24 ستمبر, 2014 | 28 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

نواز شریف کے بھائی عباس شریف انتقال کر گئے

۔۔۔۔فائل فوٹو۔
۔۔۔۔فائل فوٹو۔

لاہور: مسلم لیگ ن کے صدر میاں نواز شریف کے چھوٹے بھائی عباس شریف لاہور میں انتقال کر گئے۔

 شریف فیملی ذرائع کے مطابق میاں عباس شریف کو گھر کرنٹ لگنے پر شریف میڈیکل کمپلیکس لے جایا گیا تاہم فوری طبی علاج کے باوجود وہ انتقال کرگئے۔

 میاں عباس شریف کی عمر اٹھاون برس تھی۔ انہوں نے پسماندگان میں بیوہ ،دو بیٹیاں اور دو بیٹے چھوڑے ہیں

 عباس شریف انیس سو ترانوے میں مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر قومی اسمبلی کے رکن بھی منتخب ہوئے تھے۔ مرحوم  کی نماز جنازہ شام سات بجے رائے ونڈ میں ادا کی جائے گی۔

اس حصے سے مزید

ملتان: این اے 149 کے لیے بلاول نے امیدوار نامزد کردیا

اس اعلان سے ان افواہوں کی تردید ہو گئی جن میں کہا جارہا تھا کہ پی پی پی جاوید ہاشمی کے مقابل اپنا امیدوار نہیں لائے گی۔

گورنر پنجاب کا شریف برادران سے اختلافات کی تردید

میں مستعفی نہیں ہورہا، اس حوالے سے رپورٹس میں کوئی صداقت نہیں ہے کہ لندن سے واپسی پر میں استعفیٰ دے دوں گا۔

راولپنڈی: مذہبی پیشوا کا قتل، فرقہ وارانہ فسادات کے زخم پھر تازہ

اس قتل کے ردّعمل میں ہجوم نے ایک امام بارگاہ کو نذرِ آتش کردیا، پولیس مبینہ طور پر اس واقعے کے دو گھنٹے بعد پہنچی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

سوشلزم کیوں؟

اگر ہم مسلسل بحث کرسکتے ہیں کہ جمہوریت کیوں نہیں، شریعت کیوں نہیں، تو اس سوال پر بھی بحث ضروری ہے کہ سوشلزم کیوں نہیں؟

مڑی تڑی باتیں اور مقاصد

چیزوں کو اپنی مرضی کے مطابق توڑ مروڑ کر پیش کرنے، اور غیر آئینی اقدامات سے پاکستان کے مسائل میں صرف اضافہ ہی ہوگا۔

بلاگ

مووی ریویو: 'خوبصورت' - فواد اور سونم کی خوبصورت کہانی

اپنے پُر مزاح کرداروں کے باوجود فلم شوخ اور رومانٹک ڈرامہ ہے، جسے آپ باآسانی ڈزنی کی طلسماتی کہانی کہہ سکتے ہیں-

کراچی میں بجلی کا مسئلہ اور نیپرا کا منفی کردار

اپنی نااہلی کی وجہ سے نیپرا نے بیرونی سرمایہ کاروں کو مشکل میں ڈال رکھا ہے، جن میں سے کچھ تو کام شروع کرنے کو تیار ہیں۔

خواب دو انقلابیوں کے

ایک انقلابی خود کو وزیر اعظم بنتا دیکھ رہا ہے تو دوسرا صدارتی محل میں مریدوں سے ہاتھ پر بوسے کروانے کے خواب دیکھ رہا ہے۔

کوئی ان سے نہیں کہتا۔۔۔

ریڈ زون کے محفوظ باسیو! ہمیں دہشت گردوں، ڈاکوؤں، چوروں، اغواکاروں، تمہاری افسر شاہی اور پولیس سے بچانے والا کوئی نہیں۔