02 ستمبر, 2014 | 6 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

سرفراز، گل کی بلے بازی کی بدولت پاکستان میچ میں واپس

عمر گل۔ – اے ایف پی فائل فوٹو

ایسٹ لندن: وکٹ کیپر سرفراز احمد اور فاسٹ بالر عمر گل کی شاندار بلے بازی کی بدولت ہفتہ کے روز ساوتھ افریقہ انویٹیشن الیون کیخلاف کھیلے جارہے چار روزہ وارم اپ میچ کے دوسرے دن پاکستان کی کھیل میں واپسی ممکن ہو پائی۔

سرفراز کے ترانوے اور گل کے انچاس رنز نے مجموعی اسکور کو کل کے اسکور ایک سو اٹھتر سات آوٹ سے بڑھا کر تین سو انتیس تک پہنچا دیا۔

اسکے بعد عمر گل نے بہترین بالنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے شروع ہی میں دو وکٹیں حاصل کرکے انویٹیشن الیون کو دباو کا شکار کردیا۔ میزبان ٹیم دوسرے روز کھیل کے اختتام تک سات وکٹوں پر دو سو تیرہ رنز بنانے میں کامیاب رہی۔

جنوبی افریقہ کیخلاف جمعہ سے شروع ہونے والے پہلے ٹیسٹ میچ سے پہلے یہ پاکستان کا واحد وارم اپ میچ ہے۔

پچیس سالہ سرفراز احمد نے، جو سابق انڈر نائینٹین کپتان بھی ہیں اور اس سے پہلے آسٹریلیا کیخلاف ٹیسٹ میں پاکستان کی نمائندگی کرچکے ہیں، عمر گل کیساتھ ساتویں وکٹ کی شراکت میں اکیاسی قیمتی رنز جوڑے۔

حالانکہ سعید اجمل نئی بال لئے جانے کے فوراً بعد ہی پویلین لوٹ گئے تاہم سرفراز نے نویں وکٹ پہ پہلے جنید خان کیساتھ پینتالیس اور پھر آخری وکٹ کیلئے محمد عرفان کیساتھ انچاس رنز کا اضافہ کیا۔ وہ آوٹ ہونے والے آخری کھلاڑی تھے اور ہارمر کی گیند پر باونڈری پر کیچ آوٹ ہوئے۔

سرفراز نے ایک سو اکسٹھ بالوں کا سامنا کیا اور ایک چھکا اور بارہ چوکے لگانے میں کامیاب رہے۔

انویٹیشن الیوں کیجانب سے آف اسپنر ہارمر سب سے کامیاب بالر ثابت ہوئے انہوں نے اٹھاسی رنز دیکر پانچ وکٹیں حاصل کیں۔

بائیں ہاتھ سے بیٹنگ کرنے والے وان وین جارسفیلڈ نے جارحانہ انداز میں کھیلتے ہوئے بیانونے رنز جوڑے اور سعید اجمل کی بالنگ پر ایل بی ڈبلیو آوٹ ہوئے۔

اس حصے سے مزید

آسٹریلیا کو زمبابوے کے ہاتھوں اپ سیٹ شکست

زمبابوے نے سہ ملکی سیریز میں آسٹریلیا کو تین وکٹوں سے اپ سیٹ شکست دے کر 31 سال میں پہلی کامیابی حاصل کرلی۔

تیسرا ون ڈے، سری لنکا نے پاکستان کو شکست دے دی

پاکستان کی جانب سے دیئے گئے 103 رنز کے ہدف کو سری لنکن ٹیم نے تین وکٹوں کے نقصان پر باآسانی حاصل کرلیا۔

پاکستان اور سری لنکا کا فیصلہ کن معرکہ ہفتے کو

آف اسپنر سعید اجمل کی دستیابی مصباح الحق اور ٹیم مینجمنٹ کے حوصلہ کو بلند کرے گی۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

ماڈل ٹاؤن کیس: کچھ حماقتیں

حکمرانوں کے منع کرنے پر پولیس کی جانب سے مقتولین کی ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کی وجہ سے معاملہ مزید خراب ہوا۔

بیوروکریٹس کی یونین

ذاتی مفادات کے لیے چوری چھپے سیاسی ہونے سے زیادہ بہتر ہے کہ ریاست کے وسیع تر مفاد کے لیے کھلے عام سیاسی ہوا جائے۔

بلاگ

سستا خون: براۓ انقلاب

"انقلاب" سیاست چمکانے کے لیے ایک خوشنما لفظ بن چکا ہے، اور اسے مزید چمکانے کے لیے کارکنوں کا سستا خون بھی دستیاب ہے۔

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔

تاریخ کی تکرار

پولیس پر تشدد اور دہشت گردی کا الزام لگانے والے کیا اپنے گھروں پر کسی ایرے غیرے نتھو خیرے کو چڑھائی کی اجازت دیں گے؟

آبی مسائل کا ذمہ دار ہندوستان یا خود پاکستان؟

پاکستان میں پانی اور بجلی کے بحران کی وجہ پچھلے 5 عشروں سے پانی کے وسائل کی خراب مینیجمنٹ ہے۔