01 اکتوبر, 2014 | 5 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

غیر ملکی سپر مارکیٹس کی ہندوستان تک رسائی

لوک سبھا میں قائد حزب اختلاف اور بھارتہی جنتہ پارٹی کی رہنما سشما سوارج میڈیا سے گفتگو کر رہی ہیں۔ فوٹو اے ایف پی۔۔۔

نئی دہلی: ہندوستانی حکومت نے معاشی اصلاحات کیلیے غیر ملکی سپر مارکیٹس کو انڈین مارکیٹ تک رسائی کی اجازت دینے کے معاملے پر قانون دانوں کی حمایت پر پارلیمنٹ سے بل پاس کرالیا۔

چار دن سے جاری بحث کے بعد ہندوستانی ایوان بالا راجیا سبھا میں نامزد امیدواروں نے حکومت کی حمایت کرتے ہوئے اپوزیشن کی جانب سے وال مارٹ جیسے غیر ملکی اداروں کو انڈین مارکیٹ تک رسائی دینے کی مخالفت کو مسترد کر دیا ۔

امریکہ کی بڑی فرموں میں سے ایک وال مارٹ ہندوستان میں غیر ملکی اسٹورز کی چین کھولنے والی پہلی کمپنی ہو گی تاہم اس پر حزب اختلاف کا کہنا تھا کہ اس سے ملک کے لاکھوں چھوٹے  بڑے کاروباروں کو نقصان پہنچے گا۔

راجیا سبھا میں ہونے والی ووٹنگ میں اپوزیشن کو 14 ووٹ سے شکست کا سامنا کرنا پڑا جہاں حکمراں جماعت کانگریس کو 123 جبکہ اپوزیشن کو 109 ووٹ ملے۔

ہندوستانی نائب صدر اور ایوان بالا میں اسپیکر کے فرائض انجام دینے والے حامد انصاری نے اس کو غلط عمل قرار دیا ہے۔

بدھ کو لوک سبھا میں ہونے والی ووٹنگ میں حکومت نے 35 ووٹوں کے فرق سے بل پاس کرا لیا تھا، اس بل کے حق میں 253 جبکہ مخالفت میں 218 ووٹ دیے گئے تھے۔

اس حصے سے مزید

اترپردیش میں ٹرینوں کی ٹکر سے 12 افراد ہلاک

شمالی ہندوستان میں ریاست اترپردیش کے شہر گورکھپور میں دو ٹرینوں میں تصادم سے کم از کم 12 افراد ہلاک اور 45 زخمی ہو گئے۔

مودی کا بیوروکریٹس کو باتھ روم صاف کرنیکا حکم

ہندوستانی وزیر اعظم نےمہاتما گاندھی کی سالگرہکے موقع پر بیورو کریٹس کو آفسز اور باتھ روم کی صفائی کا حکم دیا ہے۔

مودی، اوباما ملاقات، کشمیریوں کا احتجاج

اس ملاقات میں دونوں رہنماؤں نے دہشت گردی سے نمٹنے اور تباہ کن ہتھیاروں کا پھیلاؤ روکنے پر اتفاق کیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماؤں اور بچوں کے قاتل ہم

پاکستان سے کم فی کس آمدنی رکھنے والے ممالک پیدائش کے دوران ماؤں اور بچوں کی اموات پر قابو پا چکے ہیں۔

تبدیلی کا پیش خیمہ

اکثر ایسے بڑے واقعات پیش آتے ہیں جو تبدیلی کے عمل کو تیز کردیتے ہیں، مگر ایسے حالات کسی فرد کے پیدا کردہ نہیں ہوتے۔

بلاگ

!گو نواز گو

اس ملک میں پڑھے لکھے لوگوں کی قدر ہی نہیں۔ جب تک پڑھے لکھوں کو وی آئی پی پروٹوکول نہیں دیا جاتا یہ ملک ترقی نہیں کرسکتا

قدرتی آفات اور پاکستان

قدرتی آفات سے پہلے انتظامات پر ایک ڈالر جبکہ بعد میں سات ڈالر خرچ ہوتے ہیں، اس کے باوجود ہم پہلے سے انتظامات نہیں کرتے۔

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟