24 جولائ, 2014 | 25 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

شام: حلب میں دھماکے سے 80 افراد ہلاک

شام میںسیکیورٹی اہلکار اور شہری حلب میں دھماکے کےمقام پر جمع ہیں۔ رائٹرز تصویر
شام میں سیکیورٹی اہلکار اور شہری حلب میں دھماکے کےمقام پر جمع ہیں۔ رائٹرز تصویر

حلب:  شام کے شہر حلب کی ایک یونیورسٹی میں ایک کے بعد ہونے والے دھماکوں میں 80 سے زائد افراد ہلاک ہوگئےہیں۔  منگل کے روز حلب کے گورنر محمد وحید عکاد اور یونیورسٹی  ہسپتال کے ذرائع نے ان ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے۔

' حلب یونیورسٹی میں طالبعلموں کو امتحان کے پہلے روز حملے کا نشانہ بنایا گیا جس میں 82 ہلاکتیں ہوئیں اور 160 سے زائد افراد زخمی ہوئےہیں،' عکاد نے خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کو فون پر بتایا۔

شام میں برطانیہ کی انسانی حقوق کی تنظیم نے کہا کم ازکم  52 افراد ہلاک ہوئے تھے لیکن بعد میں ان کی تعداد میں ڈرامائی انداز میں اضافہ ہوگیا۔

اس کیمپس میں طالبعلموں کے ساتھ ساتھ تیس ہزار افراد رہتے ہیں جو لڑائی کے بعد یہاں پناہ لینے پر مجبور تھے۔

طلبا کی جانب سے انٹرنیٹ پر ویڈیو بھی پوسٹ کی گئی ہے جہاں بچ جانے والے افراد کیمپس کی عمارت میں پناہ لینے پر مجبور ہیں۔

انسانی حقوق کے کارکنوں کے مطابق حکومتی جیٹ طیاروں کی جانب سے فائر کئے گئے میزائل ہلاکتوں کے ذمے دار ہیں۔ جبکہ فوجی ذرائع کا اصرار ہے کہ یہ زمین سے زمین تک مار کرنے والے وہ میزائل ہیں جو باغیوں نے فائر کئے اور نشانہ چوکنے پر یہاں آگرے تھے۔

آبزرویٹری کے مطابق، دھماکے آرکیٹیکچر مرکز کے قریب ہوئے۔

حکومتی ٹی وی نے کہا کہ ' دہشتگردوں نے دو راکٹ لانچ کئے ' جو حکومت کے زیرِ کنٹرول علاقے میں واقع یونیورسٹی کمپلیکس میں گرے۔

اس حصے سے مزید

غزہ میں جنگ بندی کیلئے کوششیں تیز، ہلاکتیں 650 سے زائد

اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ غزہ پٹی پر اسرائیل کی فوجی کارروائی جنگی جرائم کے زمرے میں آسکتی ہے۔

آئی ایس آئی ایس کی عراق و شام کیلئے 'ہنی مون' اور تفریحی سروس

گزشتہ ماہ خلافت کا اعلان کرنے والی تنظیم جہادیوں کو ہنی مون جبکہ عام شہریوں کو "خلافت" کےمقامات کادورہ کرایا جارہا ہے

غزہ میں اسرائیلی جارحیت جاری، فضائی کمپنیوں کی اسرائیل سروس معطل

گزشتہ دنوں ملائیشین ایئرلائن کے طیارے پرحملے کے بعد جنگ زدہ علاقوں میں ایوی ایشن سیفٹی کے تحت یہ پابندی لگائی گئی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

کیا بڑا بہتر ہے؟

ہم اپنی جنوب ایشیائی شناخت سے پیچھا کیوں چھڑانا چاہتے ہیں جو تاریخی اعتبار سے عرب کے مقابلے میں کہیں زیادہ مالامال ہے؟

بلاگ

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-

مووی ریویو: پیزا - پلاٹ اچھا ہے

اگرچہ سکرین پلے کافی کمزور ہے مگر فلم کی کہانی میں آنے والے موڑ دیکھنے والوں کی دلچسپی برقرار رکھتے ہیں۔

جہادی برائے فروخت

اگر اب بھی سمجھ نہ آئی تو پاکستان کا حشر بھی عراق و شام سے مختلف نہیں ہوگا۔