25 اپريل, 2014 | 24 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

اوپنرز کی بدولت پاکستانیز کی میچ پر گرفت مضبوط

حفیظ (83) اور جمشید (51) نے ایک مرتبہ پھر شاندار بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 142 رنز کی شراکت قائم کی۔ فائل فوٹو رائٹرز۔
حفیظ (83) اور جمشید (51) نے ایک مرتبہ پھر شاندار بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 142 رنز کی شراکت قائم کی۔ فائل فوٹو رائٹرز۔

ایسٹ لندن: اوپننگ بلے باز محمد حفیظ اور ناصر جمشید کی میچ میں دوسری سنچری پارٹنرشپ کی بدولت 'پاکستانیز' نے ساؤتھ افریقن انویٹیشن الیون کے خلاف اتوار کو بفالو پارک میں نمایاں برتری حاصل کرلی۔

مہمان ٹیم دن کے اختتام تک پانچ کھلاڑیوں کے نقٓصان پر 240 رنز بنا چکی تھی جبکہ اسے 312 رنز کی مجموعی برتری حاصل ہے۔

حفیظ (83) اور جمشید (51) نے ایک مرتبہ پھر شاندار بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 142 رنز کی شراکت قائم کی۔ واضح رہے کہ پہلی اننگز میں بھی دونوں اوپننگ بلے بازوں نے 105 رنز کی شراکت قائم کی تھی۔

حفیظ نے ایک بار پھر جارحانہ بلے بازی کی اور اپنی اننگ میں 13 دلکش چوکے اور ایک چھکا لگایا تاہم وہ پارٹ ٹائم سیمر اسٹیان وان زل کی بال پر آؤٹ ہوگئے۔

اگلے ہی اوور میں جمشید آؤٹ ہوگئے۔ انہوں نے 122 گیندیں کھیلیں جبکہ سات چوکے بھی انکی اننگز میں شامل تھے۔

تاہم ایک مرتبہ پھر پاکستانی مڈل آرڈر مشکلات سے دوچار رہا۔ اظہر علی، یونس خان اور اسد شفیق میچ میں دوسری بار خاطر خواہ کاکردگی دکھانے میں ناکام رہے۔ اس موقع پر کپتان مصباح الحق نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 51 ناقابل شکست رنز جوڑے۔

اوپنرز خصوصاً ناصر جمشید کی شاندار بلے بازی نے سیلیکٹرز کے لیے مشکل کھڑی کردی ہے کہ جعمے کو جوہانسبرگ میں شروع ہونے والے پہلے ٹیسٹ میں اننگ اوپن کون کرے گا۔ واضح رہے کہ توفیق عمر اس چار روزہ میچ میں پیر میں ہوئی انجری کے باعث شرکت نہیں کرسکے تھے۔

یاد رہے کہ توفیق عمر نے 2002-03 کے دورے پر جنوبی افریقہ کے خلاف شاندار بلے بازی تھی جہاں انہوں نے 70 رنز کی اوسط سے مجموعی طور پر 280 رنز بنائے تھے جس میں کیپ ٹاؤن میں اسکور کی گئی سنچری بھی شامل ہے۔

اس حصے سے مزید

اعجاز اور شعیب محمد نئے سلیکٹرز

سابق فیلڈنگ کوچ اعجاز احمد اور شعیب محمد پاکستان کرکٹ کی نئی سلیکشن کمیٹی کے چھ ارکان میں شامل کرلئے گئے ہیں۔

راشد کی تقرری پر ای سی بی کا دباؤ تھا، سیٹھی کا اقرار

چیئرمین نجم سیٹھی نے تسلیم کیا ہے کہ انگلش کرکٹ بورڈ راشد لطیف کی اہم عہدوں پر نامزدگی سے ناخوش تھا۔

'کپتان جو بھی ہو، کارکردگی مثالی ہونی چاہیے'

قومی ٹیم کے چیف سیلکٹر معین خان نے کہا ہے کہ قومی کرکٹ ٹیم کا کپتان نوجوان ہونا ضروری نہیں بلکہ اسکی کارکردگی مثالی ہو۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

تھری جی: اسکیل، رفتار اور بھروسے کا سوال

دیکھا جائے تو یہ سارا بکھیڑا بنیادی طور پر صرف ساٹھ لاکھ صارفین کے لئے ہے-

مقدّس ریپ

دو دن وہ اسی گاؤں میں ماں کے بازؤں میں تڑپتی رہی۔ گھر میں پیسے ہی کہاں تھے کہ علاج کے لئے بدین تک ہی پہنچ پاتے۔

کیپٹن امیریکہ: دی ونٹر سولجر -- ایک اور سیکوئل

ایک لازمی سیکوئل ہونے کے ناطے، فلم کو دلکش، سادہ اور قابل قبول ہونے کی نیت کے ساتھ بنایا گیا ہے۔

میڈیا اور نقل بازی کا کینسر

ایسا نہیں کہ میں کوئی پہلا انسان ہوں جس کے خیالات پر نقب لگائی گئی ہو، مگر آخری ضرور بننا چاہتا ہوں