21 اپريل, 2014 | 20 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

لاہور: مکان کی چھت گرنے سے پانچ ہلاک

۔۔۔فائل فوٹو اے ایف پی۔
۔۔۔فائل فوٹو اے ایف پی۔

لاہور: لاہور کے علاقے ٹبی سٹی میں ایک خستہ حال مکان کی چھت گرنے سےتین بچوں سمیت ایک ہی خاندان کے پانچ افراد موقع پر ہی ہلاک ہوگئے۔ 

 واقعہ کی اطلاع ملتے ہی امدادی ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں۔

لاشوں کو میو اسپتال منتقل کیا گیا۔

علاقہ مکینوں کے مطابق عمارت پرانی ہونے کی وجہ سے خستہ حال ہوچکی تھی اور مرمت نہ ہونے کی وجہ سے حادثہ پیش آیا۔

تھانہ ٹبی سٹی کے علاقے میں گزشتہ رات سے ہونیوالی بارش کی پیش نظر اچانک صبح مکان کی چھت گر گئی جس کے باعث ایک ہی خاندان کے پانچ افراد موقع پر ہی ہلاک ہوگئے ۔

ہلاک ہونے والے میں انس، سبحان، میرب، محمد شہزار اور کنول بیگم شامل ہے۔

اہل خانہ کا کہنا تھا کہ گزشتہ پانچ سال سے وہ اسی مکان میں رہائش پذیر تھے اور مالک مالکان کو کئی بار چھت کی مرمت کا کہا تھا۔

اہل علاقہ کا یہ بھی کہنا ہے کہ اندرون شہر میں ایسی کئی خستہ حال عمارتیں اور گھر موجود ہیں جو کسی بھی وقت گر سکتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ضلع انتظامیہ کو ہنگامی طور پر عمارتوں کی مرمت کیلئے موثر اقدامات کرنے چاہیے۔

اس حصے سے مزید

'طالبان کے مطالبات قبول کرنے میں کوئی حرج نہیں'

جماعتِ اسلامی کے امیر سراج الحق کا کہنا تھا کہ حکومت کو چاہیے کہ وہ مطالبات پر سنجیدگی سے غور کرے۔

وزیر اعظم کیخلاف توہینِ عدالت کی درخواست مسترد

لاہور ہائی کورٹ نے اپنے فیصلے میں مؤقف اختیار کیا کہ وزیرِ اعظم کو آئین کے تحت استثنیٰ حاصل ہے۔

ڈیرہ غازی خان: ٹریفک حادثے میں 14 ہلاکتیں

یہ واقعہ ڈیرہ غازی خان کے علاقے کوٹ چٹھہ میں اس وقت پیش آیا جب ایک تیز رفتار بس اسٹاپ پر کھڑے لوگوں پر چڑھ گئی۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے

دو قومی نظریہ اور ہندوستانی اقلیتیں

دو قومی نظریہ مسلمانوں اور ہندوؤں میں تو تفریق کرتا ہے لیکن دیگر اقلیتوں، خاص کر دلتوں کو یکسر فراموش کرتا ہے۔