20 ستمبر, 2014 | 24 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

غیر ملکی سپر مارکیٹس کی ہندوستان تک رسائی

لوک سبھا میں قائد حزب اختلاف اور بھارتہی جنتہ پارٹی کی رہنما سشما سوارج میڈیا سے گفتگو کر رہی ہیں۔ فوٹو اے ایف پی۔۔۔

نئی دہلی: ہندوستانی حکومت نے معاشی اصلاحات کیلیے غیر ملکی سپر مارکیٹس کو انڈین مارکیٹ تک رسائی کی اجازت دینے کے معاملے پر قانون دانوں کی حمایت پر پارلیمنٹ سے بل پاس کرالیا۔

چار دن سے جاری بحث کے بعد ہندوستانی ایوان بالا راجیا سبھا میں نامزد امیدواروں نے حکومت کی حمایت کرتے ہوئے اپوزیشن کی جانب سے وال مارٹ جیسے غیر ملکی اداروں کو انڈین مارکیٹ تک رسائی دینے کی مخالفت کو مسترد کر دیا ۔

امریکہ کی بڑی فرموں میں سے ایک وال مارٹ ہندوستان میں غیر ملکی اسٹورز کی چین کھولنے والی پہلی کمپنی ہو گی تاہم اس پر حزب اختلاف کا کہنا تھا کہ اس سے ملک کے لاکھوں چھوٹے  بڑے کاروباروں کو نقصان پہنچے گا۔

راجیا سبھا میں ہونے والی ووٹنگ میں اپوزیشن کو 14 ووٹ سے شکست کا سامنا کرنا پڑا جہاں حکمراں جماعت کانگریس کو 123 جبکہ اپوزیشن کو 109 ووٹ ملے۔

ہندوستانی نائب صدر اور ایوان بالا میں اسپیکر کے فرائض انجام دینے والے حامد انصاری نے اس کو غلط عمل قرار دیا ہے۔

بدھ کو لوک سبھا میں ہونے والی ووٹنگ میں حکومت نے 35 ووٹوں کے فرق سے بل پاس کرا لیا تھا، اس بل کے حق میں 253 جبکہ مخالفت میں 218 ووٹ دیے گئے تھے۔

اس حصے سے مزید

کشمیری رہنماؤں کا اسکاٹ لینڈ طرز کے ریفرنڈم کا مطالبہ

کشمیری رہنما سید عبدالرحمن گیلانی نے کہا ہے کہ ' آزادی منتخب کرنا بنیادی حق ہے جو کسی قوم سے چھینا نہیں جانا چاہیے '۔

مودی نے القاعدہ جنوبی ایشیا ونگ کا قیام ناممکن قرار دے دیا

وزیر اعظم ہندوستان نے کہا ہے کہ اگر کوئی یہ سوچتا ہے کہ ہندوستان کے مسلمان ان کے اشاروں پر عمل کریں گے تو وہ خبطی ہیں۔

چینی صدر اپنے پہلے دورے پر انڈیا پہنچ گئے

دونوں ملکوں کی توجہ باہمی معاشی تعاون پرمرکوز، انڈین ریلوے کی بحالی اور ایٹمی تعاون پر معاہدے متوقع۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

اب عمران خان کیا کریں گے؟

عمران خان انتخابی اصلاحات اور تحقیقات کی پیشکش کو تسلیم کر کے جیت سکتے تھے لیکن وہ مزید چیزیں داؤ پر لگائے جارہے ہیں۔

رودرہیم کا سبق

بچوں پر ہونیوالے جنسی تشدد پر ہماری شرمندگی کی سمت غلط ہے۔ شرم کی بات تو یہ ہے کہ ہم اس کو روکنے کی کوشش نہ کریں-

بلاگ

میں باغی ہوں

اس ملک میں کہیں قانون کی حکمرانی نہیں، ہر جگہ لوٹ مار مچی ہے- کسی کو قانون کا پاس نہیں- تبدیلی آئی تو سب کا احتساب ہوگا-

دھرنے، عوام اور امید کی ہار

یہ میچ بھلے ہی جتنا بھی عرصہ جاری رہے، پر اس میں کھیلنے والے اور دیکھنے والے سب ہی ہارنے والے ہیں۔

مووی ریویو: دختر -- دلوں کو چُھو لینے والی کہانی

اپنی تمام تر خوبیوں اور کچھ خامیوں کے ساتھ اس فلم کو پاکستانی نکتہ نگاہ سے پیش کیا گیا ہے۔

پھر وہی ڈیموں پر بحث

ڈیموں سے زراعت کے لیے پانی ملتا ہے، پانی پر کنٹرول سے بجلی پیدا کی جاسکتی ہے اور توانائی بحران ختم کیا جاسکتا ہے۔