02 اگست, 2014 | 5 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

کراچی میں زمین کی الاٹمنٹ پر پابندی

۔—فائل فوٹو

کراچی: سپریم کورٹ نے کراچی میں زمین کی منتقلی پر فوری پابندی عائد کرتے ہوئے رینجرز کو کراچی میں اپنا پولیس اسٹیشن قائم کرنے کا حکم دیا ہے۔

عدالت نے کراچی میں زمینوں کی نئی لیز پر پابندی عائد کرتے ہوئے زمینوں کی منتقلی کا تمام ریکارڈ طلب کرلیا ہے۔

کراچی امن و امان کیس پر عملدرآمد کے حوالے سے سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں سماعت کے دوران عدالت نے زمینوں کی منتقلی پر فوری پابندی لگادی۔

عدالت نے حکم دیا بینظیربھٹو کی ہلاکت کے بعد جلائے گئے ریکارڈ کی تفصیلات پیش کی جائیں اور ریکارڈ آنے تک کہیں کوئی اراضی الاٹ نہ کی جائے۔

اس موقع پر عدالت نے رینجرز اور پولیس حکام کو ہدایت کی کہ شہر میں قیام امن کیلئے باہمی رابطہ بہتر بنائیں۔

سماعت کے دوران رینجرز نے یکم نومبر سے اب تک گرفتار ملزمان کی رپورٹ عدالت میں پیش کی۔ اس کے علاوہ ڈی جی رینجرز نے عدالت کو بریفنگ دی۔

دریں اثناء آئی جی سندھ فیاض لغاری بھی آج عدالت میں پیش ہوئے۔

اس حصے سے مزید

کراچی کے ساحل سے 34 لاشیں نکال لی گئیں

سانحے کے باعث وزیر اعلیٰ ہاؤس میں آج ہونے والی عید ملن کی تقاریب منسوخ کردی گئیں۔

کراچی میں طوفانی بارش، 4 افراد ہلاک

رات گئے گرج چمک اور تیز ہواؤں کے ساتھ بارش کے بعد کئی روز سے جاری گرمی و حبس کا زور ٹوٹ گیا۔

گھوٹکی: غیرت کے نام پر سسر کے ہاتھوں بہو قتل

پولیس نے ملزم کو گرفتار کرلیا ہے، تاہم ملزم کے خلاف کوئی مقدمہ درج نہیں کیا جا سکا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ہمارا پارٹ ٹائم لیڈر

اتنی ناکارہ لیڈرشپ کی مثال مشکل سے ملیگی جس میں کسی دوراندیشی کی کوئی جھلک نہ ہو-

بجٹ اور صحت کا شعبہ

ایسا لگتا ہے کہ صحت کے بجٹ کی بڑھتی ہوئی ضروریات کیلئے عطیات دینے والے ملکوں کے پیسے پر زیادہ انحصار کیا جاتا ہے

بلاگ

پکوان کہانی: موسم گرما کی سوغات 'آم

پرانے وقتوں کے لوگوں کی دلچسپ تصور اور حکمت کی بدولت، پھلوں کا بادشاہ عام انسان کی غذا بن گیا۔

پاکستان میں اسٹارٹ اپس اب تک ناکام کیوں؟

آجکل یہ فیشن سا بن گیا ہے کہ ہر کوئی یہی کہتا نظر آ رہا ہے کہ اس کے پاس 'اسٹارٹ اپ' ہے-

ساغر صدیقی : ایک دل شکستہ شاعر

وہ خوبصورت نظمیں لکھتے، پھر بلند آواز میں خالی نگاہوں سے پڑھتے، پھر ان کاغذات کو پھاڑ دیتے جن پر وہ نظمیں لکھی ہوتیں

پکوان کہانی: کابلی پلاؤ - شمال کی شان

گوشت میں پکے چاول اس خطے کے جنگجوؤں کی ذہنی مطابقت اور جسمانی ساخت کے لیے موزوں تھے۔