02 اگست, 2014 | 5 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

سعودی عرب میں پاکستانی کا سر قلم

فائل فوٹو رائٹرز۔۔۔

ریاض: سعودی عرب نے منشیات کی اسمگلنگ کے الزام میں گرفتار پاکستانی باشندے کا مشرقی صوبے خبار میں سر قلم کر دیا، سعودی وزارت داخلہ نے اس بات کا اعلان کر دیا ہے۔

ایس پی اے نیوز ایجنسی کے مطابق وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ ارشد محمود کو ہیروئن اور ہشیش کی اسمگلنگ کے الزام میں سعودی عرب میں گرفتار کیا گیا تھا۔

اس واقعے کے بعد رواں سال سعودی عرب میں سر قلم کیے جانے افراد کی تعداد 4 ہو گئی ہے۔

اے ایف پی کے مطابق آفیشل کی جانب سے جاری کیے گئے اعداد وشمار کے مطابق گزشتہ سال 76 افراد کے سر قلم کیے گئے تھے جبکہ انسانی حقوق کی تظیم کے مطابق ان افراد کی تعداد 69 تھی۔

سعودی عرب میں لاگو قوانین کے تحت ریپ، قتل، مسلح ڈکیتی، منشیات کی اسمگلنگ میں ملوث افراد کے ساتھ ساتھ مرتد افراد کا سر قلم کر دیا جاتا ہے۔

اس حصے سے مزید

عراق:بم دھماکوں میں 10افراد ہلاک، 29زخمی

صدر سٹی میں کار بم کے ذریعے دھماکہ کیا گیا،مرکزی خولانی اسکوائر پر ایک مسجد کے قریب تین دھماکے ہوئے۔

ایران:شراب نوشی کے تدارک کیلئے سرکاری اقدام

تہران میں شراب پینے والوں کی بحالی کے لیے سرکاری سطح پر پہلے سینٹر کا افتتاح کر دیا گیا ہے۔

اسرائیل کا جنگ بندی ختم کرنے کا اعلان، مزید 40 فلسطینی ہلاک

اسرائیل نے 72 گھنٹوں تک جنگ بندی کے معائدے کو چند گھنٹوں کے بعد ہی ختم کرکے اقوام متحدہ کو بھی اس سے آگاہ کردیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ہمارا پارٹ ٹائم لیڈر

اتنی ناکارہ لیڈرشپ کی مثال مشکل سے ملیگی جس میں کسی دوراندیشی کی کوئی جھلک نہ ہو-

بجٹ اور صحت کا شعبہ

ایسا لگتا ہے کہ صحت کے بجٹ کی بڑھتی ہوئی ضروریات کیلئے عطیات دینے والے ملکوں کے پیسے پر زیادہ انحصار کیا جاتا ہے

بلاگ

پکوان کہانی: موسم گرما کی سوغات 'آم

پرانے وقتوں کے لوگوں کی دلچسپ تصور اور حکمت کی بدولت، پھلوں کا بادشاہ عام انسان کی غذا بن گیا۔

پاکستان میں اسٹارٹ اپس اب تک ناکام کیوں؟

آجکل یہ فیشن سا بن گیا ہے کہ ہر کوئی یہی کہتا نظر آ رہا ہے کہ اس کے پاس 'اسٹارٹ اپ' ہے-

ساغر صدیقی : ایک دل شکستہ شاعر

وہ خوبصورت نظمیں لکھتے، پھر بلند آواز میں خالی نگاہوں سے پڑھتے، پھر ان کاغذات کو پھاڑ دیتے جن پر وہ نظمیں لکھی ہوتیں

پکوان کہانی: کابلی پلاؤ - شمال کی شان

گوشت میں پکے چاول اس خطے کے جنگجوؤں کی ذہنی مطابقت اور جسمانی ساخت کے لیے موزوں تھے۔