25 اپريل, 2014 | 24 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

شاہ رخ جتوئی کو گواہوں نے شناخت کر لیا

مقتول شاہ زیب اور ملزم شاہ رخ جتوئی۔ فائل فوٹو آن لائن۔۔۔

کراچی: شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی کو دو گواہوں نے شناخت کرلیا ہے۔

شاہ رخ کو دبئی میں گرفتار کر کے دو روز قبل ہی کراچی لایا گیا تھا جہاں پولیس نے شارخ اور تین دوسرے ملزمان کے جسمانی ریمانڈ میں 23 جنوری تک توسیع کرا لی تھی۔

انہیں ہفتے کو شناخت پریڈ کیلیے جوڈیشل ریمانڈ کیلیے پیش کیا گیا دو وینی شاہدین نے انہیں شاہ کو شناخت کرتے ہوئے کہا کہ اسی شخص نے شاہ زیب پر گولیاں چلائی تھیں جس کے باعث وہ ہلاک ہو گیا۔

ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ اصغر خان کے بیس سالہ بیٹے شاہ زیب کو 24 اور 25 دسمبر کی درمیانی شب اس وقت گولیاں مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا جب وہ اپنی بہن کے ہمراہ کنٹری کلب اپارٹمنٹ میں ہونے والی شادی کی تقریب سے واپس آ رہے تھے۔

سپریم کورٹ آف پاکستان نے اس واقعے پر سوموٹو ایکشن لیا تھا۔

شاہ رخ کے علاوہ دیگر ملزمان نواب سراج علی تالپور، ان کے بھائی نواب سجاد علی تالپور اور ان کے ملازم غلام مرتضیٰ لاشاری کو سات جنوری سے پولیس کی حراست میں لیا ہوا ہے۔

شاہ کے والد سکندر جتوئی کو بھی اپنے بیٹے کو بیرون ملک فرار کرانے کے الزام میں حراست میں لیا تھا تاہم ٹھوس ثبوت نہ ہونے پر انہیں بری کر دیا گیا تھا۔

سپریم کورٹ 29 جنوری کو اس کیس کی سماعت کرے گی۔

اس حصے سے مزید

کراچی: بم دھماکے میں انسپکٹر شفیق تنولی سمیت چار ہلاک

دھماکہ پرانی سبزی منڈی کے قریب ہوا، جس میں متعدد افراد کے زخمی ہونے کی بھی اطلاعات ہیں۔

'لاپتہ بلوچ افراد پر پروگرام سے آئی ایس آئی ناراض تھی'

ممتاز صحافی اور اینکر حامد میر نے کہا ہے کہ وہ اپنے اہلِ خانہ کی سیکیورٹی کے متعلق سخت فکر مند ہیں۔

ایم کیو ایم سندھ حکومت میں شامل

رؤف صدیقی کو وزیرِ صنعت اور ڈاکٹر صغیر کو وزارتِ صحت کا قلمدان سونپا گیا ہے۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

تھری جی: اسکیل، رفتار اور بھروسے کا سوال

دیکھا جائے تو یہ سارا بکھیڑا بنیادی طور پر صرف ساٹھ لاکھ صارفین کے لئے ہے-

مقدّس ریپ

دو دن وہ اسی گاؤں میں ماں کے بازؤں میں تڑپتی رہی۔ گھر میں پیسے ہی کہاں تھے کہ علاج کے لئے بدین تک ہی پہنچ پاتے۔

کیپٹن امیریکہ: دی ونٹر سولجر -- ایک اور سیکوئل

ایک لازمی سیکوئل ہونے کے ناطے، فلم کو دلکش، سادہ اور قابل قبول ہونے کی نیت کے ساتھ بنایا گیا ہے۔

میڈیا اور نقل بازی کا کینسر

ایسا نہیں کہ میں کوئی پہلا انسان ہوں جس کے خیالات پر نقب لگائی گئی ہو، مگر آخری ضرور بننا چاہتا ہوں