20 اپريل, 2014 | 19 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

تعاون' ممبئی حملوں سے بچا سکتا تھا: رحمان ملک'

وفاقی وزیر داخلہ رحمان۔ فوٹو اے پی پی۔۔۔
وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک۔ فوٹو اے پی پی۔۔۔

نیودہلی: وزیر داخلہ رحمان ملک نے اتوار کے روز کہا کہ آگر پاکستان اور ہندوستان کی اینٹیلی جنس اور سیکیورٹی ایجنسیاں ایک دوسرے سے تعاون کررہیں ہوتیں تو ممبئی میں سن دو ہزار آٹھ میں دہشت گردی کا واقعہ نہ ہوتا۔

رحمان ملک کا کہنا تھا کہ آگر دونوں ممالک کے درمیان بات چیت ہوتی، معلومات کا اشتراک ہوتا تو یہ حملوں سے بچا جاسکتا تھا۔

پریس ٹرسٹ آف انڈیا کے مطابق رحمان ملک نے ہندوستانی سیکیورٹی  ایجنسیوں پر حملے کو روکنے کی 'ناکامیابی' کا الزام دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہندوستانی غیر ریاستی عناصر اس حملے میں شامل تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی - امریکی دہشت گرد ڈیوڈ ہیڈلے نے القاعدہ دہشت گرد الیاس کشمیری جو کہ پاکستانی فوج کے ایک ریٹائرڈ میجر تھے اور تین ہندوستانی دہشت گرد- ابو جندل، جبیب اللہ اور فہیم انصاری کے ساتھ مل کر سازش کی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ لوگ ہندوستان میں آزاردی سے گھومتے رہے۔

رحمان ملک نے آبزرور ریسرچ فاؤنڈیشن میں ایک لیکچر دیتے ہوئے کہا کہ نہ تو یہ ایک ریاست کی طرف سے سپانسر ڈرامہ کارروائی تھی اور نہ ہی ریاست کی طرف سے سپانسر ایکشن تھا بلکہ یہ غیر ریاستی عناصر کی طرف سے کارروائی تھی۔

ان کا کہنا تھا کہ آگر تمام چیزوں کو جوڑا جائے تو ایسا ہوا کہ تین لڑکے ملے، جن میں سے ایک امریکہ سے آیا جس کے پاس پیسہ تھا اور کریڈٹ کارڈز تھے اور اس نے فرنچائیز بنائی اور سوشل سرکل بنایا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ایسی چیزیں ایجنسی کی نگاہ سے چھپی نہیں رہنی چاہیے۔

رحمان ملک کا کہنا تھا کہ جب کہ ایجنسیاں ناکام ہوگئی ہیں پاکستان اور ہندوستان دونوں کی تو ہم بھی ناکام ہوگئے ہیں۔ کیوں؟ اس لیے کیوں کہ پاکستان اور ہندوستان کے بیچ کوئی تعاون نہیں تھا۔

اس حصے سے مزید

وزیرِ اعظم نے حامد میر حملے کی جوڈیشل تحقیقات کا حکم دیدیا

کمیشن کیلئے سپریم کورٹ سے درخواست کی جائے گی، قاتلوں کی اطلاع پر ایک کروڑ روپے انعام کا اعلان۔

اقوامِ متحدہ نے اپنے دوکارکن لاپتہ ہونے کی تصدیق کردی

اقوامِ متحدہ کی ذیلی تنظیم یونیسیف کے مقامی ارکان کراچی کے باہر ایک تفریحی مقام سے لاپتہ ہوئے ہیں۔

'دہشت گردی ختم کیے بغیر مضبوط دفاع کا قیام ناممکن'

مضبوط معیشت اور دہشت گردی ختم کیے بغیر ملکی دفاع کا قیام ناممکن ہے،وزیر اعظم کا کاکول اکیڈمی میں پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے

دو قومی نظریہ اور ہندوستانی اقلیتیں

دو قومی نظریہ مسلمانوں اور ہندوؤں میں تو تفریق کرتا ہے لیکن دیگر اقلیتوں، خاص کر دلتوں کو یکسر فراموش کرتا ہے۔