02 اکتوبر, 2014 | 6 ذوالحجہ, 1435
ڈان نیوز پیپر

کشمیریوں کو ایٹمی حملے کیلئے تیار رہنے کی ہدایات

لائن آف کنٹرول۔ فوٹو رائٹرز۔۔۔

سری نگر: ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں حکام نے مکینوں کو ممکنہ ایٹمی جنگ کیلیے تیار رہنے کی وارننگ دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ بم پروف گھر بنانے کے ساتھ ساتھ دو ہفتوں کا پانی اور کھانے پینے کی اشیا جمع کرنے کی ہدایت بھی دی ہے۔

خطے میں اچانک اس ایٹمی حملے کی فی الحال کوئی وجوہات نہیں بتائی گئی ہیں تاہم حال ہی میں دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات اس وقت اس وقت کشیدہ صورتحال اکتیار کر گئے تھے جب لائن آف کنٹرول پر دونوں جانب سے سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی تھی۔

کشمیری پولیس نے یہ پیغام پیر کو گریٹر کشمیر اخبار میں چھپوایا تھا۔

نوٹس میں لوگوں کو مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ بم پروف گھر بنانے کے ساتھ ساتھ کھانے پینے کی اشیا بھی جمع کر لیں۔

اس میں اس بات کا بھی مشورہ دیا گیا ہے کہ کیمیائی ہتھیاروں کے حملوں کی صورت میں سک طریقے سے خود کو محفوظ رکھا جا سکتا ہے۔

اس حوالے سے جب مقامی حکام سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کوئی جواب نہیں دیا۔

اس حصے سے مزید

اترپردیش میں ٹرینوں کی ٹکر سے 12 افراد ہلاک

شمالی ہندوستان میں ریاست اترپردیش کے شہر گورکھپور میں دو ٹرینوں میں تصادم سے کم از کم 12 افراد ہلاک اور 45 زخمی ہو گئے۔

مودی کا بیوروکریٹس کو باتھ روم صاف کرنیکا حکم

ہندوستانی وزیر اعظم نےمہاتما گاندھی کی سالگرہکے موقع پر بیورو کریٹس کو آفسز اور باتھ روم کی صفائی کا حکم دیا ہے۔

مودی، اوباما ملاقات، کشمیریوں کا احتجاج

اس ملاقات میں دونوں رہنماؤں نے دہشت گردی سے نمٹنے اور تباہ کن ہتھیاروں کا پھیلاؤ روکنے پر اتفاق کیا۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماؤں اور بچوں کے قاتل ہم

پاکستان سے کم فی کس آمدنی رکھنے والے ممالک پیدائش کے دوران ماؤں اور بچوں کی اموات پر قابو پا چکے ہیں۔

تبدیلی کا پیش خیمہ

اکثر ایسے بڑے واقعات پیش آتے ہیں جو تبدیلی کے عمل کو تیز کردیتے ہیں، مگر ایسے حالات کسی فرد کے پیدا کردہ نہیں ہوتے۔

بلاگ

!گو نواز گو

اس ملک میں پڑھے لکھے لوگوں کی قدر ہی نہیں۔ جب تک پڑھے لکھوں کو وی آئی پی پروٹوکول نہیں دیا جاتا یہ ملک ترقی نہیں کرسکتا

قدرتی آفات اور پاکستان

قدرتی آفات سے پہلے انتظامات پر ایک ڈالر جبکہ بعد میں سات ڈالر خرچ ہوتے ہیں، اس کے باوجود ہم پہلے سے انتظامات نہیں کرتے۔

مقابلہ خوب ہے

کوئی دنیا کے در در پر پھیلے ہمارے کشکول کی زیارت کرے، پھر اس میں خیرات ڈالنے والوں کو فتح کرنے کے ہمارے عزم بھی دیکھے۔

پاکستان میں ذہنی بیماریاں اور ہماری بے حسی

آخر ذہنی بیماریوں کے شکار کتنے اور لوگوں کو اپنے گھرانوں کی بے حسی، اور معاشرے کی جانب سے ٹھکرائے جانے کو جھیلنا پڑے گا؟