21 اگست, 2014 | 24 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاکستان مزید طالبان قیدیوں کو رہا کرنے پر رضامند

پاکستان اور افغان کے اعلیٰ سطح کے وفد کے درمیان میٹنگ جاری ہے۔ فوٹو اے ایف پی۔۔۔

اسلام آباد: پاکستان نے افغان حکومت اور شدت پسندوں کے درمیان مذاکرات کو معنی خیز بنانے کیلیے مزید طالبان قیدیوں کو رہا کرنے پر رضامندی ظاہر کر دی ہے۔

یہ اعلان جمعے کو پاکستانی کی وزیر خارجہ حنا ربانی کھر اور ان کے افغان ہم منصب زلمئی رسول کے درمیان اسلام آباد میں ہونے والی ملاقات کے بعد کیا گیا۔

ابھی تک متوقع طور پر رہا کیے جانے والے طالبان قیدیوں کی تعداد نہیں بتائی گئی ہے تاہم مذاکرات میں 2010 میں پکڑے جانے والے طالبان کے دوسرے اہم رہنما ملا عبدالغنی برادر کی رہائی کو زیر غور نہیں لایا گیا۔

ایک سینئر پاکستانی سیکیورٹی آفیشل نے اس سے قبل اے ایف پی کو بتایا کہ "ابھی تک برادر کی رہائی کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا"۔

ایک مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ملکوں نے مزید قیدی رہا کرنے، روابط کو بہتر بنانے کے ساتھ ساتھ طالبان سے القاعدہ کے تعلق کو ختم کرنے پر زور دینے کے حوالے سے رضامندی ظاہر کی ہے۔

رواں ماہ میں یہ افغانستان کے کسی اعلیٰ سطح کے وفد کا دوسرا دورہ ہے جس کا مقصد قیام امن کیلیے طالبان رہنماؤں کی رہائی یقینی بنانا ہے۔

دو ہفتے قبل پاکستان اور افغانستان کی اعلیٰ امن کونسل کے وفد کے درمیان ہونے والے مذاکرات کے نتیجے میں 9 طالبان قیدیوں کو رہا کیا گیا تھا۔

افغان حکام کا ماننا ہے کہ اگر پاکستان میں قید سینئر طالبان رہنماؤں کو رہا کر دیا جائے تو وہ شدت پسندوں کو مذاکرات کیلیے رضامند کر سکتے ہیں تاکہ 2014 میں نیٹو کے افغانستان سے متوقع انخلا سے قبل ایک دہائی سے زائد عرصے سے جاری جنگ کو ختم کیا جا سکے۔

رسول نے پاکستانی ہم منصب سے ملاقات کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ "میں امید رکھتا ہوں کہ ہم وقت کے ساتھ ساتھ امن کیلیے اہم اقدامات اٹھانے کا سلسلہ جاری رکھیں گے اور جو کوئی بھی امن مذاکرات کو آگے بڑھانے میں دلچسپی رکھتا ہے وہ آگے آئے"۔

ایک افغان آفیشل نے ملاقات سے قبل اے ایف پی کو بتایا تھا کہ رسول برادر سمیت مزید طالبان قیدیوں کی رہائی کے حوالے سے بات چیت کریں گے۔

تاہم ایک سینئر پاکستانی آفیشل نے اے ایف پی کو بتایا کہ ابھی تک برادر کی رہائی کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔

آفیشل نے کہا کہ "ہم اس اس بات کا جائزہ لے رہے ہیں کہ اب وہ کس حد تک اہم ہیں کیونکہ پاکستان کا ماننا ہے کہ اب شاید ان کا اتنا اثرورسوخ نہ ہو جتنا دو سال قبل کراچی میں گرفتار ہونے سے پہلے تھا"۔

اس حصے سے مزید

انتخابی اصلاحات کمیٹی:کارروائی ’’خفیہ‘‘ ہوگی، نوٹیفیکیشن جاری

کمیٹی کے قواعد و ضوابط کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا،3ماہ میں رپورٹ پارلیمنٹ میں پیش کرنے کی پابندی عائد

حکومت دھرنے ختم کرنے کیلئے بامقصد مذاکرات کرے، جنرل راحیل

وزیر داخلہ اور وزیر اعلیٰ پنجاب کی فوجی سربراہ سے ملاقات، ریڈ زون میں سیکورٹی کی صورتحال پرغور۔

وزیراعظم کا عمران خان سے مذاکرات کا فیصلہ

ایک اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ چوہدری سرور مارچ اور دھرنے ختم کرنے پر پی ٹی آئی اور پی اے ٹی کو راضی کریں گے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

پاکستان کا اتاترک

روز روز یہی سننے کو مل رہا ہے کہ ہمیں ایک ایسے اتاترک کی ضرورت ہے جو'اس نظام' کو بدل دے-

نمبروں کی غلط فہمی

یہ ایک افسوسناک بات ہے کہ سوئس بینک میں رقم کے بارے میں ایک بالکل بے تکا اندازہ اتنے عرصے سے خبروں میں گردش کررہا ہے۔

بلاگ

پاک سری لنکا ٹیسٹ سیریز – ایک جائزہ

امید کی جانی چاہئے کہ پاکستانی ٹیم ٹیسٹ سیریز میں اپنی شکست کا بدلہ ون ڈے سیریز میں لینے کی پوری کوشش کرے گی۔

جارج اورویل کی جائے پیدائش کا دورہ

حکومت نے ان کی جائے پیدائش پرایک میوزیم کی تعمیر کا بھی اعلان کیا ہے، جس سے اس عظیم لکھاری کی یاد قائم رکھی جا سکے گی۔

پیارے افضل' اچھوتی کہانی، بہترین پرفارمنس'

چند ماہ سے ملک بھر میں دیکھے اور پسند کیے جانے والے ڈرامہ کو رواں سال کا اب تک کا بہترین کھیل قرار دیا گیا ہے-

انقلاب کو میرے لان سے ہٹاؤ

اسلام آباد کے رہائشی اس بات کو قبول نہیں کریں گے، کہ انقلابی ان کے لان میں ڈیرے ڈال کر بیٹھ جائیں۔