22 جولائ, 2014 | 23 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

مہمند ایجنسی میں دھماکہ، دو سیکیورٹی اہلکار ہلاک

البو سیکیورٹی چیک پوسٹ کے قریب سڑکے کنارے نصب بم دھماکے کے نتیجے میں ایک اہلکار زخمی بھی ہوا۔ فائل فوٹو۔
البو سیکیورٹی چیک پوسٹ کے قریب سڑکے کنارے نصب بم دھماکے کے نتیجے میں ایک اہلکار زخمی بھی ہوا۔ فائل فوٹو۔

پشاور: پاک افغان سرحد کے قریب مہمند ایجنسی میں پیر کو دھماکے کے نتیجے میں کم از کم دو سیکیورٹی اہلکار ہلاک ہوگئے۔

 حکام کے مطابق، البو سیکیورٹی چیک پوسٹ کے قریب سڑکے کنارے نصب بم دھماکے کے نتیجے میں ایک اہلکار زخمی بھی ہوا۔

 اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹ غازی نواز نے دو اہلکاروں کی ہلاکت اور ایک کے زخمی ہونے کی تصدیق کی۔

 انکے مطابق، بم کو تحصیل خواہ زئی کے علاقے مرگانو جلہ کے قریب نصب کیا گیا تھا۔

 مہمند ایجنسی پاک افغان سرحد کے قریب پاکستان کی سات قبائیلی ایجنسیوں میں سے ایک ہے جسے طالبان اور دیگر عسکریت پسندوں کا گڑھ تصور کیا جاتا ہے۔

اس حصے سے مزید

امریکی ڈرون حملے میں چھ القاعدہ کمانڈرز ہلاک ہوئے، رپورٹ

القاعدہ کی فتح کمیٹی کے سربراہ کے مطابق 10 جولائی کے حملے میں ہلاک ہونے والے کمانڈروں کا تعلق حافظ گل بہاد گروپ سے تھا۔

آئی ڈی پیز کے لیے ہر ممکن اقدامات کیے گئے: پاک فوج

جی او سی میجر جنرل اختر جمیل راؤ نے کہا کہ چھ لاکھ کے قریب متاثرہ افراد میں سے کوئی ایک بھی بھوکا نہیں سویا۔

فلسطین پر عالمِ اسلام کی خاموشی مجرمانہ ہے: سراج الحق

جماعت اسلامی کے سربراہ نے کہا کہ وہ نواز شریف سمیت مسلم ملکوں کے سربراہوں کو اس سلسلے میں خط لکھ رہے ہیں۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
قلم کار

کیا بڑا بہتر ہے؟

ہم اپنی جنوب ایشیائی شناخت سے پیچھا کیوں چھڑانا چاہتے ہیں جو تاریخی اعتبار سے عرب کے مقابلے میں کہیں زیادہ مالامال ہے؟

پاکستان کے عام آدمی کا احوال

پڑھے لکھے نوجوان جو پاکستان کے چھوٹے شہروں میں رہتے ہیں وہ سب سے زیادہ مشکلات کا شکار ہیں

بلاگ

جہادی برائے فروخت

اگر اب بھی سمجھ نہ آئی تو پاکستان کا حشر بھی عراق و شام سے مختلف نہیں ہوگا۔

تحریکِ انصاف سے معزرت کے ساتھ

عمران خان کو ملکی اداروں پر تو اعتماد نہیں، تو پھر کیا پی ٹی آئ افغانستان کی طرح "انٹرنیشنل آڈٹ" چاہتی ہے؟

قومی شناختی کارڈ اور گونگا مصلّی -- 3

پورے پنجاب کے دیہی علاقوں میں وارداتوں کے بعد شک کی بنا پر سب سے زیادہ پکڑی جانے والی قوم مصلّیوں کی ہے۔

ہے کوئی مدد کرنے والا؟

جس ملک میں انسانوں کی عزت نہ ہو، وہاں دوسرے مسائل پر وقت ضائع نہیں تو اور کیا کیا جا رہا ہے!