16 ستمبر, 2014 | 20 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

ووٹرز تصدیقی عمل میں فوج کی عدم شمولیت کیخلاف احتجاج

صوبائی الیکشن کے دفتر کے باہر اپوزیشن جماعتوں کا احتجاج پی پی آئی فوٹو

 ڈان نیوز کے مطابق بدھ کے روز کراچی میں صوبائی الیکشن کمیشن کے دفتر کے باہر جماعت اسلامی، ن لیگ،  تحریک انصاف، سنی تحریک، جے یو پی، عوامی تحریک سمیت دیگر اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے احتجاجی دھرنا دیا گیا۔

 اس موقع پر رہنماؤں کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے احکامات کو نظر انداز کرکے ووٹرز کے تصدیقی عمل کو مشکوک بنایا گیا ہ

 مظاہرین کا کہنا تھا کہ چیف الیکشن کمشنر فخر الدین جی ابراہیم نےکراچی میں حلقہ بندیاں نا ہونے کے متعلق بیان دیکر توہین عدالت کی ہے۔

 اپوزیشن جماعتوں کا کہنا ہے کہ شہر میں امن وامان کے قیام کے لئے شفاف انتخابات ناگزیر ہیں۔

 اسکے علاوہ رہنماؤں نے چھبیس جنوری سے تین روز تک الیکشن کمیشن کے دفتر کے باہر احتجاجی دھرنا دینے کا بھی اعلان کیا۔

اس حصے سے مزید

پی آئی اے کی پرواز میں تاخیر پر دو ملازمین معطل

مسافروں نے تاخیر کی وجہ سابق وزیرداخلہ رحمٰن ملک اور رکن قومی اسمبلی رمیش کمار کو قراردے کر انہیں جہاز سے اتار دیا تھا۔

کراچی: پرتشدد واقعات میں خاتون سمیت دو افراد ہلاک

پولیس نے پچاس سے زائد ڈکیتیوں میں ملؤث ایک خطرناک گینگ کے تین ملزمان کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

فلائٹ میں تاخیر، مسافروں نے رحمان ملک کو جہاز سے اُتار دیا

پی پی پی کے سینیٹر اور مسلم لیگ ن کے ایم این اے کی وجہ سے اسلام آباد جانے والی پرواز میں ڈھائی گھنٹے کی تاخیر ہوگئی تھی۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

Israr Muhammad
23 جنوری, 2013 18:42
آجکل ملک کے اندر مک مکا کا بڑا چرچا هے ممکن یہاں بھی مک مکا اثرانداز هوا هو سپریم کورٹ کے احکامات بڑے واضح هیں پھر بھی "مشکل هے" والا جملہ معنی خیز هے اور ساتھ میں یہی جملہ الیکشن کمیشن کی کمزوری بھی ظاہر کرتی هے پہلے سارے ملک میں خلقۂ بندی اور اب خاموشی کیوں
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ڈیم، کینال، بیراج، اور ماحول

ہندوستانی پنجاب میں زیادہ بارشیں ہوئیں، جسکی وجہ سے اپ سٹریم کا پانی پاکستانی چناب اور جہلم میں بہہ آیا ہے

انتخابی اصلاحات: اگلا قدم

بحیثیت قوم ہمیں اس بات کو یقینی بنانا ہوگا، کہ اس معاملے میں سچ سب کے سامنے آئے، اور کوئی شک شبہہ باقی نا رہے۔

بلاگ

اجمل کے بغیر ورلڈ کپ جیتنا ممکن

خود کو ورلڈ کلاس باؤلنگ اٹیک کہنے والے ہمارے کرکٹ حکام کی پوری باؤلنگ کیا صرف اجمل کے گرد گھومتی ہے۔

کریچر - تھری ڈی: گوڈزیلا یا ڈیوی جونز کا کزن؟

یہ کہنا غلط نہ ہوگا بپاشا ہارر تھرلرز تک محدود ہوگئی ہیں جبکہ عمران عبّاس نے انکے گرد چکر کاٹنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔

جب خاموشی بہتر سمجھی جائے

اس بات کو تسلیم کرنا ہو گا کہ برطانوی پاکستانیوں کے پاس جنسی استحصال پر بات کرنے کے لیے آزادی نہیں ہے۔

نائنٹیز کا پاکستان - 6

اندازے کے مطابق اس دور میں پاکستانی فوج ہر ماہ اوسط ساڑھے سات کروڑ ڈالر ’مجاہدین‘ پر خرچ کر رہی تھی۔