22 جولائ, 2014 | 23 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاک افغان سرحد پر سرگرمیاں بحال

۔۔۔۔فائل فوٹو۔
۔۔۔۔فائل فوٹو۔

اسلام آباد: افغانستان سے واپس آنے والے پاکستانی ڈرائیوروں پر افغان فورسز کے تشدد کے بعد سے بند کی گئی پاک افغان سرحد ہفتے کے روز کھول دی گئی ہے۔

 ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق، پاکستان میں افغان سفیر محمد عمردادوزئی کو دفتر خارجہ اسلام آباد طلب کیا گیا۔

 انہوں نے کہا کہ افغان سفیر پر واضح کیا گیا ہے کہ افغانستان سے آنے والے پاکستانیوں پر تشدد کے واقعات ناقابل قبول ہیں۔

 ترجمان کے مطابق، افغان سفیر نے معاملے کی تحقیقات اور ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کے ساتھ ساتھ ایسے واقعات دوبارہ رونما نہ ہونے کی بھی یقین دہانی کرائی۔

 واضح رہے کہ جمعے کو افغانستان سے واپس آنے والے پاکستانی ڈرائیوروں پر افغان فورسز کے تشدد کے بعد پاکستان نے طورخم سرحد بند کر دی تھی۔

اس حصے سے مزید

عمران خان لوگوں کو خدمت کی طرف راغب کریں، پرویز رشید

یہ وقت لانگ مارچ کا نہیں آئی ڈی پیز کی دیکھ بھال کا ہے، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات۔

شوال میں فضائی حملوں کے دوران کوئی شہری ہلاک نہیں ہوا، سیفران

شمالی وزیرستان طرز کا آپریشن کراچی، لاہور اور اسلام آباد میں بھی شروع کیا جائے گا، عبدالقادر بلوچ۔

'ضرب عضب میں تمام عسکریت پسندوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے'

ضرب عضب میں اس لعنت (عسکریت پسندی) کے خلاف بلا امتیاز کارروائی کی جا رہی ہے، سر تاج عزیز۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

کیا بڑا بہتر ہے؟

ہم اپنی جنوب ایشیائی شناخت سے پیچھا کیوں چھڑانا چاہتے ہیں جو تاریخی اعتبار سے عرب کے مقابلے میں کہیں زیادہ مالامال ہے؟

پاکستان کے عام آدمی کا احوال

پڑھے لکھے نوجوان جو پاکستان کے چھوٹے شہروں میں رہتے ہیں وہ سب سے زیادہ مشکلات کا شکار ہیں

بلاگ

مووی ریویو: پیزا - پلاٹ اچھا ہے

اگرچہ سکرین پلے کافی کمزور ہے مگر فلم کی کہانی میں آنے والے موڑ دیکھنے والوں کی دلچسپی برقرار رکھتے ہیں۔

جہادی برائے فروخت

اگر اب بھی سمجھ نہ آئی تو پاکستان کا حشر بھی عراق و شام سے مختلف نہیں ہوگا۔

تحریکِ انصاف سے معذرت کے ساتھ

عمران خان کو ملکی اداروں پر تو اعتماد نہیں، تو پھر کیا پی ٹی آئ افغانستان کی طرح "انٹرنیشنل آڈٹ" چاہتی ہے؟

قومی شناختی کارڈ اور گونگا مصلّی -- 3

پورے پنجاب کے دیہی علاقوں میں وارداتوں کے بعد شک کی بنا پر سب سے زیادہ پکڑی جانے والی قوم مصلّیوں کی ہے۔