16 اپريل, 2014 | 15 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

شاہ رخ جتوئی جوڈیشل ریمانڈ پر بچہ جیل منتقل

فائل فوٹو۔۔۔

کراچی: انسداد دہشت گردی کی عدالت نے شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی کو جوڈیشل ریمانڈ پر کراچی میں بچوں کی جیل میں بھیج دیا ہے۔

ڈان نیوز کے مطابق کراچی میں شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی سمیت، سراج تالپور، سجاد تالپور اور غلام مرتضیٰ لاشاری کو انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کردیا گیا۔

میڈیکل رپورٹ میں ملزم شاہ رخ کی عمر 18 سال سے کم ہونے پر انہیں بچوں کی جیل منتقل کرنے کا حکم دیا گیا۔

ملزم شاہ رخ کے میڈیکل ٹیسٹ کے مطابق اس کی عمر 17 سے18 سال ہے۔

گزشتہ روز ملزم شاہ رخ کی عمر کا تعین کرنے کے لئے سول اسپتال میں پولیس سرجن ڈاکٹر جلیل کی سربراہی میں ٹیم نے اُس کے میڈیکل ٹیسٹ لئے تھے۔

ذرائع کے مطابق رپورٹ تیار کر لی گئی ہے جس میں ملزم شاہ رخ جتوئی بالغ یا سن بلوغت کے قریب بتایا گیا ہے۔

باخبر ذرائع کے مطابق پاسپورٹ پرملزم شاہ رخ جتوئی کی عمر 17 سال ایک مہینہ ہے۔

عدالت نے ملزم شاہ رخ جتوئی کی ميڈيکل رپورٹ منظور کرنے کے بعد تفتیشی افسرکو30 جنوری کو چالان پیش کرنے کی ہدایت کردی۔

کورٹ نے کیس دیگر تین ملزمان سراج تالپور، ان کے بھائی سجاد تالپور اور ان کے ملازم غلام مرتضیٰ لاشاری کو سینٹرل جیل کراچی بھیج دیا ہے جہاں انہیں 29 جنوری تک رکھا جائے گا۔

ان چاروں ملزمان کو 30 جنوری کو عدالت میں دوبارہ پیش کیا جائے گا۔

اس سے قبل پولیس کا کہنا تھا کہ ملزم سے آلہ قتل ایک نائن ایم ایم پستول اور چار راؤنڈز بھی برآمد کرلیے گئے ہیں جبکہ اس کے ساتھ ساتھ ایک کار بھی برآمد کی گئی ہے۔

واضح رہے کہ بیس سالہ شاہ زیب خان کو دسمبر 2012 میں درخشاں تھانے کی حدود میں گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا اور چیف جسٹس آف پاکستان افتخار محمد چوہدری نے اس واقعے پر سوموٹو ایکشن لیا تھا۔

شاہ رخ جتوئی، سراج اور سجاد تالپور اور ان کے ملازم لاشاری کو قتل میں ملوث ہونے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔

اس حصے سے مزید

خیرپور میں گیس پائپ لائن دھماکے سے تباہ

پولیس کے مطابق دھماکے کے بعد سندھ کے مختلف شہروں میں گیس کی فراہمی معطل ہوگئی ہے۔

الطاف حسین نفرت اور تفریق ختم کرنے کے خواہاں

ایم کیو ایم کے قائد نے کہا کہ سندھی عوام کو اپنے حقوق کے لیے ایک ہو کر متحرک ہونا پڑے گا۔

'جمہوریت کو خطرہ ہوا تو وزیر اعظم کا ساتھ دینگے'

قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈرخورشید شاہ نے کہاہے کہ جمہوریت یاحکومت کو کوئی خطرہ نہیں، اگر ہوا تو وزیر اعظم کاساتھ دینگے۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

جادو کا چراغ: نبض کے بھید اور ایک برباد محبت

بوڑھے دانا طبیب نے مختلف ناموں پر بدلتی نبض کو دیکھ کر لڑکی کی پراسرار بیماری کا علاج کیا-

سارے جہاں سے مہنگا - ریویو

فلم میں ایک اچھوتا خیال پیش کیا گیا ہے کہ کس طرح 'جگاڑ' کر کے ایک مڈل کلاس آدمی مہنگائی کا توڑ نکالتا ہے۔

فتویٰ براۓ سیکولر ازم

فرقہ واریت کے ہولناک عفریت کی خون آشام گرفت میں جکڑے پاکستان کی بقا صرف اور صرف سیکولر ازم میں ہے.

ڈیئر پرائم منسٹر

بس اتنا بتانا چاہتا ہوں ہوں کہ آپ بالکُل بھی فکرمند نہ ہوں یہاں سب امن سُکھ چین اور شانتی کا دور دورە ہے۔