24 جولائ, 2014 | 25 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

اپوزیشن جماعتوں کا جمہوریت کے تحفظ کا عزم

اجلاس کے بعد مسلم لیگ ن کے صدر میاں نواز شریف دیگر اپوزیشن رہنماؤں کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کررہے ہیں۔ پی پی آئی فوٹو۔
اجلاس کے بعد مسلم لیگ ن کے صدر میاں نواز شریف دیگر اپوزیشن رہنماؤں کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کررہے ہیں۔ پی پی آئی فوٹو۔

رائے ونڈ: اپوزیشن جماعتوں نے بدھ کے روز جمہوریت کے تحفظ کا عزم اور بروقت انتخابات کا مطالبہ کردیا ہے۔

حزب اختلاف کی جماعتوں کے رائے ونڈ میں ہونے والے اجلاس میں جمہوریت کو پٹری سے اتارنے کی کوئی سازش کامیاب نہ ہونے دینے کا عزم کیا گیا۔

اجلاس میں شریک تمام جماعتوں اور رہنماؤں نے بروقت انتخابات کے انعقاد کا مطالبہ کیا اور عام انتخابات کا التوا کسی صورت برداشت نہ کرنے کا اعلان کیا۔

اجلاس میں ہر حال میں آئین اور قانون کی حکمرانی کا عزم بھی کیا گیا۔

اس سے قبل اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے میاں نواز شریف نے کہا کہ ان کی جماعت اقتدار کے لئے نہیں بلکہ جمہوریت کے لئے سرگرم ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ کسی کو جمہوریت پر شب خون مارنے کی اجازت نہیں دی جائے گی جبکہ عوام جمہوریت کے تحفظ کے لئے ڈٹ گئے ہیں۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ اگر پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) چارٹر آف ڈیموکریسی پر عمل کرتی تو حالات مختلف ہوتے۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ صورت حال حکومت کی ناکامی کا ثبوت ہے۔

جمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ تمام جماعتیں کسی بھی غیر آئینی اقدام کیخلاف بھرپور مزاحمت کریں گی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت اب عام انتخابات میں تاخیر کے بجائے ان کے انعقاد کا  فوری اعلان کرے۔

امیر جماعت اسلامی سید منور حسن کے مطابق، غیر جمہوری قوتوں کو کوئی موقع فراہم نہیں کرنا چاہیئے۔

پختونخواہ ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی کا کہنا تھا کہ سیاست میں 'مسخروں' کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔۔

کانفرنس میں طلال اکبر بگٹی، محمود خان اچکزئی، حامد ناصر چٹھہ، ہارون اختر، غلام مصطفی کھر سمیت اہم رہنماؤں نے شرکت کی۔

اس حصے سے مزید

بلوچستان: ڈھائی سال میں پہلا پولیو کیس

یونیسیف کے مطابق پولیو وائرس کا شکار 18 ماہ کی بچی کا خاندان رواں سال کراچی سے قلعہ عبداللہ منتقل ہوا تھا۔

وفاقی حکومت نے آزادی تقریبات کا اعلان کر دیا

تقریبات کا اعلان کرتے ہوئے سعد رفیق نے تحریک انصاف کے مارچ کے حوالے سے سوال کا جواب دینے سے معذرت کر لی۔

گجرات: زمیندار نے دس سالہ بچے کے دونوں بازو کاٹ دیے

معمولی رنجش پر زمیندار کے بیٹے نے تبسم شہزاد کو موٹر پر دھکا دیدیا جس کی زد میں آکر بچے کے دونوں بازو جسم سے جدا ہوگئے


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (2)

Israr Muhammad
16 جنوری, 2013 20:51
شیح الاسلام کے مارچ کےحوالے سے عدالت اعظمۂ کی وضاحت کے بعد سپریم کورٹ کے وزیراعظم کے بارے حکم اور مارچ کے ربط حوالے سے جو شکوک وشبہات پیدا هوگئے تھے اب حتم هو چکے هیں اور آج تمام سیاسی جماعتوں کا ایک واضح اور مشترکہ موقف اس بات کی دلیل هے کۂ تمام پاکستانی انتخابات کے زریعے تبدیلی چاہتے هیں کسی دوسرے طریقے سے نہیں اور یۂ طے هوجکی هے کۂ پاکستان کے سیاسی قوتیں اور جمہوریت کا تسلسل چاہتے هیں البتہ ایک اور طرف سے بھی وضاحت لازمی هے تاکہ لوگوں کے دلوں انکے بارے میں جو خدشات هیں وه دور هو جائیں
Israr Muhammad
16 جنوری, 2013 20:54
شیح الاسلام کے مارچ کےحوالے سے عدالت اعظمۂ کی وضاحت کے بعد سپریم کورٹ کے وزیراعظم کے بارے حکم اور مارچ کے ربط حوالے سے جو شکوک وشبہات پیدا هوگئے تھے اب حتم هو چکے هیں اور آج تمام سیاسی جماعتوں کا ایک واضح اور مشترکہ موقف اس بات کی دلیل هےکۂ تمام پاکستانی انتخابات اور ووٹ کے زریعے تبدیلی چاہتے هیںکسی دوسرے طریقے سے نہیں اور یۂ طے هے کۂ پاکستان کے سیاسی قوتیں اور عوام جمہوریت کا تسلسل چاہتے هیں البتہ ایک اور طرف سے بھی وضاحت لازمی هے تاکہ لوگوں کے دلوں انکے بارے میں جو خدشات هیں وه دور هو جائیں
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ایک عہد ساز فیصلہ

مذہب کا مطلب صرف بے لچک پن اور سخت گیری نہیں ہوتا، مذہبی آزادی میں ضمیر، خیالات، احساسات، عقیدہ سب شامل ہونا چاہئے-

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

بلاگ

صحت عامہ کا بنیادی مسئلہ

سیاسی جماعتیں اپنے حامیوں کو محض نعرے لگوانے کے بجاۓ تعمیری سرگرمیوں کے لئے کیوں متحرک نہیں کرتیں؟

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

شکایتوں کا بن جو میرا دیس ہے

شکایتی ٹٹو زنده قوم کی نشانی ہوتے ہیں۔ مستقل شکایت کرتے رہنا اب ہماری پہچان بن چکا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-