24 جولائ, 2014 | 25 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

جمہوری تسلسل میں ہی ملک کی بقاء ہے، کائرہ

وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات ، قمر زمان کائرہ ۔ اے پی پی تصویر
وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات ، قمر زمان کائرہ ۔ اے پی پی تصویر

چشتیاں: وفاقی وزیر برائے اطلاعات و نشریات قمر زمان کائرہ نے پیر کے روز کہا ہےکہ جمہوری نظام کے تسلسل میں ہی پاکستان کی بقا ہےاور ہر شخص کو یہ نظام مضبوط بنانے کی کوشش کرنی چاہئے۔

رینالہ خورد پریس کونسل اور چشتیاں بار ایسوسی ایشن کے نئے اراکین کی تقریبِ حلف برداری سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مستقبل کے نگراں سیٹ اپ کا انتخاب صرف سیاسی قوتیں ہی کریں گی۔

کائرہ نے تحریکِ منہاج القرآن کے سربراہ ڈاکٹر طاہرالقادری کی کینیڈا سے واپسی کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ان کے خیالات کا احترام کرے گی اگر وہ  آئین کے تحت ہوں اورجمہوریت اور اس سے وابستہ اداروں کو مضبوط کرتےہوں۔

' علامہ طاہرالقادری کو آئین کے تحت عوامی ووٹ سے تائید حاصل کرنی چاہئے اور کسی کو بھی آئین کی خلاف ورزی کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ ' کائرہ نے کہا۔

انہوں نے کہا کہ پی پی پی حکومت تمام سیاسی جماعتوں کو خوش آمدید کہتی ہے جو ملک میں آئین کے تحت کام کرتے ہوئے جمہوریت کو مضبوط کرتی ہے لیکن کسی کو بھی نظام ڈی ریل کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی کیونکہ یہ بہت قربانیوں کے بعد حاصل ہوا ہے۔

قمر زمان کائرہ نے کہا کہ قوم انتخابات کی تیاری کررہی ہے اور چند لوگ اس موقع پر کنفیوژن پھیلانا چاہتے ہیں۔

کائرہ نے کہا کہ پی ایم ایل نون ہمیشہ الیکشن میں چالیں چلتی ہیں اور اب وہ الیکشن آزادانہ اور شفاف کرانے کے حکومتی عزم سے خوفزدہ ہے۔

صدر کے دو عہدوں کے بارے میں انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ نون کو یہ سمجھنا چاہئے کہ صدر زرداری کا پی پی پی کے شریک چیئرمین کا عہدہ اعزازی ہے۔

اس حصے سے مزید

پی ٹی آئی لانگ مارچ، سرکاری حکمت عملی تیار

تمام ریجنل اور ڈسٹرکٹ افسران کو پی ٹی آئی کے کارکنوں سے نمٹنے کے لیے حکومتی مؤقف اور پالیسی سے آگاہ کر دیا گیا۔

نواز شریف کی سعودی ولی عہد شہزادہ سلمان بن عبدالعزیز سے ملاقات

سعودی عرب مسلم دنیا میں بہت اہم کردار ادا کررہا ہے، وزیراعظم نواز شریف۔

پی آئی اے میں صرف انیس طیارے پرواز کے قابل

اس بات کا انکشاف پی آئی اے کے چیئرمین محمد علی گردیزی نے سینیٹ کی قائمہ کمیٹی کو ایک بریفننگ میں کیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

بلاگ

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

شکایتوں کا بن جو میرا دیس ہے

شکایتی ٹٹو زنده قوم کی نشانی ہوتے ہیں۔ مستقل شکایت کرتے رہنا اب ہماری پہچان بن چکا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-