30 ستمبر, 2014 | 4 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاک افغان سرحد پر سرگرمیاں بحال

۔۔۔۔فائل فوٹو۔
۔۔۔۔فائل فوٹو۔

اسلام آباد: افغانستان سے واپس آنے والے پاکستانی ڈرائیوروں پر افغان فورسز کے تشدد کے بعد سے بند کی گئی پاک افغان سرحد ہفتے کے روز کھول دی گئی ہے۔

 ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق، پاکستان میں افغان سفیر محمد عمردادوزئی کو دفتر خارجہ اسلام آباد طلب کیا گیا۔

 انہوں نے کہا کہ افغان سفیر پر واضح کیا گیا ہے کہ افغانستان سے آنے والے پاکستانیوں پر تشدد کے واقعات ناقابل قبول ہیں۔

 ترجمان کے مطابق، افغان سفیر نے معاملے کی تحقیقات اور ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کے ساتھ ساتھ ایسے واقعات دوبارہ رونما نہ ہونے کی بھی یقین دہانی کرائی۔

 واضح رہے کہ جمعے کو افغانستان سے واپس آنے والے پاکستانی ڈرائیوروں پر افغان فورسز کے تشدد کے بعد پاکستان نے طورخم سرحد بند کر دی تھی۔

اس حصے سے مزید

عیدالاضحیٰ پر تین روزہ تعطیلات کا اعلان

وزراتِ داخلہ کے مطابق چھ سے آٹھ اکتوبر تک تعطیلات کے دوران تمام سرکاری اور غیر سرکاری ادارے اور دفاتر بند رہیں گے۔

آخر کیا پایا؟ 'انقلاب' کی خواہش لیے دھرنے والوں کی واپسی

پی اے ٹی کے کارکنان دھرنے سے گھر واپسی پر جہاں خوش ہیں، وہیں یہ بھی سوچ رہے ہیں کہ آخر انہوں نے کیا حاصل کیا۔

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں دو روپے 94 پیسے کی کمی

ذرائع کا کہنا ہے کہ پیٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اطلاع آج رات بارہ بجے سے ہوگا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

فائرنگ کی زد میں

پولیس کی قیادت کو ادراک ہوا ہے کہ اسے صاحب اختیار لوگوں کے غیر قانونی مطالبات کو نا کہنے کی ہمت دکھانے کی ضرورت ہے.

پالیسی سازی کا فن

پنجاب میں باربارآنے والے سیلاب نے فیصلہ سازی اور پالیسی سازی کے درمیان خلا کو بےنقاب کردیا ہے۔

بلاگ

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟

مووی ریویو: دی پرنس — انسپائر کرنے میں ناکام

مجموعی طور پر روبوٹ جیسی پرفارمنسز اور کمزور پلاٹ کی وجہ سے یہ فلم ناظرین کی دلچسپی قائم رکھنے میں ناکام رہی-

مخلص سیاستدانوں کے سچے بیانات

جب سے دھرنے جاری ہیں، تب سے ہم نے سیاستدانوں سے طرح طرح کی باتیں سنی ہیں جن میں سے کچھ پیش خدمت ہیں۔