02 اکتوبر, 2014 | 6 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

طاہرالقادری لانگ مارچ کیلئے روانہ

بارہ جنوری دوہزار تیرہ کو ڈاکٹر طاہرالقادری اپنے گھر سے باہر آرہے ہیں۔ اے پی تٓصویر
بارہ جنوری دوہزار تیرہ کو ڈاکٹر طاہرالقادری اپنے گھر سے باہر آرہے ہیں۔ اے پی تٓصویر

لاہور: تحریک منہاج القرآن کے سربراہ ، علامہ طاہرالقادری کی جانب سے اعلان کئے جانے والے لانگ مارچ کا آغاز ہوگیا ہے اور وہ ماڈل ٹاؤن سے اسلام آباد کی سمت گامزن ہے۔

 ڈان نیوز کے مطابق اپنے کارواں کے چلنے سے قبل ڈاکٹر قادری نے میڈیا نمائیندوں سے گفتگو کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ ان کے اسلام آباد پہنچنے سے قبل بلوچستان حکومت کو برطرف کردیا جائے۔

انہوں نے اس لانگ مارچ کو ' مارچ برائے جمہوریت' قرار دیا اور بتایا کہ تمام ٹرانسپورٹرز کو کارروان میں شرکت کے لائیسنس اور اجازت نامے نہیں دے گئے، اسلئے اب وہ بغیر اجازت اسلام آباد کی جانب بڑھیں۔

طاہرالقادری لانگ مارچ میں شرکت کیلئے خصوصی طور پر تیارکردہ بلٹ پروف ٹرک میں سفر کررہے ہیں جس میں تمام بنیادی سہولیات موجود ہیں۔

ان کے مطابق، لانگ مارچ سب سے پہلے داتا دربار پر رکے گا اور پھر وہاں سے آگے کی جانب روانہ ہوگا۔

اس حصے سے مزید

وزيراعظم نااہلی کيس:سپريم کورٹ کالارجربينچ بنانےکی درخواست مسترد

بینچ کے سربراہ جسٹس جواد ایس خواجہ پر اعتراض کی درخواست بھی چیف جسٹس نے مسترد کر دی، کیس کی سماعت جمعرات سے ہو گی۔

کراچی: ایک گھنٹے میں پولیس پر دو حملے، دو اہلکار زخمی

پہلا واقعہ حسن اسکوائر کے قریب پیش آیا جہاں ایک پولیس موبائل کو موٹر سائیکل سوار حملہ آوروں نے دستی بم سے نشانہ بنایا۔

لائن آف کنٹرول: ہندوستان کی جانب سے بلا اشتعال فائرنگ

انٹر سروسز پبلک ریلیشنز کے مطابق انڈین فورسز نے ایل او سی پر باغ سیکٹر میں فائرنگ کی جس کا بھر پور جواب دیا گیا۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (2)

khaliq
13 جنوری, 2013 14:40
very nice news resources
Israr Muhammad
13 جنوری, 2013 19:42
Unfortunate for Shahul Islam his march is over shadow by the Quitta killing his march is so for a failed show
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماؤں اور بچوں کے قاتل ہم

پاکستان سے کم فی کس آمدنی رکھنے والے ممالک پیدائش کے دوران ماؤں اور بچوں کی اموات پر قابو پا چکے ہیں۔

تبدیلی کا پیش خیمہ

اکثر ایسے بڑے واقعات پیش آتے ہیں جو تبدیلی کے عمل کو تیز کردیتے ہیں، مگر ایسے حالات کسی فرد کے پیدا کردہ نہیں ہوتے۔

بلاگ

!گو نواز گو

اس ملک میں پڑھے لکھے لوگوں کی قدر ہی نہیں۔ جب تک پڑھے لکھوں کو وی آئی پی پروٹوکول نہیں دیا جاتا یہ ملک ترقی نہیں کرسکتا

قدرتی آفات اور پاکستان

قدرتی آفات سے پہلے انتظامات پر ایک ڈالر جبکہ بعد میں سات ڈالر خرچ ہوتے ہیں، اس کے باوجود ہم پہلے سے انتظامات نہیں کرتے۔

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟