17 اپريل, 2014 | 16 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

جمہوری تسلسل میں ہی ملک کی بقاء ہے، کائرہ

وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات ، قمر زمان کائرہ ۔ اے پی پی تصویر
وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات ، قمر زمان کائرہ ۔ اے پی پی تصویر

چشتیاں: وفاقی وزیر برائے اطلاعات و نشریات قمر زمان کائرہ نے پیر کے روز کہا ہےکہ جمہوری نظام کے تسلسل میں ہی پاکستان کی بقا ہےاور ہر شخص کو یہ نظام مضبوط بنانے کی کوشش کرنی چاہئے۔

رینالہ خورد پریس کونسل اور چشتیاں بار ایسوسی ایشن کے نئے اراکین کی تقریبِ حلف برداری سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مستقبل کے نگراں سیٹ اپ کا انتخاب صرف سیاسی قوتیں ہی کریں گی۔

کائرہ نے تحریکِ منہاج القرآن کے سربراہ ڈاکٹر طاہرالقادری کی کینیڈا سے واپسی کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ان کے خیالات کا احترام کرے گی اگر وہ  آئین کے تحت ہوں اورجمہوریت اور اس سے وابستہ اداروں کو مضبوط کرتےہوں۔

' علامہ طاہرالقادری کو آئین کے تحت عوامی ووٹ سے تائید حاصل کرنی چاہئے اور کسی کو بھی آئین کی خلاف ورزی کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ ' کائرہ نے کہا۔

انہوں نے کہا کہ پی پی پی حکومت تمام سیاسی جماعتوں کو خوش آمدید کہتی ہے جو ملک میں آئین کے تحت کام کرتے ہوئے جمہوریت کو مضبوط کرتی ہے لیکن کسی کو بھی نظام ڈی ریل کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی کیونکہ یہ بہت قربانیوں کے بعد حاصل ہوا ہے۔

قمر زمان کائرہ نے کہا کہ قوم انتخابات کی تیاری کررہی ہے اور چند لوگ اس موقع پر کنفیوژن پھیلانا چاہتے ہیں۔

کائرہ نے کہا کہ پی ایم ایل نون ہمیشہ الیکشن میں چالیں چلتی ہیں اور اب وہ الیکشن آزادانہ اور شفاف کرانے کے حکومتی عزم سے خوفزدہ ہے۔

صدر کے دو عہدوں کے بارے میں انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ نون کو یہ سمجھنا چاہئے کہ صدر زرداری کا پی پی پی کے شریک چیئرمین کا عہدہ اعزازی ہے۔

اس حصے سے مزید

نواز زرداری کا ملکی سلامتی پر تبادلہ خیال

وزیر اعظم نواز شریف اور سابق صدر آصف زرداری کے درمیان اسلام آباد میں ملاقات، اہم معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اداروں کی نجکاری پر حزب اختلاف کو تشویش

اپوزیشن جماعتوں نے نجکاری سے متعلق سوال کا تفصیلی جواب نہ ملنے پر ایوان بالا سے واک آؤٹ کیا۔

وزیر اعظم نے قومی سلامتی پر اجلاس طلب کر لیا

وفاقی وزراء ،چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف، سروسز چیفس ، ڈائریکٹر جنرل آئی بی، آئی ایس آئی کی بھی شرکت متوقع ہے،ذرائع۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

میڈیا کے چٹخارے

پاکستانی میڈیا کو جتنی زیادہ آزادی ہے اسکی اپروچ اتنی ہی جانبدارانہ ہے، عوام کی پولرائزیشن میں میڈیا کا بہت بڑا ہاتھ ہے

ٹی ٹی پی نہیں تو پھر مذاکرات کیوں؟

عام آدمی کو صرف تحفظ چاہئے اور اگر مذاکرات یہ نہیں دے رہے تو ان کو مزید آگے بڑھانے سے کیا حاصل؟

جادو کا چراغ: نبض کے بھید اور ایک برباد محبت

بوڑھے دانا طبیب نے مختلف ناموں پر بدلتی نبض کو دیکھ کر لڑکی کی پراسرار بیماری کا علاج کیا-

سارے جہاں سے مہنگا - ریویو

فلم میں ایک اچھوتا خیال پیش کیا گیا ہے کہ کس طرح 'جگاڑ' کر کے ایک مڈل کلاس آدمی مہنگائی کا توڑ نکالتا ہے۔