03 ستمبر, 2014 | 7 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

پاکستانی کھلاڑیوں کی انڈین ہاکی لیگ سے واپسی

ہندوستانی میڈیا کے مطابق، پانچ پاکستانی کھلاڑیوں کو آج شام تک وطن واپس بھیج دیا جائے گا۔ فائل فوٹو اے ایف پی
ہندوستانی میڈیا کے مطابق، پانچ پاکستانی کھلاڑیوں کو آج شام تک وطن واپس بھیج دیا جائے گا۔ فائل فوٹو اے ایف پی

کراچی: ہندوستانی میڈیا کے مطابق، انڈین ہاکی لیگ کھیلنے والے پاکستانی کھلاڑیوں کے وطن واپس بھیجنے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ دو روز قبل ہندوستانی انتہا پسند تنظیم شیو سینا کے احتجاج کے بعد کھلاڑیوں کی ٹریننگ کو پہلے ممبئی سے دہلی منتقل کیا گیا تھا۔

لیگ میں شامل پانچ ٹیموں میں سے چار میں پاکستانی کھلاڑی شامل کیے گئے تھے۔

رضوان سینیئر ار رضوان جونیئر دہلی ویو رائڈرز، شفقت رسول، محمد عرفان رانچی رائنوز، محمد توثیق، راشد محمود ، فرید احمد اور عمران بٹ ممبئی مجیشنز جبکہ کاشف شاہ پنجاب واریئرز کی نمائندگی کر رہے تھے۔

انڈین میڈیا کے مطابق، پاکستانی کھلاڑیوں کو آج شام وطن واپس بھیج دیا جائے گا۔

دوسری جانب پاکستان ہاکی فیڈریشن (پی ایچ ایف)  کے مطابق، کھلاڑیوں کو واپس بھیجنے کا فیصلہ باہمی مشاورت سے کیا گیا ہے۔

فیڈریشن کا کہنا ہے کہ موجودہ حالات میں پاکستانی کھلاڑیوں کا ہندوستان میں کھیلنا سازگار نہیں ہے جبکہ کھلاڑیوں کے لیگ میں شرکت نہ کرنے کے باوجود پوری رقم ملے گی۔

واضح رہے کہ لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر  پاک ہندوستان سرحد پر دونوں ملکوں کی فوجوں کے درمیان کشیدگی برقرار ہے جسکے نتیجے میں اب تک دو پاکستانی اور دو ہندوستانی فوجی ہلاک ہوچکے ہیں۔

اس حصے سے مزید

مصباح کی خراب کارکردگی پاکستانی شکست کی بڑی وجہ

پاکستان کو سری لنکا نے ٹیسٹ سیریز میں دو صفر جبکہ ون ڈے سیریز میں دو ایک سے شکست دی تھی۔

شیراپووا یو ایس اوپن سے باہر، جوکووچ کی پیش قدمی جاری

سرینا ولیمز اور واورنکا بھی کامیاب، جوکووچ اور اینڈی مرے یو ایس اوپن کے کوارٹر فائنل میں مدمقابل ہوں گے۔

آسٹریلیا کو زمبابوے کے ہاتھوں اپ سیٹ شکست

زمبابوے نے سہ ملکی سیریز میں آسٹریلیا کو تین وکٹوں سے اپ سیٹ شکست دے کر 31 سال میں پہلی کامیابی حاصل کرلی۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (2)

kaksoo
15 جنوری, 2013 13:51
یہ تو بہت ہی بہتر فیصلہ ہے ، ہمارے عظیم کھلاڑیون کو اس غیر محفوظ حالات میں وہاں کھیلنا ٹھیک نہیں تھا۔ آئندہ اگر موقع ملے گا بھر بھی جا سکتے ہیں۔ یہ بات بھی خوب ہے کہ ان کو معا و ضہ پورا مل گیا۔ پاکستان زندہ باد۔!
عزیز الحق بادات
15 جنوری, 2013 13:53
کاکسو ! آپ کی بات سے اتفاق کرتا ہوں۔۔۔۔!!!
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماڈل ٹاؤن کیس: کچھ حماقتیں

حکمرانوں کے منع کرنے پر پولیس کی جانب سے مقتولین کی ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کی وجہ سے معاملہ مزید خراب ہوا۔

بیوروکریٹس کی یونین

ذاتی مفادات کے لیے چوری چھپے سیاسی ہونے سے زیادہ بہتر ہے کہ ریاست کے وسیع تر مفاد کے لیے کھلے عام سیاسی ہوا جائے۔

بلاگ

ڈرامہ ریویو: 'لا'...الجھتے رشتوں کی کہانی

ڈرامہ پرفیکٹ نہیں بھی تھا تو بھی یہ ان ڈراموں میں سے ایک ضرور تھا جسے دیکھ کر بیزاری کا احساس نہیں ہوتا۔

مووی ریویو : 'راجہ نٹور لال' سٹیریو ٹائپنگ کا شکار ہوگئی

یہ فلم نہ تو مزاح پر پوری اترتی ہے اور نہ ہی اس میں اتنا تھرلر ہے جو اسے ذہن میں نقش کر دے۔

سستا خون: براۓ انقلاب

"انقلاب" سیاست چمکانے کے لیے ایک خوشنما لفظ بن چکا ہے، اور اسے مزید چمکانے کے لیے کارکنوں کا سستا خون بھی دستیاب ہے۔

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔