23 اگست, 2014 | 26 شوال, 1435
ڈان نیوز پیپر

لائن آف کنٹرول پر بس سروس،تجارت دوبارہ شروع

۔۔۔۔۔۔۔۔۔اے ایف پی فوٹو
۔۔۔۔۔۔۔۔۔اے ایف پی فوٹو

سرینگر: ہندوستان کی جانب سے سرحدی حدود کی خلاف ورزی کے بعد بند کی جانے والی پاک ہندوستان بس سروس کو بحال کر دیا گیا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ پیر کو پاکستان سے 64 مسافروں نے جبکہ ضلع پونچھ، راولاکوٹ سے کشمیر میں (لائن آف کنٹرول) کنٹرول لائن کو 84 مسافروں نے عبور کیا۔

یہ سروس کنٹرول لائن پر حالیہ کشیدگی کی وجہ سے 17 روز تک معطل رہنے کے بعد دو طرفہ کوششوں سے آج بحال ہوگئی۔

بس سروس بحال ہونے پر لوگوں نے خوشی کا اظہار کیا ہے، ان کا کہنا ہے کہ اس طرح کے واقعات سے دونوں طرف کے عوام کو پریشانیاں اٹھانا پڑتی ہیں۔

واضح رہے کہ لائن آف کنٹرول پر ہونے والی جھڑپوں سے ہلاکتوں کے بعد یہ سروس بند کردی گئی تھی تاہم دونوں اطراف کے ڈائریکٹر جنرل ملٹری آپریشنز کے ٹیلی فونک رابطوں میں ایل او سی پر کشیدگی کم کرنے پر اتفاق ہوا تھا۔

لائن آف کنٹرول پر تجارت منگل سے دوبارہ شروع ہوگی اس حوالے سے تمام تاجروں کو آگاہ کر دیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں پونچھ راولاکوٹ سے پار کنٹرول لائن بس سروس کا آغاز 2005 میں ہوا تھا، جو کہ خطے میں تقسیم خاندانوں کے لیے ایک دوسرے سے ملنے کا ایک ذریعہ ہے.

اس حصے سے مزید

دیہاتی کی لاش پاکستانی حکام کے حوالے

آزاد کمشیر میں مقامی لوگوں کا کہنا ہے کالاخان نامی اس دیہاتی کو بدھ کے روز انڈین فورسز نے حراست میں لیا تھا۔

مظفرآباد: مسافر وین کھائی میں گرنے سے 16 ہلاکتیں

ریسکیو ٹیموں نے لاشوں اور زخمیوں کو کھائی سے نکال کر رولر ہیلتھ سینٹر عباس پور منتقل کردیا ہے۔

آزاد کشمیر: ایک دیہاتی کو ہندوستانی فوجی پکڑ کر لے گئے

مقامی باشندوں کے مطابق ہندوستانی فوجی چرواہوں اور گھاس کاٹنے والے دیہاتیوں کو اکثر ایل او سی پار کرکے اٹھا لے جاتے ہیں۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

کچھ جوابات

وزیر اعظم کا اعلان کردہ کمیشن مسئلے سلجھانے کے بجائے زیادہ الجھا دے گا۔

بڑھتی مایوسی

مایوسی تب اور بڑھتی ہے جب عوام دیکھتے ہیں کہ حکمران عوامی پیسے سے اپنے کام چلانے میں شرم بھی محسوس نہیں کرتے۔

بلاگ

پاکستان ایک "ساس" کی نظر سے

68 سالہ جین والر کو پاکستان بہت پسند آیا، اتنا زیادہ کہ بقول ان کے مجھے پاکستان سے محبت ہوگئی ہے۔

مووی ریویو: گارڈینز آف گیلیکسی ایک ویژول ٹریٹ ہے

جو یادوں کے ایسے دور میں لے جاتی ہے جب ایکشن کے بجائے مزاح کسی کامک کا سرمایہ اور اسے بیان کرنے کا ذریعہ ہوا کرتا تھا۔

اب مارشل لاء کیوں ناممکن؟

ایوب، ضیاء اور مشرّف، تینوں ہی مغربی قوّتوں کے جغرافیائی سیاسی کھیلوں میں اسٹریٹجک کردار کے بدلے جیتے تھے۔

عمران خان کے نام کھلا خط

گزشتہ ایک ہفتے کے واقعات پی ٹی آئی ورکرز کی تمام امیدوں اور توقعات کو بچکانہ، سادہ لوح اور غلط ثابت کر رہے ہیں۔