03 ستمبر, 2014 | 7 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاکستان ہاکی ٹیم کا ایف آئی ایچ رینکنگز میں پانچواں نمبر

پاکستان ٹیم اپنے تمغوں کیساتھ۔ – اے ایف پی فوٹو

کراچی: انٹرنیشن ہاکی فیڈریشن کی جاری کردہ نئی رینکنگز کیمطابق پاکستان ہاکی ٹیم اپنی پچھلی نویں پوزیشن سے چار درجہ ترقی کے بعد پانچویں نمبر پر پہنچ گئی ہے۔

گرین شرٹس کو یہ ترقی آسٹریلیا کے شہر میلبورن میں حال ہی میں ہونے والے چیمپیئنز ٹرافی مقابلوں میں کانسی کا تمغہ حاصل کرنے کے بعد نصیب ہوئی ہے۔ ان مقابلوں میں پاکستان کے شکیل عباسی کو بہترین کھلاڑی کے اعزاز سے بھی نوازا گیا تھا۔

پاکستانی ٹیم نے بہترین کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے کوارٹر فائنل میں جرمنی کیخلاف اپ سیٹ فتح حاصل کی تھی مگر سیمی فائنل میں اسے نیدرلینڈ کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

تاہم اس شکست کے بعد تیسری پوزیشن کیلئے کھیلے گئے میچ میں پاکستان نے بھرپور واپسی کی اور اپنے روایتی حریف ہندوستان کو تین دو کے مارجن سے شکست دیکر کانسی کا تمغہ اپنے نام کیا تھا۔

رینکنگز کیمطابق پہلی چار پوزیشنز میں کوئی تبدیلی واقع نہیں ہوئی ہے اور لندن اولمپکس چیمپیئن جرمنی بدستور پہلے، آسٹریلیا دوسرے، نیدرلینڈ تیسرے اور برطانیہ چوتھے نمبر پر قائم ہیں۔

پاکستان سے ایک پوزیشن پیچھے چھٹے نمبر پہ نیوزی لینڈ جبکہ اسپین، کوریا، بیلجیئم، ارجنٹینا اور ہندوستان بالترتیب ساتویں، آٹھویں، نویں، دسویں اور گیارھویں نمبر پر فائز ہیں۔

اس حصے سے مزید

مصباح کی خراب کارکردگی پاکستانی شکست کی بڑی وجہ

پاکستان کو سری لنکا نے ٹیسٹ سیریز میں دو صفر جبکہ ون ڈے سیریز میں دو ایک سے شکست دی تھی۔

شیراپووا یو ایس اوپن سے باہر، جوکووچ کی پیش قدمی جاری

سرینا ولیمز اور واورنکا بھی کامیاب، جوکووچ اور اینڈی مرے یو ایس اوپن کے کوارٹر فائنل میں مدمقابل ہوں گے۔

آسٹریلیا کو زمبابوے کے ہاتھوں اپ سیٹ شکست

زمبابوے نے سہ ملکی سیریز میں آسٹریلیا کو تین وکٹوں سے اپ سیٹ شکست دے کر 31 سال میں پہلی کامیابی حاصل کرلی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماڈل ٹاؤن کیس: کچھ حماقتیں

حکمرانوں کے منع کرنے پر پولیس کی جانب سے مقتولین کی ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کی وجہ سے معاملہ مزید خراب ہوا۔

بیوروکریٹس کی یونین

ذاتی مفادات کے لیے چوری چھپے سیاسی ہونے سے زیادہ بہتر ہے کہ ریاست کے وسیع تر مفاد کے لیے کھلے عام سیاسی ہوا جائے۔

بلاگ

ڈرامہ ریویو: 'لا'...الجھتے رشتوں کی کہانی

ڈرامہ پرفیکٹ نہیں بھی تھا تو بھی یہ ان ڈراموں میں سے ایک ضرور تھا جسے دیکھ کر بیزاری کا احساس نہیں ہوتا۔

مووی ریویو : 'راجہ نٹور لال' سٹیریو ٹائپنگ کا شکار ہوگئی

یہ فلم نہ تو مزاح پر پوری اترتی ہے اور نہ ہی اس میں اتنا تھرلر ہے جو اسے ذہن میں نقش کر دے۔

سستا خون: براۓ انقلاب

"انقلاب" سیاست چمکانے کے لیے ایک خوشنما لفظ بن چکا ہے، اور اسے مزید چمکانے کے لیے کارکنوں کا سستا خون بھی دستیاب ہے۔

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔