02 اگست, 2014 | 5 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

سپریم کورٹ کے فیصلے پر ایم کیو ایم کی درخواستیں

ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی کے ڈپٹی کنوینئرڈاکٹر فاروق ستار۔ – فائل فوٹو
ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی کے ڈپٹی کنوینئرڈاکٹر فاروق ستار۔ – فائل فوٹو

کراچی: متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) نے کراچی میں نئی حلقہ بندیوں سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے کیخلاف دو درخواستیں دائر کردی ہیں۔

پیر کو ایم کیو ایم کے سینیٹر ایڈووکیٹ فروغ نسیم کی جانب سے دائر کی گئی درخواستوں میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ مردم شماری کے بغیر نئی حلقہ بندیاں غیرآئینی اور غیرقانونی ہیں۔

سپریم کورٹ کراچی رجسٹری کے باہر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ مردم شماری کے بغیر ازسرنو حلقہ بندیاں کرانا غیرآئینی اور غیر قانونی ہے۔

انکا کہنا تھا کہ حلقہ بندیاں کرانا ہی ہیں تو صرف کراچی میں نہیں پورے ملک میں کرائی جائیں۔

ڈاکٹر فاروق ستار کے مطابق، وہ سمجھتے ہیں کہ مردم شماری کے بغیر کراچی میں حلقہ بندیاں کراکر ایم کیو ایم کو دیوار سے لگایا جارہا ہے۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے 26 نومبر کو کراچی میں ازسر نو حلقہ بندیاں کروانے کا حکم دیا تھا۔

فیصلے سے متعلق اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے متحدہ کے قائد الطاف حسین نے 29 نومبر کو اپنے خطاب میں سپریم کورٹ کے ایک جج  کے ریمارکس کو سراسر غیرآئینی، غیر جمہوری اور متعصبانہ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ کسی بھی جماعت کو مینڈیٹ دینا عدالت کا نہیں بلکہ عوام کا جمہوری حق ہے۔

اس پر چودہ دسمبر کو سپریم کورٹ نے متحدہ کے قائد کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کرتے ہوئے سات جنوری کو طلب کیا تھا۔

عدالت کا کہنا تھا کہ الطاف حسین کا کراچی بدامنی کیس کی سماعت کرنے والے ججوں سے متعلق خطاب توہین اور دھمکی آمیز تھا۔

اس حصے سے مزید

پشاور: پولیو کے دو نئے کیسز کا انکشاف

قومی ادارہ صحت ذرائع کے مطابق پولیو کے حالیہ کیسز خیبر پختونخوا اور فاٹا کے علاقوں سے رپورٹ ہوئے۔

آپریشن ضرب عضب: پاک فوج کی کارروائی، تین مبینہ شدت پسند ہلاک

حالیہ کارروائی کے دوران بھاری تعداد میں اسلحہ بھی برآمد ہوا ہے۔

ہنگومیں مسافر کوچ پر فائرنگ، ایک شخص ہلاک

مہمند ایجنسی میں گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول اور باجوڑ ایجنسی میں ایف سی چیک پوسٹ کو دھماکہ خیز مواد سے تباہ کردیا گیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

کاؤنٹ ڈاؤن ٹو 14 اگست

پی ایم ایل-این نے پی ٹی آئی کے لانگ مارچ کو ناکام بنانے کے لئے یوم آزادی کو چنا ہے-

ہمارا پارٹ ٹائم لیڈر

اتنی ناکارہ لیڈرشپ کی مثال مشکل سے ملیگی جس میں کسی دوراندیشی کی کوئی جھلک نہ ہو-

بلاگ

پاکستان یا متاثرستان

اس ملک میں تو متاثرین ہی متاثرین ہیں ایک حکومت کس کس کو سنبھالے؟

کیا یہ بھی پاکستان ہے؟

گُل خان آتی جاتی بسوں کو دیکھتا رہا اور سوچتا رہا کہ اس بس میں سفر کرنے والے کتنے خُوش نصیب ہیں۔

پکوان کہانی: موسم گرما کی سوغات 'آم

پرانے وقتوں کے لوگوں کی دلچسپ تصور اور حکمت کی بدولت، پھلوں کا بادشاہ عام انسان کی غذا بن گیا۔

پاکستان میں اسٹارٹ اپس اب تک ناکام کیوں؟

آجکل یہ فیشن سا بن گیا ہے کہ ہر کوئی یہی کہتا نظر آ رہا ہے کہ اس کے پاس 'اسٹارٹ اپ' ہے-