23 ستمبر, 2014 | 27 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

سی این جی قیمتوں میں اضافے کی درخواست مسترد

سی این جی اسٹیشن۔ فائل فوٹو آن لائن
سی این جی اسٹیشن۔ فائل فوٹو آن لائن

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے سی این جی مالکان کی جانب سے قیمتوں میں اضافے کی درخواست مسترد کردی۔

اس کے علاوہ عدالت نے سی این جی سٹیشنز کے اکاؤنٹس کی تفصیلات بھی طلب کرلیں ہیں۔

جسٹس جواد ایس خواجہ اور جسٹس خلجی عارف حسین پر مشتمل عدالت عظمٰی کے دو رکنی بینچ نے سی این جی قیمتوں سے متعلق کیس  کی سماعت کی۔

اوگرا کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے آج دلائل دیے۔

دوران سماعت، جسٹس جواد ایس خواجہ نے ان سے استفسار کیا کہ عدالت کو تین ہزار، تین سو پچانوے سی این جی اسٹیشنز کا ٹیرف پیش کیا جائے کیونکہ لائسنس کے بغیر سی این جی فروخت نہیں کی جائے گی۔

سپریم کورٹ میں جمع کرائے گئے سی این جی نرخوں کے نئے فارمولے کو بھی عدالت نے مسترد کردیا۔

سماعت کے دوران اوگرا نے دیگر سفارشات اور وزارت پیٹرولیم کے کردار سے متعلق بھی عدالت کو آگاہ کیا۔

دریں اثناء عدالت نے کیس کی سماعت کل تک ملتوی کردی۔

اس حصے سے مزید

ای او بی آئی کرپشن اسکینڈل کا مرکزی ملزم گرفتار

پولیس اور ایف آئی اے نے ملزم ظفر گوندل کو سپریم کورٹ کے باہر سے گرفتار کرکے تھانہ سیکریٹریٹ منتقل کردیا۔

وزیراعظم کے خلاف مقدمے کا عدالتی حکم سپریم کورٹ میں چیلنج

اٹارنی جنرل نے اپنے تحریری بیان میں کہا ہے کہ انتظامیہ کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کا حکم غیر قانونی ہے۔

طاہر القادری کا دھرنے کے شرکاءکو واپسی کی اجازت دینے سے انکار

طاہر القادری نے پیر کو دھرنے میں شریک اپنے حامیوں کو گھر واپسی کی اجازت دینے سے انکار کردیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

سوشلزم کیوں؟

اگر ہم مسلسل بحث کرسکتے ہیں کہ جمہوریت کیوں نہیں، شریعت کیوں نہیں، تو اس سوال پر بھی بحث ضروری ہے کہ سوشلزم کیوں نہیں؟

مڑی تڑی باتیں اور مقاصد

چیزوں کو اپنی مرضی کے مطابق توڑ مروڑ کر پیش کرنے، اور غیر آئینی اقدامات سے پاکستان کے مسائل میں صرف اضافہ ہی ہوگا۔

بلاگ

مووی ریویو: 'خوبصورت' - فواد اور سونم کی خوبصورت کہانی

اپنے پُر مزاح کرداروں کے باوجود فلم شوخ اور رومانٹک ڈرامہ ہے، جسے آپ باآسانی ڈزنی کی طلسماتی کہانی کہہ سکتے ہیں-

کراچی میں بجلی کا مسئلہ اور نیپرا کا منفی کردار

اپنی نااہلی کی وجہ سے نیپرا نے بیرونی سرمایہ کاروں کو مشکل میں ڈال رکھا ہے، جن میں سے کچھ تو کام شروع کرنے کو تیار ہیں۔

خواب دو انقلابیوں کے

ایک انقلابی خود کو وزیر اعظم بنتا دیکھ رہا ہے تو دوسرا صدارتی محل میں مریدوں سے ہاتھ پر بوسے کروانے کے خواب دیکھ رہا ہے۔

کوئی ان سے نہیں کہتا۔۔۔

ریڈ زون کے محفوظ باسیو! ہمیں دہشت گردوں، ڈاکوؤں، چوروں، اغواکاروں، تمہاری افسر شاہی اور پولیس سے بچانے والا کوئی نہیں۔