20 ستمبر, 2014 | 24 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاکستان کا لگاتار سرحدی خلاف ورزیوں پر احتجاج

لائن آف کنٹرول پر ایک ہندوستانی فوجی حفاظت پر معمور ہے۔ رائٹرز فوٹو۔
لائن آف کنٹرول پر ایک ہندوستانی فوجی حفاظت پر معمور ہے۔ رائٹرز فوٹو۔

اسلام آباد: پاکستان نے جمعے کو ہندوستانی سفیر کو طلب کرتے ہوئے ہندوستان کی جانب سے دوسری مرتبہ سرحدی خلاف ورزی کرنے پر احتجاج کیا جس کے نتیجے میں ایک اور پاکستانی فوجی کی ہلاکت ہوئی۔

 دفتر خارجہ کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق، سیکرٹری خارجہ جلیل عباس جیلانی نے لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر فائر بندی معاہدے کی خلاف ورزیوں پر ایک احتجاجی مراسلہ ہائی کمشنر کے حوالے کیا۔

 مراسلے میں پاکستان نے ناقابل قبول، بلا اشتعال اور بار بار ہونے والے حملوں کی شدید مذمت کی۔

 بیان کے مطابق، پاکستان نے ہندوستانی فوج کی جانب سے بار بار ایل او سی کی خلاف ورزی کے واقعات کی اچھی طرح جانچ پڑتال کرنے کی درخواست کی ہے۔

 پاکستان کے مطابق، جمعرات کو ہندوستانی فوج نے ایک اور پاکستانی فوجی کو ایل او سی پر ہلاک کردیا تھا۔

 گزشتہ پانچ روز کے دوران ایل او سی پر فائرنگ کے تین واقعات رونما ہوچکے ہیں جن میں چار فوجی ہلاک ہوئے ہیں جبکہ پاکستان اور ہندوستان دونوں نے ایک دوسرے کے الزامات کی تردید کی ہے۔

 ہندوستانی فوج کے ایک ترجمان نے کہا تھا کہ فائرنگ پاکستان نے کی تھی اور ہندوستانی سپاہیوں کی جانب سے اسے پسپا کردیا گیا۔

 واضح رہے کہ 2003 میں دونوں ممالک کی جنگ بندی کے بعد لائن آف کنٹرول پر فائرنگ اور ہلاکتوں کا یہ سب سے بڑا واقعہ ہے۔

اس حصے سے مزید

'دھرنوں کے خلاف مذمتی قرارداد زرداری کی منظوری کے بعد پیش ہوئی'

پیپلزپارٹی کی جانب سے یہ اصرار کیا گیا کہ وہ اس کی پارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری سے منظوری لیں گے۔

کسی کو جمہوریت پر کلہاڑا نہیں چلانے دیں گے، وزیراعظم

قومی اسمبلی میں اظہارِ خیال کرتے ہوئے نواز شریف کا کہنا تھا کہ حکومت کسی کو بھی قومی سلامتی سے کھیلنے نہیں دے سکتی ہے۔

انتخابات میں کراچی سے خیبر تک دھاندلی ہوئی، بلاول بھٹو زرداری

پیپلزپارٹی بھی 2013 کے انتخابات میں دھاندلی کا ہدف بنی مگر ہم نے جمہوریت کو جاری رکھنے کے لیے نتائج کو قبول کیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

رودرہیم کا سبق

بچوں پر ہونیوالے جنسی تشدد پر ہماری شرمندگی کی سمت غلط ہے۔ شرم کی بات تو یہ ہے کہ ہم اس کو روکنے کی کوشش نہ کریں-

رکاوٹیں توڑ دو

اشرافیہ تعلیمی نظام کا بیڑہ غرق کرنے پر تلی ہوئی ہے جو خاص طور سے 1970ء کی دہائی کے بعد سے بد سے بدتر ہورہاہے۔

بلاگ

مووی ریویو: دختر -- دلوں کو چُھو لینے والی کہانی

اپنی تمام تر خوبیوں اور کچھ خامیوں کے ساتھ اس فلم کو پاکستانی نکتہ نگاہ سے پیش کیا گیا ہے۔

پھر وہی ڈیموں پر بحث

ڈیموں سے زراعت کے لیے پانی ملتا ہے، پانی پر کنٹرول سے بجلی پیدا کی جاسکتی ہے اور توانائی بحران ختم کیا جاسکتا ہے۔

شاہد آفریدی دوبارہ کپتان، ایک قدم آگے، دو قدم پیچھے

اس بات کی ضمانت کون دے گا کہ ماضی کی طرح وقار یونس اور شاہد آفریدی کے مفادات میں ٹکراؤ پیدا نہیں ہوگا۔

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔