22 جولائ, 2014 | 23 رمضان, 1435
ڈان نیوز پیپر

افغانستان: خودکش دھماکے میں دس پولیس اہلکار ہلاک

فائل فوٹو رائٹرز۔۔۔

کابل: افغانستان کے شمال مشرقی شہر قندوز کے گنجان آباد علاقے میں ہفتے کو ہونے والے دھماکے میں کم از کم 10 پولیس اہلکار ہلاک اور 18 افراد زخمی ہو گئے جن میں سے اکثریت شہریوں کی ہے۔

قندوز پولیس کے ترجمان سید سرور حسینی نے اے ایف پی کو بتایا کہ دھماکے میں انسداد دہشت گردی کی پولیس کے سربراہ، ٹریفک پولیس کے سربراہ اور ان کے گارڈز سمیت دس افراد ہلاک ہو گئے جبکہ 18 افراد زخمی بھی ہوئے جس میں 13 شہری اور 5 پولیس اہلکار شامل ہیں۔

صوبائی گورنر کے ترجمان عنایت اللہ خلیق نے ہلاک اور زخمی ہونے والوں کی تصدیق کی ہے۔

پولیس حکام کے مطابق دھماکہ مقامی وقت کے مطابق شام 5 بجکر 20 منٹ پر ہوا۔

قندوز کے محکمہ صحت کے سربراہ سعد مختار کے مطابق دھماکے میں 19 افراد زخمی ہوئے۔

ابھی تک کسی نے بھی ان حملوں کی ذمے داری قبول نہیں کی لیکن ماضی میں طالبان عسکریت پر ان حملوں کی ذمے داری عائد کی جاتی رہی ہے۔

اس سے قبل ہفتے کو ہی جنوب مشرقی صوبے غزنی میں ہونے والے ایک اور خودکش دھماکے میں 2 شہری ہلاک ہو گئے تھے۔

واضح رہے کہ جمعے کو صوبی کپیسا میں نیٹو کے کاررواں پر کار میں موجود ایک خودکش بمبار نے حملہ کر دیا تھا جس سے کم از کم پانچ شہری ہلاک اور 15 زخمی ہو گئے تھے۔

اس حصے سے مزید

کابل: خود کش حملے میں تین غیر ملکی مشیر ہلاک

ابتدائی رپورٹس میں غیر ملکی مشیروں کی شہریت کے بارے تفصیلات موصول نہیں ہوسکی ہیں۔

'پاکستان، افغانستان ناکام ہوئے تو القاعدہ واپس آ جائے گی'

افغانستان میں کامیابی کا دارومدار پاکستان کی اپنی سرحدوں میں شدت پسندوں کے خلاف کارروائی پر بھی ہے، امریکی جنرل۔

کابل ایئرپورٹ پر طالبان کا حملہ، پروازیں منسوخ

ایک افغان جنرل افضل امان کا کہنا ہے کہ مسلح افراد نے کابل میں محوِ پرواز آئی ایس اے ایف کے جیٹ طیاروں پر بھی فائرنگ کی۔


تبصرے بند ہیں.

تبصرے (1)

افشاں – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ
04 فروری, 2013 14:19
ہماری دلی تعزیت، اور نيک دعائيں ان بہادر پولیس اہلکاروں کے سوگوار خاندانوں اور دوستوں کے ساتھ ہيں جو کابل میں طالبان کی ايک دہشت گرد کارروائی میں جاں بحق ہوۓ۔ نہايت ہی پریشان کن ہے کہ ایسے ظالمانہ دہشتگرد حملے ميں وہ پولیس اور پاکستانی پولیس جوان جاں بحق ہوۓ جو ان غير انسانی درندوں کيخلاف ملک کا دفاع کررہے تھے۔ اس طرح کی سفاکانہ کارروائیوں سے ان کا حقيقی سیاہ چہرہ، برائی کی ذہنیت، اور دہشت گردی سے خطہ کو لاحق سنگین خطرہ واضح طور سے ظاہر ہوتا ہے۔ يہ ذکر کرنا نہايت ضروری ہے کہ امریکی عوام اور امریکی انتظامیہ انتہا پسندوں کے خلاف افغانی قانون نافذ کرنے والے اداروں کی طرف سے دی گئی زبردست قربانیوں کا اور ملک کو اس عسکریت پسندی کی خوفناک قتل کی کارروائیوں کی وجہ سے شدید نقصان کا سامنا کرنے کو دل سے قدر کرتے ہیں۔ ہم افغان اور پاکستانی عوام کے ساتھ ان غیر انسانی درندوں کے خلاف ان کی جاری جنگ ميں ساتھ ساتھ کھڑے ہیں جو بلا امتیاز اور بغیر کسی پچھتاوے کے معصوم لوگوں کے قتل میں ملوث ہيں۔
سروے
مقبول ترین
قلم کار

کیا بڑا بہتر ہے؟

ہم اپنی جنوب ایشیائی شناخت سے پیچھا کیوں چھڑانا چاہتے ہیں جو تاریخی اعتبار سے عرب کے مقابلے میں کہیں زیادہ مالامال ہے؟

پاکستان کے عام آدمی کا احوال

پڑھے لکھے نوجوان جو پاکستان کے چھوٹے شہروں میں رہتے ہیں وہ سب سے زیادہ مشکلات کا شکار ہیں

بلاگ

مووی ریویو: پیزا - پلاٹ اچھا پے

اگرچہ سکرین پلے کافی کمزور ہے مگر فلم کی کہانی میں آنے والے موڑ دیکھنے والوں کی دلچسپی برقرار رکھتے ہیں۔

جہادی برائے فروخت

اگر اب بھی سمجھ نہ آئی تو پاکستان کا حشر بھی عراق و شام سے مختلف نہیں ہوگا۔

تحریکِ انصاف سے معزرت کے ساتھ

عمران خان کو ملکی اداروں پر تو اعتماد نہیں، تو پھر کیا پی ٹی آئ افغانستان کی طرح "انٹرنیشنل آڈٹ" چاہتی ہے؟

قومی شناختی کارڈ اور گونگا مصلّی -- 3

پورے پنجاب کے دیہی علاقوں میں وارداتوں کے بعد شک کی بنا پر سب سے زیادہ پکڑی جانے والی قوم مصلّیوں کی ہے۔