30 ستمبر, 2014 | 4 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

سانحہ کوئٹہ میں ہلاک ہونے والے افراد سپرد خاک

کوئٹہ میں ہزارہ برادری کے دھرنے میں شریک  خواتین احتجاج کر رہی ہیں۔— اے ایف پی
کوئٹہ میں ہزارہ برادری کے دھرنے میں شریک خواتین احتجاج کر رہی ہیں۔— اے ایف پی

کوئٹہ: سانحہ کوئٹہ میں ہلاک ہونے والے افراد کو پیر کو سپرد خاک کردیا گیا ہے۔

اس سے قبل ہلاک ہونے والے افراد کی نماز جنازہ بہشت زینب قبرستان کے قریب ادا کی گئی۔

دوسری جناب ہزارہ برادری نے اپنے مطالبات منظور ہونے کے بعد کوئٹہ میں جمعہ سے جاری احتجاجی دھرنا آج صبح  ختم کردیا ہے۔

 جمعرات کو تین بم دھماکوں میں بڑی تعداد میں ہلاکتوں کے بعد ہزارہ برادری نے احتجاجاً لاشوں کی تدفین سے انکار کرتے ہوئے صوبائی حکومت کے خاتمے اور شہر کو فوج کے حوالے کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

مظاہرین نے مطالبات کی منظوری تک جمعہ سے شہر کے علمدار روڈ پر شدید سردی اور بارش میں لاشوں کو رکھ کر دھرنا دے رکھا تھا۔

تاہم اتوار کو رات گئے وفاقی حکومت نے ان کے مطالبوں کو تسلیم کرتے ہوئے صوبے میں گورنر راج کے نفاذ کا اعلان کر دیا۔

یہ اعلان وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے گزشتہ روز شہر کا دورہ کرنے اور اتحادی جماعتوں سے مشاورت کے بعد کیا۔

حکومتی اعلان کے بعد ہزارہ برادری کے رہنما اور سابق صوبائی وزیر جان علی چنگیزی نے کہا تھا کہ آج صبح دس بجے دھرنا ختم کر دیا جائے گا۔

ڈان نیوز کے مطابق، جمعرات کو بم دھماکوں میں ہلاک ہونے والے پچاسی افراد کی آج دوپہر تدفین بھی کردی جائے گی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق، چنگیزی کا کہنا تھا کہ شہر کو فوج کے حوالے کرنے سے متعلق صوبے کے گورنر سے بات چیت جاری رکھی جائے گی۔

اس حصے سے مزید

بلوچستان کے 27 اضلاع میں انسدادِ پولیو مہم کا آغاز

تقریباً چار ہزار سے زائد ٹیمیں اس مہم میں حصہ لی رہی ہیں، جبکہ 14 لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے۔

سوئی: 85 ’عسکریت پسندوں‘ نے ہتھیار ڈال دیے

یہ افراد مختلف بگٹی قبائل سے تعلق رکھتے ہیں اور ڈیرہ بگٹی کے سوئی کے علاقے میں رہائش پذیر تھے، ترجمان ایف سی۔

سبی میں دھماکا، دو افراد ہلاک، 15 زخمی

موٹر سائیکل میں نصب بم اُس وقت دھماکے سے پھٹ گیا جب سیکورٹی فورسز کا قافلہ معمول کی گشت پر تھا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

فائرنگ کی زد میں

پولیس کی قیادت کو ادراک ہوا ہے کہ اسے صاحب اختیار لوگوں کے غیر قانونی مطالبات کو نا کہنے کی ہمت دکھانے کی ضرورت ہے.

پالیسی سازی کا فن

پنجاب میں باربارآنے والے سیلاب نے فیصلہ سازی اور پالیسی سازی کے درمیان خلا کو بےنقاب کردیا ہے۔

بلاگ

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟

مووی ریویو: دی پرنس — انسپائر کرنے میں ناکام

مجموعی طور پر روبوٹ جیسی پرفارمنسز اور کمزور پلاٹ کی وجہ سے یہ فلم ناظرین کی دلچسپی قائم رکھنے میں ناکام رہی-

مخلص سیاستدانوں کے سچے بیانات

جب سے دھرنے جاری ہیں، تب سے ہم نے سیاستدانوں سے طرح طرح کی باتیں سنی ہیں جن میں سے کچھ پیش خدمت ہیں۔