کا حملہ، پاکستان کا شدید احتجاج

عسکری ذرائع کے مطابق تقریباً ستر سے اسی دہشت گردوں نے گزشتہ رات افغانستان کی حدود سے پاکستانی چیک پوسٹ پر حملہ کیا۔

لوئر دیر: رکن صوبائی اسمبلی کے حجرے میں فائرنگ سے چھ ہلاکتیں

ضلع کرک میں بھی دوگروہوں کے درمیان پرانی دشمنی پر فائرنگ ہوئی جس کے نتیجے میں تین افراد ہلاک اور دو زخمی ہوئے۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

mohammad jehangir
18 نومبر, 2012 10:25
اس وقت دنیا کو سب سے بڑا درپیش چیلنج دہشت گردی ہے اس پر سب متفق ہیں۔ دہشت گردی کا اسلام سے کوئی تعلق نہ ہے اور یہ قابل مذمت ہے۔ اسلام میں دہشت گردی اور خودکش حملوں کی کوئی گنجائش نہیں اور طالبان،لشکر جھنگوی اور دوسری کالعدم جماعتیں اور القاعدہ دہشت گرد تنظیمیں ہولناک جرائم کے ذریعہ اسلام کے چہرے کو مسخ کررہی ہیں۔ برصغیرسمیت پُوری دنیا میں اسلام طاقت سے نہیں،بلکہ تبلیغ اور نیک سیرتی سے پھیلاجبکہ دہشت گرد طاقت کے ذریعے اسلام کا چہرہ مسخ کررہے ہیں۔ مذہب، عقیدے اور کسی نظریے کی بنیاد پر قتل وغارت گری اور دہشت گردی ناقابل برداشت ہے ۔ جسکی اسلام سمیت کسی مہذب معاشرے میں گنجائش نہیں۔بڑھتی ہوئی عسکریت پسندی اور تشدد آمیز مذہبی انتہا پسندی نے اس ملک کے وجود کو ہی خطرے میں ڈال دیا ہے ۔ یہ وہی عسکریت پسند ہیں جنہوں نے ریاست اور اس کے عوام کے خلاف اعلان جنگ کر رکھاہے ۔اب ہمارے سامنے ایک ہی راستہ ہے کہ یا تو ہم ان مسلح حملہ آوروں کے خلاف لڑیں یا پھر ان کے آگے ہتھیار ڈال دیں جو پاکستان کو دوبارہ عہدِ تاریک میں لے جانا چاہتے ہیں۔طالبان پاکستان کی ریاست اور اس کے آئین کی بالادستی کو رد کرتے ہوتے اپنی مذہبی سوچ کو دوسروں پر زبردستی نافذ کرنا چاہتے ہیں.اگر ریاست مسلح عسکریت پسندوں کو اس بات کی اجازت دے دے کہ وہ درندگی کے ساتھ عوام پر اپنی خواہش مسلط کریں تو ایسی ریاست اپنی خودمختاری قائم نہیں رکھ سکتی .صلح جوئی کی پالیسی نے ملک کو پہلے ہی بھاری نقصان پہنچایا ہے جس کی قیمت ہم انسانی جانوں کی زیاں نیز معاشرے اور معیشت پر اس کے برےاثرات کی شکل میں ادا کر چکے ہیں . بم دھماکے کھلی بربریت ہیں اور دہشت گرد عناصر شہر میں غیر یقینی صورتحال پیدا کرکے ملک میں انتشار پیدا کررہے ہیں۔ پاکستان کے سیاسی اور سماجی حلقوں، خصوصاً مذہبی حلقوں کوچاہئے کہ وہ قبائلی علاقوں میں موجود تحریک طالبان پاکستان اور دیگر مسلح تحریکوں سے بات چیت کرکے انہیں پاکستانی ریاست کی عمل داری قبول کرنے کے لئے آمادہ کریں اور یہ کہ وہ اپنے مذہبی اور سیاسی ایجنڈے کو پاکستان کے قانون کے دائرے میں آگے بڑھائیں کیونکہ ان تنظیموں کا موجودہ رویہ بھی پاکستان کے اقتدار اعلیٰ اور خود مختاری کی نفی کرتا ہے۔ انسان کی جان اور اس کا خون محترم ہے.اسلام نے ایک ایک انسانی جان کو بڑی اہمیت دی ہے۔ اس کے نزدیک کسی ایک شخص کا بھی ناحق قتل گویا کہ پوری انسانیت کا قتل ہے۔ اسلامی تعلیم ہے کہ انسانی جان کی حفاظت کی جائے اور کسی کو قتل نہ کیا جائے۔ ارشاد باری ہے ‘‘ انسانی جان کو ہلاک نہ کرو، جسے خدا نے حرام قرار دیا ہے’’۔ (بنی اسرائیل 33 قرآنی آیات، احادیث نبوی اور آئمہ کرام کے استدلال کی روشنی میں یہ بات واضح ہے کہ بے گناہ و معصوم شہریوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنانا، قتل و غارت گری کرنا، خود کش حملوں کا ارتکاب کرنا اور ملکی و قومی املاک کو نقصان پہنچانا، مسجدوں پر حملے کرنا اور نمازیوں کو شہید کرنا اور مسلح افواج پر حملے کرنا اور حکومت وقت کے خلاف مسلح بغاوت کرنا،حکومت چاہے کیسی بھی ہو، نہ صرف اسلامی تعلیمات کے خلاف بلکہ روح اسلام کے خلاف گناہ عظیم ہے، کسی بھی عذر، بہانے یا وجہ سے ایسے عمل کی اسلام ہر گز اجازت نہیں دیتا یہ فتنہ پروری اور خانہ جنگی ہے۔ اسے شرعی لحاظ سے محاربت و بغاوت، اجتماعی قتل انسانیت اور فساد فی الارض قرار دیا گیا ہے. ................................................................. اقبال جہانگیر کا تازہ ترین بلاگ : کراچی میں فرقہ ورانہ دہشت گردی http://www.awazepakistan.wordpress.com
سروے
مقبول ترین
قلم کار

بجٹ اور صحت کا شعبہ

ایسا لگتا ہے کہ صحت کے بجٹ کی بڑھتی ہوئی ضروریات کیلئے عطیات دینے والے ملکوں کے پیسے پر زیادہ انحصار کیا جاتا ہے

جنگ اور ہوائی سفر

پرواز کرنے کا معجزہ، جو انسانی ذہانت کا خوشگوار مظہر ہے، انسان کے انتقامی جذبات اور خون کی پیاس کی نذر ہوگیا ہے

بلاگ

پکوان کہانی: کابلی پلاؤ - شمال کی شان

گوشت میں پکے چاول اس خطے کے جنگجوؤں کی ذہنی مطابقت اور جسمانی ساخت کے لیے موزوں تھے۔

ایک پاکستانی صحافی کی امریکا یاترا

میں نے جب یہ پوچھا کے کیا وہ پاکستان جانا چاہے گا تو اس کا کہنا تھا کے ہاں مجھے پاکستان جانے کا بہت شوق ہے۔

مووی ریویو: 'کک' صرف سلمان خان کی فلم نہیں

باصلاحیت اداکاروں کے ساتھ فلم بنا کر ساجد ناڈیا والا نے خود کو ایک قابل ڈائریکٹر منوا لیا ہے۔

عید پر انکو نہ بھولیں

رمضان میں انسانی ہمدردی کا جو جذبہ آپ کے دلوں میں پیدا ہوتا ہے اسے محض وقتی ابال ثابت نہ ہونے دیں-