24 جولائ, 2014 | 25 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

حکومت اور قادری کے درمیان مذاکرات جاری

تحریک منہاج القرآن کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری سترہ جنوری کو لانگ مارچ کے شرکا سے خطاب کررہے ہیں۔ اے ایف پی فوٹو۔
تحریک منہاج القرآن کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری سترہ جنوری کو لانگ مارچ کے شرکا سے خطاب کررہے ہیں۔ اے ایف پی فوٹو۔

اسلام آباد: حکومتی ٹیم تحریک منہاج القرآن کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری سے مذاکرات کے لیے ڈی چوک پہنچ گئی۔

 مذاکراتی ٹیم میں افراسیاب خٹک، قمر زمان کائرہ، فاروق نائیک، امین فہیم، خورشید شاہ، مشاہد حسین سید، چوہدری شجاعت حسین، بابرغوری اور فاروق ستار افراد شامل ہیں۔

اس سے قبل ڈاکٹر قادری نے حکومت کو مطالبات کی منظوری کیلیے تین بجے تک کی ڈیڈ لائن میں مزید 45 منٹ کا اضافہ کردیا تھا۔

ڈان نیوز کے مطابق، انکا کہنا تھا کہ حکومتی ٹیم نے 45 منٹ مانگے تھے جو انہوں نے دے دیے ہیں اور اب مذاکرات 3:45 پر ہوں گے۔

جمعرات کو دھرنے کے چوتھے روز اپنے خطاب کے دوران انکا کہنا تھا کہ کچھ دیر بعد عوام اپنے مقدر کا فیصلہ خود کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ اگر کوئی پیش رفت نہ ہوئی تو آگے کے لائحہ عمل کا اعلان جلد کیا جائے گا۔

اس موقع پر انکا کہنا تھا کہ اب مذاکرات صرف صدر مملکت آصف علی زرداری سے ہوں گے اور یہ مذاکرات کا آخری موقع ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ آج معرکے کا آخری دن ہے، کل دھرنا نہیں ہوگا۔

ایک اندازے کے مطابق، اس ریلی میں تقریباً پچیس ہزار افراد شامل ہیں جو کہ موجودہ حکومت کے دور کی سب سے بڑی ریلی ہے۔

 اس سے قبل اپوزیشن جماعتوں نے بدھ کے روز جمہوریت کے تحفظ کا عزم اور بروقت انتخابات کا مطالبہ کیا تھا۔

 حزب اختلاف کی جماعتوں کے رائے ونڈ میں ہونے والے اجلاس میں جمہوریت کو پٹری سے اتارنے کی کوئی سازش کامیاب نہ ہونے دینے کا عزم کیا گیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز رحمان ملک نے پریس کانفرنس میں کہا تھا کہ دھرنے کے شرکا کے خلاف ٹارگٹڈ آپریشن کا پلان تیار کرلیا گیا ہے لیکن کارروائی کے دوران خواتین اور بچوں کو نقصان نہیں پہنچایا جائے گا۔

تاہم صدر زرداری نے اسلام آباد دھرنے کے شرکاء پر طاقت استعمال کرنے کے امکانات کو مسترد کردیا تھا اور رحمان ملک پر برہمی کا اظہار بھی کیا تھا۔

اس حصے سے مزید

کسی جنرل سے رابطہ نہیں ہے،طاہر القادری

پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ کا کہنا ہے کہ ہم فوج کو دعوت نہیں دے رہے، ملک میں مارشل لاء نہیں لگے گا۔

پاک و ہند سیکریٹری خارجہ 25 اگست کو ملیں گے

ترجمان وزارت خارجہ کے مطابق نوازشریف اور نریندر مودی نے مئی میں نئی دہلی میں اس ملاقات پر اتفاق کیا تھا۔

چوہدری نثار سے امریکی سفیر رچرڈ اولسن کی ملاقات

خطے میں استحکام کے لیے پاک امریکہ تعاون اور رابطہ کاری کو فروغ دینا ہوگا، وزیر داخلہ چوہدری نثار۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (3)

Mohsin
17 جنوری, 2013 16:57
100%
ASHRAF
18 جنوری, 2013 06:12
Zardari is still here as a boss. Qadri sb looser.................. Zadari sb smart man.....................
amjad
18 جنوری, 2013 08:30
may pak live long
سروے
مقبول ترین
قلم کار

بے وجہ پوائنٹ اسکورنگ

ہوسکتا ہے عمران خان پی ایم ایل-ن کی حکومت گرانا چاہتے ہوں لیکن کیا وہ واقعی ملک اور اسکے جمہوری اداروں کے لئے خطرہ ہیں؟

کیا بڑا بہتر ہے؟

ہم اپنی جنوب ایشیائی شناخت سے پیچھا کیوں چھڑانا چاہتے ہیں جو تاریخی اعتبار سے عرب کے مقابلے میں کہیں زیادہ مالامال ہے؟

بلاگ

وزیرستان کے اکھاڑے سے

کشتی کا تو پتا نہیں اصلی ہے یا نہیں لیکن ہم نے ان پہلوانوں کو کسرت اکٹھے ہی کرتے دیکھا ہے۔

کھیلنے دو: گراؤنڈز کہاں ہیں؟

سیدھی سی بات ہے، ملائی تبھی زیادہ اور بہترین ہوگی جب دودھ زیادہ ہوگا-

مووی ریویو: پیزا - پلاٹ اچھا ہے

اگرچہ سکرین پلے کافی کمزور ہے مگر فلم کی کہانی میں آنے والے موڑ دیکھنے والوں کی دلچسپی برقرار رکھتے ہیں۔

جہادی برائے فروخت

اگر اب بھی سمجھ نہ آئی تو پاکستان کا حشر بھی عراق و شام سے مختلف نہیں ہوگا۔