20 اپريل, 2014 | 19 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

شام: حلب میں دھماکے سے 80 افراد ہلاک

شام میںسیکیورٹی اہلکار اور شہری حلب میں دھماکے کےمقام پر جمع ہیں۔ رائٹرز تصویر
شام میں سیکیورٹی اہلکار اور شہری حلب میں دھماکے کےمقام پر جمع ہیں۔ رائٹرز تصویر

حلب:  شام کے شہر حلب کی ایک یونیورسٹی میں ایک کے بعد ہونے والے دھماکوں میں 80 سے زائد افراد ہلاک ہوگئےہیں۔  منگل کے روز حلب کے گورنر محمد وحید عکاد اور یونیورسٹی  ہسپتال کے ذرائع نے ان ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے۔

' حلب یونیورسٹی میں طالبعلموں کو امتحان کے پہلے روز حملے کا نشانہ بنایا گیا جس میں 82 ہلاکتیں ہوئیں اور 160 سے زائد افراد زخمی ہوئےہیں،' عکاد نے خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کو فون پر بتایا۔

شام میں برطانیہ کی انسانی حقوق کی تنظیم نے کہا کم ازکم  52 افراد ہلاک ہوئے تھے لیکن بعد میں ان کی تعداد میں ڈرامائی انداز میں اضافہ ہوگیا۔

اس کیمپس میں طالبعلموں کے ساتھ ساتھ تیس ہزار افراد رہتے ہیں جو لڑائی کے بعد یہاں پناہ لینے پر مجبور تھے۔

طلبا کی جانب سے انٹرنیٹ پر ویڈیو بھی پوسٹ کی گئی ہے جہاں بچ جانے والے افراد کیمپس کی عمارت میں پناہ لینے پر مجبور ہیں۔

انسانی حقوق کے کارکنوں کے مطابق حکومتی جیٹ طیاروں کی جانب سے فائر کئے گئے میزائل ہلاکتوں کے ذمے دار ہیں۔ جبکہ فوجی ذرائع کا اصرار ہے کہ یہ زمین سے زمین تک مار کرنے والے وہ میزائل ہیں جو باغیوں نے فائر کئے اور نشانہ چوکنے پر یہاں آگرے تھے۔

آبزرویٹری کے مطابق، دھماکے آرکیٹیکچر مرکز کے قریب ہوئے۔

حکومتی ٹی وی نے کہا کہ ' دہشتگردوں نے دو راکٹ لانچ کئے ' جو حکومت کے زیرِ کنٹرول علاقے میں واقع یونیورسٹی کمپلیکس میں گرے۔

اس حصے سے مزید

اسرائیل کا فلسطین پر مالی پابندیوں کا اعلان

اسرائیلی وزیرِ اعظم کا فلسطینی افسروں اور وزیروں سے رابطہ نہ رکھنے کا حکم، فلسطینی سیل فون کمپنی کا سامان بھی ضبط۔

عسکری تنظیم کا ایرانی محافظ رہا کرنے کا دعویٰ

ان محافظوں کو پاکستانی سرحد کے قریب فروری میں جیش العدل نامی تنظیم نے اغوا کیا تھا۔

شامی جنگ: 'لبنان میں مہاجرین کی تعداد دس لاکھ سے تجاوز'

یو این ایچ سی آر نے کہا کہ شامی مہاجرین کی تعداد لبنان کی آبادی کے چوتھائی حصہ کے برابر ہو گئی ہے۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

دو قومی نظریہ اور ہندوستانی اقلیتیں

دو قومی نظریہ مسلمانوں اور ہندوؤں میں تو تفریق کرتا ہے لیکن دیگر اقلیتوں، خاص کر دلتوں کو یکسر فراموش کرتا ہے۔

ریویو: بھوت ناتھ - ریٹرنز

مرکزی کرداروں سے لیکر سپورٹنگ ایکٹرز سب اپنی جگہ کمال کے رہے اور جس فلم میں بگ بی ہوں اس میں چار چاند تو لگ ہی جاتے ہیں۔