23 ستمبر, 2014 | 27 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

'جمہوریت کو پٹڑی سے اتارنے کی اجازت نہیں دینگے'

وزیر اعظم پاکستان راجہ پرویز اشرف۔ فائل فوٹو رائٹرز۔۔۔
وزیر اعظم پاکستان راجہ پرویز اشرف۔ فائل فوٹو رائٹرز۔۔۔

اسلام آباد: وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ کسی کو ملک میں جمہوریت کو پٹڑی سے اتارنے کی اجازت نہیں دی جائے گی جبکہ پارلیمانی نظام کو مزید مستحکم بنایا جائے گا۔

انہوں نے ان خیالات کا اظہار بدھ کو وفاقی کابینہ کے اجلاس میں ابتدائی کلمات ادا کرتے ہوئے کیا۔

وزیراعظم نے کہا کہ قوم کو انتہا پسندی ، شدت پسندی اور عدم برداشت کے چیلنج درپیش ہیں جو بہت عرصہ سے ہمارے لئے انتہائی تشویش کا باعث ہیں۔

وزیراعظم نے نئے سال کے آغاز پر دہشت گردی اور دیگر برائیوں کے ساتھ نمٹنے کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے دہشت گردی کو کچلنے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لانے کا عزم کررکھا ہے یہی وجہ ہے کہ دہشت گردوں نے حکومت کو غیرمستحکم کرنے کیلئے اپنے حملوں میں اضافہ کیا ہے۔

وزیراعظم نے بشیراحمد بلور، 21 نیوی اہلکاروں، خیبرپختونخواہ اور سندھ میں پولیو کے قطرے پلانے والے کارکنوں کی ہلاکت، باچا خان ایئرپورٹ پشاور پرحملے، مستونگ میں حالیہ دھماکہ میں انیس زائرین کی ہلاکت اورکراچی میں دھماکے سے چار افراد کے ہلاک ہونے پر دلی رنج وغم کا اظہارکرتے ہوئے ان واقعات کی پرزور مذمت کی۔

انہوں نے کہا کہ دنیا کو معلوم ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہمارے تیس ہزار سے زائد شہری اور مسلح افواج کے پانچ ہزار سے زائد اہلکارہلاک ہوئے جبکہ اربوں ڈالرکا نقصان اٹھانا پڑا۔

انکے مطابق، غربت اور ناخواندگی دہشت گردی او انتہا پسندی کے بنیادی اسباب ہیں، بے روزگار نوجوانوں کو مفید روزگار فراہم کرنے سے انہیں دہشت گردوں کے چنگل میں پھنسنے سے روکنے میں مدد ملے گی۔

راجہ پرویزاشرف نے کہا کہ اتحادی حکومت اپنی مدت پوری کرنے جارہی ہے اور انتخابات کی طرف بڑھ رہی ہے، حکومت انتخابات کو ’’امانت‘‘ تصور کرتی ہے جنہیں آئین کے مطابق منعقد کیا جائے گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ پی پی پی کی اتحادی حکومت کسی کوملک میں جمہوریت کو پٹڑی سے اتارنے نہیں دے گی کیونکہ اس کیلئے بے شمار قربانیاں دی گئی ہیں، پارلیمانی نظام کو مزید مستحکم کیا جائے گا۔

اس حصے سے مزید

وزیراعظم کے خلاف مقدمے کا عدالتی حکم سپریم کورٹ میں چیلنج

اٹارنی جنرل نے اپنے تحریری بیان میں کہا ہے کہ انتظامیہ کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کا حکم غیر قانونی ہے۔

طاہر القادری کا دھرنے کے شرکاءکو واپسی کی اجازت دینے سے انکار

طاہر القادری نے پیر کو دھرنے میں شریک اپنے حامیوں کو گھر واپسی کی اجازت دینے سے انکار کردیا۔

الیکشن کمیشن نے انتخابی خامیوں کا ذمہ دار آر اوز کو قرار دے دیا

آر اوز قانونی طور پر پولنگ اسٹیشنز کو منتخب کرنے کے ذمہ دار ہوتے ہیں مگر انہوں نے یہ ٹاسک خود مکمل نہیں کیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

سوشلزم کیوں؟

اگر ہم مسلسل بحث کرسکتے ہیں کہ جمہوریت کیوں نہیں، شریعت کیوں نہیں، تو اس سوال پر بھی بحث ضروری ہے کہ سوشلزم کیوں نہیں؟

مڑی تڑی باتیں اور مقاصد

چیزوں کو اپنی مرضی کے مطابق توڑ مروڑ کر پیش کرنے، اور غیر آئینی اقدامات سے پاکستان کے مسائل میں صرف اضافہ ہی ہوگا۔

بلاگ

مووی ریویو: 'خوبصورت' - فواد اور سونم کی خوبصورت کہانی

اپنے مزاحیہ خیز کرداروں کے باوجود فلم شوخ اور رومانٹک ڈرامہ ہے، جسے آپ باآسانی ڈزنی کی طلسماتی کہانی کہہ سکتے ہیں-

کراچی میں بجلی کا مسئلہ اور نیپرا کا منفی کردار

اپنی نااہلی کی وجہ سے نیپرا نے بیرونی سرمایہ کاروں کو مشکل میں ڈال رکھا ہے، جن میں سے کچھ تو کام شروع کرنے کو تیار ہیں۔

خواب دو انقلابیوں کے

ایک انقلابی خود کو وزیر اعظم بنتا دیکھ رہا ہے تو دوسرا صدارتی محل میں مریدوں سے ہاتھ پر بوسے کروانے کے خواب دیکھ رہا ہے۔

کوئی ان سے نہیں کہتا۔۔۔

ریڈ زون کے محفوظ باسیو! ہمیں دہشت گردوں، ڈاکوؤں، چوروں، اغواکاروں، تمہاری افسر شاہی اور پولیس سے بچانے والا کوئی نہیں۔