03 ستمبر, 2014 | 7 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

نئی دہلی: ریپ کیس کی باقاعدہ سماعت شروع

دہلی کی عدالت کا منظر جہاں دہلی میں ذیادتی کا شکار بننے والی لڑکی کا مقدمہ چل رہا ہے۔ رائٹرز تصویر
دہلی کی عدالت کا منظر جہاں دہلی میں ذیادتی کا شکار بننے والی لڑکی کا مقدمہ چل رہا ہے۔ رائٹرز تصویر

نئی دہلی: ہندوستان میں نئی دہلی کی عدالت نے طالبہ سے زیادتی کیس کی باقاعدہ سماعت شروع کر دی۔ دہلی پولیس کے مطابق 5 ملزمان کو عدالت میں پیش کیا گیا ہے۔

 دوران سماعت ملزمان پر فرد جرم عائد کی جائے گی۔ چھٹے ملزم کی عمر 18 سال سے کم ہے اس لئے اس کیخلاف مقدمہ ممکنہ طور پر بچوں کی عدالت میں چلایا جائے گا۔

 و اضح رہے کہ ملزمان نے چلتی بس میں طالبہ سے اجتماعی زیادتی کی تھی اور اسے تشدد کا نشانہ بھی بنایا تھا۔ متاثرہ لڑکی کئی روز تک زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا رہنے کے بعد سنگاپور کے ہسپتال میں چل بسی تھی۔

 دہلی کے وکلاء نے ملزمان کی پیروی سے انکار کر دیا ہے۔ اب عدالت ان کیلئے سرکاری وکیل مقرر کرے گی اور جرم ثابت ہونے پر ملزمان کو سزائے موت بھی سنائی جا سکتی ہے۔

اس حصے سے مزید

ہندوستانی ریاست میں جانوروں کی قربانی پر پابندی عائد

ہماچل پردیش میں ہرسال ہندو خداؤں کوخوش کرنےکیلئےبکریوں اوربھیڑوں کوقربان کرتے ہیں جسے عدالت نے 'وحشیانہ' قرار دیا ہے۔

پاکستان، ہندوستان تنازعات بات چیت سے حل کریں، اقوام متحدہ

اقوام متحدہ کے سربراہ بان کی مون نے موجودہ کشیدہ صورتحال میں دونوں ممالک کے سربراہان کو مذاکرات کا مشورہ دیا ہے۔

مودی جرائم میں ملوث وزراء نہ چنیں، سپریم کورٹ

ہندوستان میں کرپٹ وزراء کے انتخاب کی تاریخ بہت پرانی ہے اور زیادہ ترکو ذات پات یا مذہب کی بنیاد پر منتخب کیا جا تا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماڈل ٹاؤن کیس: کچھ حماقتیں

حکمرانوں کے منع کرنے پر پولیس کی جانب سے مقتولین کی ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کی وجہ سے معاملہ مزید خراب ہوا۔

بیوروکریٹس کی یونین

ذاتی مفادات کے لیے چوری چھپے سیاسی ہونے سے زیادہ بہتر ہے کہ ریاست کے وسیع تر مفاد کے لیے کھلے عام سیاسی ہوا جائے۔

بلاگ

ڈرامہ ریویو: 'لا'...الجھتے رشتوں کی کہانی

ڈرامہ پرفیکٹ نہیں بھی تھا تو بھی یہ ان ڈراموں میں سے ایک ضرور تھا جسے دیکھ کر بیزاری کا احساس نہیں ہوتا۔

مووی ریویو : 'راجہ نٹور لال' سٹیریو ٹائپنگ کا شکار ہوگئی

یہ فلم نہ تو مزاح پر پوری اترتی ہے اور نہ ہی اس میں اتنا تھرلر ہے جو اسے ذہن میں نقش کر دے۔

سستا خون: براۓ انقلاب

"انقلاب" سیاست چمکانے کے لیے ایک خوشنما لفظ بن چکا ہے، اور اسے مزید چمکانے کے لیے کارکنوں کا سستا خون بھی دستیاب ہے۔

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔