23 اگست, 2014 | 26 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

'جمہوریت کو پٹڑی سے اتارنے کی اجازت نہیں دینگے'

وزیر اعظم پاکستان راجہ پرویز اشرف۔ فائل فوٹو رائٹرز۔۔۔
وزیر اعظم پاکستان راجہ پرویز اشرف۔ فائل فوٹو رائٹرز۔۔۔

اسلام آباد: وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ کسی کو ملک میں جمہوریت کو پٹڑی سے اتارنے کی اجازت نہیں دی جائے گی جبکہ پارلیمانی نظام کو مزید مستحکم بنایا جائے گا۔

انہوں نے ان خیالات کا اظہار بدھ کو وفاقی کابینہ کے اجلاس میں ابتدائی کلمات ادا کرتے ہوئے کیا۔

وزیراعظم نے کہا کہ قوم کو انتہا پسندی ، شدت پسندی اور عدم برداشت کے چیلنج درپیش ہیں جو بہت عرصہ سے ہمارے لئے انتہائی تشویش کا باعث ہیں۔

وزیراعظم نے نئے سال کے آغاز پر دہشت گردی اور دیگر برائیوں کے ساتھ نمٹنے کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے دہشت گردی کو کچلنے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لانے کا عزم کررکھا ہے یہی وجہ ہے کہ دہشت گردوں نے حکومت کو غیرمستحکم کرنے کیلئے اپنے حملوں میں اضافہ کیا ہے۔

وزیراعظم نے بشیراحمد بلور، 21 نیوی اہلکاروں، خیبرپختونخواہ اور سندھ میں پولیو کے قطرے پلانے والے کارکنوں کی ہلاکت، باچا خان ایئرپورٹ پشاور پرحملے، مستونگ میں حالیہ دھماکہ میں انیس زائرین کی ہلاکت اورکراچی میں دھماکے سے چار افراد کے ہلاک ہونے پر دلی رنج وغم کا اظہارکرتے ہوئے ان واقعات کی پرزور مذمت کی۔

انہوں نے کہا کہ دنیا کو معلوم ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہمارے تیس ہزار سے زائد شہری اور مسلح افواج کے پانچ ہزار سے زائد اہلکارہلاک ہوئے جبکہ اربوں ڈالرکا نقصان اٹھانا پڑا۔

انکے مطابق، غربت اور ناخواندگی دہشت گردی او انتہا پسندی کے بنیادی اسباب ہیں، بے روزگار نوجوانوں کو مفید روزگار فراہم کرنے سے انہیں دہشت گردوں کے چنگل میں پھنسنے سے روکنے میں مدد ملے گی۔

راجہ پرویزاشرف نے کہا کہ اتحادی حکومت اپنی مدت پوری کرنے جارہی ہے اور انتخابات کی طرف بڑھ رہی ہے، حکومت انتخابات کو ’’امانت‘‘ تصور کرتی ہے جنہیں آئین کے مطابق منعقد کیا جائے گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ پی پی پی کی اتحادی حکومت کسی کوملک میں جمہوریت کو پٹڑی سے اتارنے نہیں دے گی کیونکہ اس کیلئے بے شمار قربانیاں دی گئی ہیں، پارلیمانی نظام کو مزید مستحکم کیا جائے گا۔

اس حصے سے مزید

اسلام آباد دھرنے: حکومت اوراحتجاجی جماعتوں میں مذاکرات

ابھی تک یہ واضح نہیں ہوسکا کہ تحریک انصاف اور عوامی تحریک کے دھرنوں کے باعث موجودہ سیاسی صورتحال کیا رخ اختیار کرے گی۔

ایل او سی خلاف ورزی: ہندوستان کو ڈی جی ایم اوز کی ملاقات کی تجویز

قومی سلامتی اور خارجہ امور کے مشیر سرتاج عزیز نے کہا کہ اگر ہندوستان کے پاس سرحد پر دراندازی کے ثبوت ہیں تو پیش کرے۔

'پی ٹی آئی کے استعفے راتوں رات قبول نہیں ہوسکتے'

اسپیکر قومی اسمبلی نے کہا ہے کہ یہ استعفے عجلت میں قبول نہیں کیے جائیں گے، اس حوالے سے طریقہ کار پر عمل کیا جائے گا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ایک گھریلوجھگڑا

افسوس ہے کہ پی ایم ایل اور پی ٹی آئی بے حسی سے ایک دوسرے سے لڑ رہے ہیں، جسکی وجہ سے فوجی اسٹبلیشمنٹ حرکت میں آرہی ہے۔

کچھ جوابات

وزیر اعظم کا اعلان کردہ کمیشن مسئلے سلجھانے کے بجائے زیادہ الجھا دے گا۔

بلاگ

پکوان کہانی : شاہی قورمہ

جو اکبر اعظم کے شاہی باورچی خانے کی نگرانی میں راجپوت خانساماؤں کے تجربات کا نتیجہ ہے۔

دفاعی حکمت عملی کے نقصانات

مصباح کے دفاعی انداز کے اثرات ہمارے جارحانہ انداز رکھنے والے بیٹسمینوں پر بھی پڑے ہیں

پاکستان ایک "ساس" کی نظر سے

68 سالہ جین والر کو پاکستان بہت پسند آیا، اتنا زیادہ کہ بقول ان کے مجھے پاکستان سے محبت ہوگئی ہے۔

مووی ریویو: گارڈینز آف گیلیکسی ایک ویژول ٹریٹ ہے

جو یادوں کے ایسے دور میں لے جاتی ہے جب ایکشن کے بجائے مزاح کسی کامک کا سرمایہ اور اسے بیان کرنے کا ذریعہ ہوا کرتا تھا۔