18 ستمبر, 2014 | 22 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

ٹی ٹی پی ترجمان کی اطلاع پر بیس کروڑ کا انعام

وفاقی وزیرداخلہ رحمان ملک ۔ اے پی پی تصویر

اسلام آباد: وفاقی وزیرداخلہ رحمان ملک نے تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کے ترجمان احسان اللہ احسان کی کے بارے میں معلومات فراہم کرنے والے کو بیس کروڑ روپے انعام دینے کا اعلان کردیا ہے۔

 منگل کو اسلام آباد میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے رحمان ملک نے کہا ہے کہ   احسان اللہ احسان کا تعلق ٹی ٹی پی سے نہیں ہے بلکہ یہ گروپ ملک میں بیرونی عناصر کیلئے کام کررہا ہے۔

 انکا کہنا تھا کہ وہ جلد عوام کے سامنے ٹی ٹی پی ترجمان کی حقیقت پیش کریں گے۔

 وفاقی وزیرداخلہ نے کہا کہ اس وقت تحریک طالبان پاکستان مختلف گروپوں میں تقسیم ہو چکی ہے جس میں ولی الرحمان گروپ، حکیم اللہ محسود گروپ اور دیگر چھوٹے گروپ بھی شامل ہیں۔

 اس موقع پر انہوں نے کہا کہ احسان اللہ احسان ملک میں کون سی شریعت نافذ کرنا چاہتا ہے جس میں معصوم انسان کو قتل کرنا اور خود کش دھماکے کرنا جائزہ ہیں۔

 رحمان ملک نے کہا کہ دہشت گرد  پیسوں کیلئے اسلام، قرآن اور شریعت کو بدنام کررہے ہیں ۔

 ایک سوال پر وفاقی وزیر داخلہ نے کہا سوات میں ٹی ٹی پی کے ساتھ امن معاہد ہ کیا تھا تاہم انہوں نے معاہدے کی خود خلاف وزی کی ۔

 انکا مزید کہنا تھا کہ اگر شرپسند اور دہشت گرد ہتھیار پھینک دیں تو ان کو عام معافی دی جاسکتی ہے۔

اس حصے سے مزید

کراچی میں پولیو کے مزید دو کیسز کی تصدیق

سلطان آباد میں دس ماہ کی عمر کے ایک بچے جبکہ اورنگی ٹاؤن میں 22 مہینے کی حاجرہ میں اس مہلک وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔

مصالحتی جرگے کی پانچ روزہ ’جنگ بندی‘ کی تجویز

سینیٹر رحمان ملک نے اراکین پارلیمنٹ کو بتایا کہ مذاکراتی جرگہ ایک قابل عمل فارمولے کے قریب پہنچ گیا ہے۔

مقامی حکومت کےبغیرجمہوریت آمریت سےبدتر، الطاف حسین

اپنی61ویں سالگرہ کی تقریب سےویڈیولنک سےخطاب میں ان کاکہناتھاکہ دنیامیں کوئی پارلیمنٹ سڑکوں اورپلوں کی تعمیر نہیں کرتی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مزید جمہوریت

نظام لپیٹ دینے اور امپائر کی باتیں کرنے کے بجائے ہمارا مطالبہ صرف مزید جمہوریت ہونا چاہیے، کم جمہوریت نہیں۔

تبدیلی آگئی ہے

ملک میں شہری حقوق کی عدم موجودگی میں عوام اب وسیع تر بھلائی کا سوچنے کے بجائے اپنے اپنے مفاد کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔

بلاگ

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔

کراچی میں فرقہ وارانہ دہشتگردی

کراچی ایک مرتبہ پھر فرقہ وارانہ دہشت گردی کی زد میں ہے اور روزانہ کوئی نہ کوئی بے گناہ سنی یا شیعہ اپنی جان گنوا رہا ہے۔

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔

کریچر - تھری ڈی: گوڈزیلا یا ڈیوی جونز کا کزن؟

یہ کہنا غلط نہ ہوگا بپاشا ہارر تھرلرز تک محدود ہوگئی ہیں جبکہ عمران عبّاس نے انکے گرد چکر کاٹنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔