25 اپريل, 2014 | 24 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

عدالت کا تحریری حکم نہیں ملا، کائرہ

وفاقی وزیر برائے اطلاعات و نشریات، قمر زمان کائرہ۔ فائل تصویر اے ایف پی
وفاقی وزیر برائے اطلاعات و نشریات، قمر زمان کائرہ۔ فائل تصویر اے ایف پی

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات قمرزمان کائرہ نے کہا ہے کہ وزیراعظم راجہ پرویز اشرف کو گرفتار کرنے سے متعلق سپریم کورٹ کا فیصلہ ابھی تک حکومت کو نہیں ملا۔

منگل کو جیو ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان بھر کے وکلاء اور ملک کے دوسرے سیاستدان یہی کہہ رہے ہیں کہ یہ فیصلہ جس موقع پر آیا اس موقع اور سپریم کورٹ کے فیصلے میں کچھ مماثلت ضرور ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم اس بات کا جائزہ لے رہے ہیں کہ طاہر القادری کی تقریر اور سپریم کورٹ کے فیصلے میں کہاں کہاں مماثلت ہے اور طاہر القادری کی تقریر میں کیا کرامات ہیں۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ انتخابات مقررہ وقت پر ہونگے، یہ بات ہم بار بار کہہ چکے ہیں، کسی کی خواہشات کچھ بھی ہوں، عوام جمہوریت کو ڈی ریل نہیں ہونے دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت جمہوریت کو کوئی خطرہ نہیں ہے، طاہر القادری کے لہجے سے لگ رہا تھا کہ انہیں سپریم کورٹ کے اس فیصلے کا شاید پہلے سے علم تھا، جس کے سبب انہوں نے کہا کہ میری آدھی تقریر سے آدھا کام ہو گیا ہے باقی آدھا کام کل ہو جائے گا۔

ایک سوال کے جواب میں قمر زمان کائرہ نے کہا کہ کوئٹہ کی صورتحال کا اسلام آباد کی صورتحال کے ساتھ موازنہ نہیں کیا جاسکتا۔کوئٹہ اور اسلام آباد کی صورتحال میں بڑا فرق ہے۔

انہوں نے کہا کہ منہاج القرآن ایک سیاسی تنظیم نہیں ہے، طاہر القادری نے ابھی تک اپنی پوزیشن واضح نہیں کی ہے کہ وہ انتخابات میں حصہ لینا چاہتے ہیں یا نہیں۔

وزیر اطلاعات کے مطابق، ڈاکٹر قادری نے ابھی تک اپنی جماعت کو الیکشن کمیشن کے پاس رجسٹرڈ بھی نہیں کرایا۔

قمر زمان کائرہ نے کہا کہ طاہر القادری سے مذاکرات کے حق میں ہیں کیونکہ ہم نے تو طالبان کے ساتھ بھی مذاکرات کی حامی بھری ہوئی ہے۔

اس حصے سے مزید

خیبر ایجنسی میں فورسز کی کارروائی۔ 24 شدت پسند ہلاک

ذرائع کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں وہ شدت پسند بھی شامل ہیں جو اسلام آباد سبزی منڈی اور پشاور دھماکے میں ملوث تھے۔

مشرف غداری کیس: 'ایف آئی اے کی رپورٹ فراہم نہ کرنا بدنیتی ہے'

سپریم کورٹ نے اپنے فیصلوں میں بنیادی حقوق کو ہر قانون سے بالاتر قرار دیا ہے، بیرسٹر فروغ نسیم۔

'پاکستانی اداروں پر ہندوستانی الزامات بے بنیاد ہیں'

پاکستان نے صحافی حامد میر پر حملے سے متعلق ہندوستانی میڈیا کے پاکستانی سیکورٹی اداروں پرلگائے گئے الزامات کو مسترد کردیا


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

مقدّس ریپ

دو دن وہ اسی گاؤں میں ماں کے بازؤں میں تڑپتی رہی۔ گھر میں پیسے ہی کہاں تھے کہ علاج کے لئے بدین تک ہی پہنچ پاتے۔

میڈیا اور نقل بازی کا کینسر

ایسا نہیں کہ میں کوئی پہلا انسان ہوں جس کے خیالات پر نقب لگائی گئی ہو، مگر آخری ضرور بننا چاہتا ہوں

!مار ڈالو، کاٹ ڈالو

مجھے احساس ہوا کہ مجھے اس پر شدید غصہ آ رہا ہے اور میں اسے سچ بولنے پر چیخ چیخ کر ڈانٹنا چاہتا ہوں-

خطبہء وزیرستان

کس سازش کے تحت 'آپکو' بدنام کرنے کے لئے دھماکے کیے جاتے ہیں؟ کس صوبے کے مظلوم عوام آپکے بھائی ہیں؟