19 ستمبر, 2014 | 23 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

جمہوری تسلسل میں ہی ملک کی بقاء ہے، کائرہ

وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات ، قمر زمان کائرہ ۔ اے پی پی تصویر
وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات ، قمر زمان کائرہ ۔ اے پی پی تصویر

چشتیاں: وفاقی وزیر برائے اطلاعات و نشریات قمر زمان کائرہ نے پیر کے روز کہا ہےکہ جمہوری نظام کے تسلسل میں ہی پاکستان کی بقا ہےاور ہر شخص کو یہ نظام مضبوط بنانے کی کوشش کرنی چاہئے۔

رینالہ خورد پریس کونسل اور چشتیاں بار ایسوسی ایشن کے نئے اراکین کی تقریبِ حلف برداری سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مستقبل کے نگراں سیٹ اپ کا انتخاب صرف سیاسی قوتیں ہی کریں گی۔

کائرہ نے تحریکِ منہاج القرآن کے سربراہ ڈاکٹر طاہرالقادری کی کینیڈا سے واپسی کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ان کے خیالات کا احترام کرے گی اگر وہ  آئین کے تحت ہوں اورجمہوریت اور اس سے وابستہ اداروں کو مضبوط کرتےہوں۔

' علامہ طاہرالقادری کو آئین کے تحت عوامی ووٹ سے تائید حاصل کرنی چاہئے اور کسی کو بھی آئین کی خلاف ورزی کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ ' کائرہ نے کہا۔

انہوں نے کہا کہ پی پی پی حکومت تمام سیاسی جماعتوں کو خوش آمدید کہتی ہے جو ملک میں آئین کے تحت کام کرتے ہوئے جمہوریت کو مضبوط کرتی ہے لیکن کسی کو بھی نظام ڈی ریل کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی کیونکہ یہ بہت قربانیوں کے بعد حاصل ہوا ہے۔

قمر زمان کائرہ نے کہا کہ قوم انتخابات کی تیاری کررہی ہے اور چند لوگ اس موقع پر کنفیوژن پھیلانا چاہتے ہیں۔

کائرہ نے کہا کہ پی ایم ایل نون ہمیشہ الیکشن میں چالیں چلتی ہیں اور اب وہ الیکشن آزادانہ اور شفاف کرانے کے حکومتی عزم سے خوفزدہ ہے۔

صدر کے دو عہدوں کے بارے میں انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ نون کو یہ سمجھنا چاہئے کہ صدر زرداری کا پی پی پی کے شریک چیئرمین کا عہدہ اعزازی ہے۔

اس حصے سے مزید

کسی کو جمہوریت پر کلہاڑا نہیں چلانے دیں گے، وزیراعظم

قومی اسمبلی میں اظہارِ خیال کرتے ہوئے نواز شریف کا کہنا تھا کہ حکومت کسی کو بھی قومی سلامتی سے کھیلنے نہیں دے سکتی ہے۔

شکیل اوج قتل، جامعہ کراچی کے تین اساتذہ سے تفتیش

کلیہ معارف اسلامی کےسربراہ کےخلاف چلائےجانےوالےایس ایم ایس میں مبینہ طورپریہ اساتذہ ملوث تھےجن پر2سال قبل کیس درج ہواتھا

بجلی کے بلوں پر 16 ارب روپے اضافی وصولی کا انکشاف

عوام سے بجلی کے بلوں کی مد میں اگست کے مہینے میں 16ارب روپے کی اضافی وصولی کی گئی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

رودرہیم کا سبق

بچوں پر ہونیوالے جنسی تشدد پر ہماری شرمندگی کی سمت غلط ہے۔ شرم کی بات تو یہ ہے کہ ہم اس کو روکنے کی کوشش نہ کریں-

رکاوٹیں توڑ دو

اشرافیہ تعلیمی نظام کا بیڑہ غرق کرنے پر تلی ہوئی ہے جو خاص طور سے 1970ء کی دہائی کے بعد سے بد سے بدتر ہورہاہے۔

بلاگ

مووی ریویو: دختر -- دلوں کو چُھو لینے والی کہانی

اپنی تمام تر خوبیوں اور کچھ خامیوں کے ساتھ اس فلم کو پاکستانی نکتہ نگاہ سے پیش کیا گیا ہے۔

پھر وہی ڈیموں پر بحث

ڈیموں سے زراعت کے لیے پانی ملتا ہے، پانی پر کنٹرول سے بجلی پیدا کی جاسکتی ہے اور توانائی بحران ختم کیا جاسکتا ہے۔

شاہد آفریدی دوبارہ کپتان، ایک قدم آگے، دو قدم پیچھے

اس بات کی ضمانت کون دے گا کہ ماضی کی طرح وقار یونس اور شاہد آفریدی کے مفادات میں ٹکراؤ پیدا نہیں ہوگا۔

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔