02 اگست, 2014 | 5 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

بلوچستان گورنر راج: مسئلہ حل؟

shia-hazara-balochistan-pakistan-290

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) نے گزشتہ ہفتے شروع ہونے والے مظاہرے کے آگے آخر کار ہتھیار ڈال دیے ہیں۔ وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے اتوار کو اہل نشیع برادری کے نمایندوں کے سامنے بلوچستان کی حکومت کو ختم کرتے ہوئے صوبے میں گورنر راج نافذ کرنے کا اعلان کردیا۔

جما دینے والے درجہ ہرارت میں تین راتیں اپنے پیاروں کی میتوں کے ساتھ گزارنے کے بعد پیر کے روز کوئٹہ سانحے میں ہلاک ہونے والے افراد کو دفنا دیا گیا۔

اس سے قبل کوئٹہ میں ہونے والے خونی واقعے میں ہلاک ہونے والے افراد کے رشتہ داروں، دوستوں اور ہزارہ برادری سے تعلق رکھنے والے افراد نے صوبائی دارالحکومت کی اہم علاقوں پر دھرنا دیا۔

کیا آپ کے خیال میں وفاقی حکومت نے صرف سانحے کے بعد پیدا ہونے والے دباؤ میں آکر صوبے میں گورنر راج نافذ کیا؟

کیا اس پیش رفت کے بعد آپ صوبے کی سیکیورٹی سے متعلق صورت حال کو بہتر ہوتا ہوا دیکھتے ہیں؟

مزید برآں، کیا ایف سی کو پولیس کے حقوق دینا درست اقدام ہے جبکہ ان پر کئی مرتبہ اپنی منمامی کرنے کا الزام لگایا جاچکا ہے؟


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (4)

Syed Mohsin Raza
15 جنوری, 2013 16:25
why Balochistan assembly members are angry over Governor Rule but silent on continuous Hazara Genocides
aownali
16 جنوری, 2013 06:41
حکومت اپنی اہم ذمہ داری ادا کرنے میں ناکام ہو چکی تھی۔ اسلم رئسانی اس دور کے محمد شاہ رنگیلا بن چکے تھے۔۔ ایسے میں گورنر راج نہ لگتا تو ایمرجنسی لگتی۔ حیرت ہے اب جو کابینہ قرار دادیں منظورکرکے اس فیصلے کو حکومت پر شب خون قرار دے رہی ہے۔ پچھلے چار سال انہیں ہوش کیوں نہیں آئی۔ اس حکومت کے خاتمے اور گورنر راج کے نفاذ کے بعد حالات کے بہتر ہونے کی توقع تو ہے مگر دوٹوک الفاظ میں کچھ کہا نہیں جا سکتا۔
Gharib
16 جنوری, 2013 20:46
Jo log Islam ke naam se aise karwaiyan karte hain, woh dar asal Muslmaan to kya, insaan ka darja bhee nahin rakhte. Yeh log jaanwar se bhee bad tar hain. Lashkar-e Jhangvi aur us jaisi saare shaddat pasand grohon ke wajah se, aap Pakistan ka haalat aisa hua hai. Allah in sub shaheedon ka maghfarat farmaaye aur yeh saare grohon ko tabah aur barbaad karein.
tanvir
18 جنوری, 2013 14:02
the govt of balochistan is mainly responsible for not ensuring stable law and order in the province. The heartlessness of chief minister is indeed shameful. Secondly,the renown religious persons should come forward to show tolerance. They can free the nation from the menace of sectarianism.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ہمارا پارٹ ٹائم لیڈر

اتنی ناکارہ لیڈرشپ کی مثال مشکل سے ملیگی جس میں کسی دوراندیشی کی کوئی جھلک نہ ہو-

بجٹ اور صحت کا شعبہ

ایسا لگتا ہے کہ صحت کے بجٹ کی بڑھتی ہوئی ضروریات کیلئے عطیات دینے والے ملکوں کے پیسے پر زیادہ انحصار کیا جاتا ہے

بلاگ

پکوان کہانی: موسم گرما کی سوغات 'آم

پرانے وقتوں کے لوگوں کی دلچسپ تصور اور حکمت کی بدولت، پھلوں کا بادشاہ عام انسان کی غذا بن گیا۔

پاکستان میں اسٹارٹ اپس اب تک ناکام کیوں؟

آجکل یہ فیشن سا بن گیا ہے کہ ہر کوئی یہی کہتا نظر آ رہا ہے کہ اس کے پاس 'اسٹارٹ اپ' ہے-

ساغر صدیقی : ایک دل شکستہ شاعر

وہ خوبصورت نظمیں لکھتے، پھر بلند آواز میں خالی نگاہوں سے پڑھتے، پھر ان کاغذات کو پھاڑ دیتے جن پر وہ نظمیں لکھی ہوتیں

پکوان کہانی: کابلی پلاؤ - شمال کی شان

گوشت میں پکے چاول اس خطے کے جنگجوؤں کی ذہنی مطابقت اور جسمانی ساخت کے لیے موزوں تھے۔