24 اپريل, 2014 | 23 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

راولپنڈی: امام بارگاہ کے نزدیک خودکش حملہ، بارہ ہلاک

کراچی دھماکہ کا ایک منظر۔ اے پی فوٹو

اسلام آباد: راولپنڈی میں مصریال روڈ پر واقع ایک امام بارگاہ کے قریب خود کش حملے میں کم از کم بارہ افراد ہلاک اور چھتیس سے زائد زخمی ہوگئے ہیں۔

بدھ کے روز راولپنڈی کے مصریال روڈ پر امام بارگاہ قصر شبیر میں مجلس جاری تھی کہ دھماکہ ہوگیا۔ پولیس کے مطابق مبینہ خودکش حملہ آور نے امام بارگاہ کے قریب جلوس میں داخل ہونے کی کوشش کی اور سکیورٹی اہلکاروں کی جانب سے روکے جانے کی کوشش پر خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔

ابتدائی رپورٹوں کے مطابق زخمی اور ہلاک  ہونے والوں  میں پولیس اہلکار بھی شامل ہیں۔ دھماکہ اسقدر شدید تھا کہ اسکی آواز کئی کلو میٹر دور تک سنی گئی۔ راولپنڈی میں ہائی الرٹ ہونےکے باوجود دہشت گرد موقع سے فائدہ اٹھانے میں کامیاب ہوگئے۔ دھماکے کے بعد ریسکیو ڈبل ون ڈبل ٹو کے اہلکار موقع پر پہنچ گئے اور زخمیوں کی اسپتال منتقلی شروع کردی گئی ہے۔

دھماکے کے نتیجے میں علاقے کی بجلی بند ہونے اور گنجان آباد علاقے کی وجہ سے امدادی کارروائیوں میں مشکلات کاسامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

راولپنڈی کے تمام اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے اور ڈاکٹروں کی اضافی نفری کو طلب کرلیا گیا ہے۔

فوج نے علاقے کو گھیرے میں لے کر کارروائی شروع کردی ہے جبکلہ علاقے کی ہیلی کاپٹر کے ذریعے فضائی نگرانی بھی کی جا رہی ہے۔

دھماکے کی جگہ سے سکیورٹی فورسز نے دستی بم برآمد کرلیا ہے جسے بم ڈسپوزل اسکواڈنے ناکارہ بنادیا ہے۔

واقعہ پر عزاداروں نے شدیدغم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے اسے انتطامیہ کی ناکامی قراردیا ہے۔ لوگوں کا کہنا تھا کہ حادثہ سے پہلے کوئی سکیورٹی دکھائی نہیں دیتی اور واقعہ کے بعد اہلکاروں کا رش لگ جاتا ہے۔

صدر آصف علی زرداری، وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف، ایم کیوایم کے سربراہ الطاف حسین، مسلم لیگ ن کے رہنما اور وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف سمیت دیگر رہنماوں نے واقعہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے ملک کی فرقہ وارانہ ہم آہنگی کیخلاف ایک سازش قرار دیا ہے۔

اس حصے سے مزید

ملک آمریت کا متحمل نہیں ہوسکتا: خورشید شاہ

اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ سیاستدان ماضی سے سبق سیکھ چکے ہیں اور ملک کی بقا کے لیے معمولی غلطیاں نظر انداز کرنی ہوں گی۔

دھرتی کا بیٹا ننانوے برس بعد لوٹ آیا

خوشونت سنگھ کی راکھ ان کے آبائی قصبے ہڈالی میں اس سکول کی دیوار میں رکھ دی گئی، جہاں انہوں نے ابتدائی تعلیم حاصل کی تھی

جماعت اسلامی کا طالبان سے مستقل جنگ بندی کا مطالبہ

امیرِ جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ گولیوں کے بجائے منطقی دلائل کا تبادلہ کیا جانا چاہیٔے۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

مقدّس ریپ

دو دن وہ اسی گاؤں میں ماں کے بازؤں میں تڑپتی رہی۔ گھر میں پیسے ہی کہاں تھے کہ علاج کے لئے بدین تک ہی پہنچ پاتے۔

میڈیا اور نقل بازی کا کینسر

ایسا نہیں کہ میں کوئی پہلا انسان ہوں جس کے خیالات پر نقب لگائی گئی ہو، مگر آخری ضرور بننا چاہتا ہوں

!مار ڈالو، کاٹ ڈالو

مجھے احساس ہوا کہ مجھے اس پر شدید غصہ آ رہا ہے اور میں اسے سچ بولنے پر چیخ چیخ کر ڈانٹنا چاہتا ہوں-

خطبہء وزیرستان

کس سازش کے تحت 'آپکو' بدنام کرنے کے لئے دھماکے کیے جاتے ہیں؟ کس صوبے کے مظلوم عوام آپکے بھائی ہیں؟