18 ستمبر, 2014 | 22 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

ہندوستان میں خواتین ٹیم کی سیکیورٹی اطمینان بخش، ذکا اشرف

پاکستانی ٹیم۔ – فائل فوٹو سارہ فاروقی/ڈان ڈاٹ کام

گجرانوالہ: پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین ذکا اشرف نے منگل کے روزاس اعتماد کا اظہار کیا کہ عنقریب ہونے والے ورلڈ کپ کے دوران ہندوستانی حکام انکی خواتین ٹیم کی سیکیورٹی کے مناسب انتظامات کرینگے۔

بائیں بازو کی شدت پسند تنظیم شیو سینا کیجانب سے دی جانے والی دھمکیوں کے بعد انٹرنیشنل کرکٹ کاونسل (آئی سی سی) نے پاکستان کے میچز ممبئی سے کٹک منتقل کردئیے تھے۔ یہ ٹورنامنٹ اکتیس جنوری سے سترہ فروری تک ہندوستان میں منعقد ہوگا۔

گجرانوالہ میں اخباری رپورٹروں سے بات کرتے ہوئے ذکا اشرف نے کہا، "پاکستانی خواتین ٹیم کی سیکیورٹی آئی سی سی کی ذمہ داری ہے اور ہمیں آئی سی سی پر بھروسہ ہے اور اس معاملہ پر ہم انکے ساتھ رابطہ میں ہیں۔"

میچز کا مقام تبدیل ہونے کے باوجود بائیں بازو کی دو اور تنظیموں، بجرنگ دل اور کلنگا سینا نے بھی پاکستان کے میچز میں خلل ڈالنے کی دھمکیاں دی ہیں۔ تاہم زکا اشرف پراعتماد ہیں کہ آئی سی سی اس صورتحال سے نمٹنے میں کامیاب رہے گی۔

پاکستانی ٹیم چھبیس جنوری کو ہندوستان کیلئے روانہ ہوگی۔

چئیرمین بی سی بی کا کہنا تھا کہ، "میرے خیال سے سیاست اور کھیل کو علیحدہ رکھنا چاھئیے اور اسطرح کے معاملات کا منظر عام پہ آنا افسوسناک ہے۔"

کشمیر کے متنازعہ علاقہ میں گزشتہ دنوں کراس بارڈر حملوں کے نتیجے میں چار فوجیوں کی ہلاکت کے بعد ہندوستان اور پاکستان کے تعلقات تناو کا شکار ہیں۔

ان واقعات کے بعد نو پاکستانی ہاکی کھلاڑی بھی ہندوستانی ہاکی لیگ سے نکال کر گھر بھیج دئیے گئے تھے۔

خواتین کے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں پاکستانی ٹیم کو گروپ بی میں آسٹریلیا، نیوزی لینڈ اور ساوتھ افریقہ کیساتھ رکھا گیا ہے جو اپنے تمام میچز کٹک میں کھیلے گی۔ جبکہ انگلینڈ، سری لنکا، ویسٹ انڈیز اور ہندوستان گروپ اے میں ہیں۔

حال ہی میں دونوں ملکوں کے درمیان کرکٹ روابط بحال ہوئے تھے جب پاکستانی ٹیم اپنے ہمسائے کے پاس دو ٹی ٹوئنٹی اور تین ایک روزہ میچز کھیلنے گئی تھی۔ یہ پانچ سال میں انکا پہلا دورہ تھا۔

ذکا اشرف پرامید تھے کہ دو طرفہ تعلقات بہتری کیجانب گامزن رہینگے۔ انہوں نے کہا کہ، "ہمارے قائل کرنے پر ہندوستان دورہ ممکن بنانے پہ راضی ہوا تھا اور میں امید کرتا ہوں کہ تعلقات اسی طرح جاری رہینگے۔"

اس حصے سے مزید

ورلڈکپ کی فتح کھلاڑیوں کے اتحاد سے ہی ممکن ہے، شاہد آفریدی

ہمیں ایک دوسرے کا ساتھ دینا چاہئے کیونکہ ہم لوگوں کو ایک بار پھر خوش کرنا چاہتے ہیں جنھیں متعدد مایوسیوں کا سامنا ہے۔

آسٹریلیا میں جیت کر تاریخ دہرائیں گے، مصباح الحق

قومی ٹیم کے کپتان کا کہنا تھا کہ عمران خان سے ملاقات ہوتی رہتی ہے اور ورلڈ کپ کپ کےلیےان کے تجربے سے فائدہ اٹھائیں گے۔

'آفریدی کپتانی کو آسان نہ سمجھیں'

جاوید میانداد نے ٹی ٹوئنٹی کے نئے کپتان کو مشورہ دیا ہے کہ وہ اپنی بیٹنگ بہتر بنائیں۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

مزید جمہوریت

نظام لپیٹ دینے اور امپائر کی باتیں کرنے کے بجائے ہمارا مطالبہ صرف مزید جمہوریت ہونا چاہیے، کم جمہوریت نہیں۔

تبدیلی آگئی ہے

ملک میں شہری حقوق کی عدم موجودگی میں عوام اب وسیع تر بھلائی کا سوچنے کے بجائے اپنے اپنے مفاد کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔

بلاگ

وارے نیارے ہیں بے ضمیروں کے

ماضی ہو یا حال، اربابِ اختیار و اقتدار کی رشوت اور بدعنوانی کے خلاف کھوکھلی بڑھکوں کی حیثیت محض لطیفوں سے زیادہ نہیں۔

کراچی میں فرقہ وارانہ دہشتگردی

کراچی ایک مرتبہ پھر فرقہ وارانہ دہشت گردی کی زد میں ہے اور روزانہ کوئی نہ کوئی بے گناہ سنی یا شیعہ اپنی جان گنوا رہا ہے۔

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔

کریچر - تھری ڈی: گوڈزیلا یا ڈیوی جونز کا کزن؟

یہ کہنا غلط نہ ہوگا بپاشا ہارر تھرلرز تک محدود ہوگئی ہیں جبکہ عمران عبّاس نے انکے گرد چکر کاٹنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔