01 اکتوبر, 2014 | 5 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

'شام میں بھوک سے بے حال دس لاکھ افراد کی مدد نہیں کرسکتے'

فوٹو اے پی۔۔۔

جنیوا: عالمی ادارہ خوراک(ورلڈ فوڈ پروگرام) نے منگل کو کہا ہے کہ شام میں سیکیورٹی کی خراب صورتحال کے باعث وہ وہاں بھوک سے بے حال تقریباً دس لاکھ لوگوں کی مدد نہیں کر سکتے۔

ادارے کی ترجمان نے کہا کہ الیسا بیتھ بائرس نے بتایا کہ ایجنسی نے رواں ماہ شام کے 15 سے 25 لاکھ افراد کی مدد کرنیکا ارادہ کیا تھا جن کے بارے میں سیرین عرب ریڈ کریسنٹ کا کہنا ہے کہ انہیں غذائی امداد کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیکیورٹی کی خراب  صرتحال اور ایجنسی کی جانب سے شام کی ترتوس بندرگاہ تک رسائی میں ناکامی کے باعث ہم ملک کے شدید متاثرہ علاقوں میں رہائش پذیر لوگوں کی بڑی تعداد کی مدد نہیں کر سکیں گے۔

بائرس نے کہا کہ ہمارا اہم پارٹنر ریڈ کریسنٹ اس پر انتہائی دباؤ ہے اور اس صورتحال میں مزید کام کرنا اس کی استعداد سے باہر ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ شام کے شہروں حمص، الیپو، ترتوس اور کامسلی میں بڑھتے ہوئے خطرات کے پیش نظر ہم نے اپنے عملے کو وقتی طور پر وہاں کے دفاتر سے بلا لیا ہے۔

شام میں جاری بحران کا آغاز مارچ 2011 یں پرامن مظاہروں سے ہوا تھا تاہم بعد میں اس نے خانہ جنگی کی کی شکل اختیار کر لی تھی۔ اقوام متحدہ کی حال ہی میں جاری کی گئی رہورٹ کے مطابق مارچ 2011 سے 2012 کے اختتام تک اس تنازع میں اب 60 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

اس حصے سے مزید

اسرائیل:غزہ جارحیت میں حصہ لینےوالےفوجیوں کی خودکشی

فوجی گولانی بریگیڈ کے افسران 50روزہ جنگ کے دوران وہ کارروائی کاحصہ تھے مگر اس کے سے نفسیاتی مسائل کا شکار ہوگئے تھے۔

سعودی لڑکیوں کے والدین کے خلاف مقدمات

ان لڑکیوں کے والدین نے انہیں اپنی مرضی سے شادی کا حق دینے سے انکار کردیا تھا، اس طرح کے 383 مقدمات دائر کیے جاچکے ہیں۔

سعودی عرب: گیارہ سال کی بچی کی گلوکاری پر تنقید

سرکاری تقریب میں قومی نغمہ گانے پر بعض نے اس بچی کو بے حیا قراردیا، جبکہ بہت سے لوگوں نے ایسے ناقدین کو انتہاء پسند کہا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

فائرنگ کی زد میں

پولیس کی قیادت کو ادراک ہوا ہے کہ اسے صاحب اختیار لوگوں کے غیر قانونی مطالبات کو نا کہنے کی ہمت دکھانے کی ضرورت ہے.

پالیسی سازی کا فن

پنجاب میں باربارآنے والے سیلاب نے فیصلہ سازی اور پالیسی سازی کے درمیان خلا کو بےنقاب کردیا ہے۔

بلاگ

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟

مووی ریویو: دی پرنس — انسپائر کرنے میں ناکام

مجموعی طور پر روبوٹ جیسی پرفارمنسز اور کمزور پلاٹ کی وجہ سے یہ فلم ناظرین کی دلچسپی قائم رکھنے میں ناکام رہی-

مخلص سیاستدانوں کے سچے بیانات

جب سے دھرنے جاری ہیں، تب سے ہم نے سیاستدانوں سے طرح طرح کی باتیں سنی ہیں جن میں سے کچھ پیش خدمت ہیں۔