31 اگست, 2014 | 4 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

یوٹیوب کھولنے کے احکامات جاری نہیں کیے، پی ٹی اے

۔۔۔۔ فائل فوٹو
۔۔۔۔ فائل فوٹو

اسلام آباد: پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) نے وضاحت کی ہے کہ  ملک میں یوٹیوب ویب سائٹ بحال کرنے کے احکامات جاری نہیں کیے گئے۔

 واضح رہے کہ اسلام مخالف فلم کی موجودگی کے بعد وزیراعظم کی ہدایت پر پی ٹی اے نے سوشل ویب سائٹ کو بلاک کردیا تھا۔

 سترہ ستمبر کو وزیراعظم ہاؤس سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ جب تک یوٹیوب گستاخانہ مواد کی حامل فلم نہیں ہٹائے گا اس وقت تک پابندی برقرار رکھی جائے گی۔

 گزشتہ روز ویب سائٹ بحال کیے جانے سے متعلق افواہوں کا نوٹس لیتے ہوئے پی ٹی اے کے ترجمان نے پیر کو کہا کہ 'اتھارٹی نے ایسے کوئی احکامات جاری کیے اور نہ ہی اسے حکومت نے ایسی کوئی ہدایات دی ہیں'۔

 پریس ریلیز کے مطابق، اتھارٹی نے الیکٹرانک میڈیا پر چلنے والے ٹکرز کا بھی نوٹس لیا اور انٹر نیٹ سروس فراہم کرنے والے اداروں کو یوٹیوب نہ کھولنے کی ہدایت کی۔

 پی ٹی اے نے معاملے کی تحقیقات کا آغاز کرتے ہوئے یوٹیوب کھولنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کا عندیہ دیا ہے۔

اس حصے سے مزید

تحریک انصاف نے بھی دھرنا منتقل کرنے کا اعلان دیا

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم ہاؤس کے سامنے دھرنا دینا جمہوری حق ہے۔

پارلیمنٹ ہاؤس کے قریب پولیس اور مظاہرین میں جھڑپیں جاری

عوامی تحریک اور تحریک انصاف کے کارکنان کو روکنے کے لیے آنسو گیس کا استعمال اور لاٹھی چارج کیا جا رہا ہے

۔’’ضرب عضب‘‘: 32 دہشت گرد ہلاک، 3ٹھکانے تباہ

آئی ایس پی آر کے مطابق بارودی مواد سے بھری ہوئی 23 گاڑیاں اور اسلحے کے 4 ذخائر بھی تباہ کر دیئے گئے ہیں۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (7)

abdal bhatti
31 دسمبر, 2012 04:45
aoa sir ap youtube ko open kun nei kate ho ham sari awam wo movie nei dekhe ga .dubai main saudia aribia main b to youtube chal rahi ha to pakistan main kun nei chal rahi ha .my request to wazir e azam raja sahab se ha k youtube ko new year main to open kar den .plz ye mera pygam wazir e azam tak zaror bejna .khuda ka wasta ha youtube khol do pta.zindabad
Mehmood
02 جنوری, 2013 06:25
theak fermaya ha ap nay, pakisan ma utube us time tk ni khulni chahiya jb th gustakh amaiz film is web sa hta d jae gi
Asim Hunain
09 جنوری, 2013 09:24
youtube ko bahal hojana chahye ye insan k apne upar he k wo kya dekh rha he deen iman mazboot hona chahye or vese bhi youtube kholne k kai tareeqe hyn,, har chez pe pabandi lagai jarahi he CNG, MOB, Bijli, kuch b to nh milrha pakistan me ye fail Govt he meri request he youtube kholdya jae,, iske bagher internet me kuch nh koi movie nh dekh skte koi video nh dekh skte to phir kya fayda internet ka koi youtube jaisi website nh he Soo plzzz unblock youtube Now...
Asim Hunain
09 جنوری, 2013 09:28
Yar ye sub insan k apne upar hota he wo kya dekh rha he,, or agar sites band karni hi hyn to SEXTUBE, REDTUBE, block karyn youtube hi ko q band kya huwa he... plzzz youtube unblock NOW
majid khan
08 فروری, 2013 15:02
youtube band karne ka koi fida nai youtube kolne wale to youtube kolre hai hotsports unblock proxy k zarya youtube on hora hai mera ray hai k youtube jald on kia jay shukriya
majid khan
10 فروری, 2013 21:41
youtube on kia jay
majid khan
10 فروری, 2013 21:48
sare pakistan k sadar be akal hai kas tor par reman malik jis ko kur an k sore surat b aprne nai ate usko bolo youtube on karwado
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ملکی مسائل سے غیر آہنگ حکومتی پالیسیاں

کیا یہ بات سمجھ آنے والی نہیں کہ میگا پروجیکٹس پر اٹھنے والے پیسے سے پہلے توانائی کے مسئلے کو حل کر لیا جائے؟

اسلام آباد کا تماشا

عمران خان کو یہ تسلیم کرنا چاہیے کہ جوڈیشل کمیشن ایک کمزور وزیر اعظم کے اثر و رسوخ سے آزاد ہو کر تحقیقات کر سکے گا.

بلاگ

پکوانی کہانی- سندھی بریانی

ہر قسم کی بریانیوں میں سے یہ بریانی منفرد حیثیت رکھتی ہے جو سندھی طریقے سے بہت زیادہ مصالحوں کے ساتھ تیار ہوتی ہے۔

‫ڈرامہ ریویو: وہ۔۔۔ دوبارہ (خوف و دہشت کا احساس)

انسان چاہے بد روحوں سے جتنا بھی ڈرے مگر ان پر بنی فلموں یا ڈراموں کو دیکھنے کا شوق پھر بھی اس کا پیچھا نہیں چھوڑتا۔

تھری ڈی پرنٹنگ پر کچھ سوالات

کچھ کیسز ضرور ہوں گے جن میں تھری ڈی پرنٹنگ کو کاپی رائیٹ مواد کی غیر قانونی نقل تیار کرنے کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

پانی کی کمی اور پاکستان کا مستقبل

وزرات منصوبہ بندی کے مطابق پاکستان کی پانی ذخیرہ کی صلاحیت صرف نو فیصد ہے جبکہ دنیا بھر میں یہ شرح چالیس فیصد ہے۔