18 ستمبر, 2014 | 22 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

شمالی وزیرستان میں دھماکہ، 14 ہلاک

شمالی وزیرستان میں سیکیورٹی فورسز کا حملہ ۔ فائل تصویر
شمالی وزیرستان میں سیکیورٹی فورسز کا حملہ ۔ فائل تصویر

لنڈی کوتل: شمالی وزیرستان کے رزمک علاقے میں میرانشاہ روڈ پر بم دھماکے میں 14 سیکیورٹی اہلکار ہلاک اور 25 زخمی ہوگئے ہیں۔

سیکیورٹی فورسز کے ذرائع نے ان اعدادوشمار کی تصدیق کردی ہے۔

اس کے علاوہ اتوار کے روز ہی لنڈی کوتل کے علاقے میں زکاخیل مارکیٹ میں ایک دھماکہ ہوا جس میں ایک شخص ہلاک ہوگیا۔

اس رپورٹ کے شایع ہونے تک اس سانحے کی مزید تفصیلات موصول نہیں ہوئی۔

ایک اور واقعے میں شرپسندوں نے خیبرقبائل میں واقع سپاہ کے جھانسی علاقے میں ایک اسکول میں داخل ہوکر وہاں سے اسکول کا فرنیچر لے کر فرار ہوگئے ہیں۔

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق ، خیبر ایجنسی کی تحصیل باڑہ میں اکاخیل علاقے کے باڑو اڈا میں امن لشکر اور شدت پسندوں کے درمیان چھڑپ میں دہ عسکریت پسند اور ایک امن لشکر کا اہلکار زخمی ہوگیا ہے۔

اس حصے سے مزید

شمالی وزیرستان: فضائی کارروائی میں 23 شدت پسند ہلاک

جمعرات کو شمالی وزیرستان میں کی گئی فضائی کارروائی میں کم از کم 23 شدت پسند ہلاک ہو گئے۔

غیر قانونی سمز ایکٹیویٹ کرنے پر ایک شخص کو چھ سال قید کی سزا

ملزم نورالحق پر الزام تھا کہ وہ جعلی شناختی کارڈ کے ذریعے غیر قانونی سمیں ایکٹیویٹ کرتے ہیں۔

خیبر پختونخوا کے مختلف علاقوں میں زلزلے کے جھٹکے

زلزلے کا مرکز کوہ ہندوکش کا علاقہ تھا جبکہ ریکٹر سکیل پر اس کی شدت 4.1 ریکارڈ کی گئی ۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مزید جمہوریت

نظام لپیٹ دینے اور امپائر کی باتیں کرنے کے بجائے ہمارا مطالبہ صرف مزید جمہوریت ہونا چاہیے، کم جمہوریت نہیں۔

تبدیلی آگئی ہے

ملک میں شہری حقوق کی عدم موجودگی میں عوام اب وسیع تر بھلائی کا سوچنے کے بجائے اپنے اپنے مفاد کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔

بلاگ

شاہد آفریدی دوبارہ کپتان، ایک قدم آگے، دو قدم پیچھے

اس بات کی ضمانت کون دے گا کہ ماضی کی طرح وقار یونس اور شاہد آفریدی کے مفادات میں ٹکراؤ پیدا نہیں ہوگا۔

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔

کراچی میں فرقہ وارانہ دہشتگردی

کراچی ایک مرتبہ پھر فرقہ وارانہ دہشت گردی کی زد میں ہے اور روزانہ کوئی نہ کوئی بے گناہ سنی یا شیعہ اپنی جان گنوا رہا ہے۔

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔