21 اپريل, 2014 | 20 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

دھرنے کے فیصلے سے مایوسی ہوئی، وٹو

منظور وٹو۔ - اے پی پی فوٹو
منظور احمد وٹو۔ - اے پی پی فوٹو

لاہور: پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) پنجاب کے صدر میاں منظور احمد وٹو نے کہا ہے کہ انہیں مسلم لیگ نون کے دھرنے کے فیصلے سے مایوسی ہوئی ہے۔

پیر کو لاہور میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے صوبائی صدر نے کہا کہ چاروں صوبوں کے گورنرز کی تبدیلی کا مطالبہ مضحکہ خیز ہے۔

انہوں نے کہا کہ تحریک منہاج القرآن کے دھرنے کو غیر آئینی قرار دینے والی نون لیگ خود دھرنا دینے کا اعلان کر رہی ہے۔

انہوں نے دھرنے کے فیصلے کو مایوس کُن قرار دیتے ہوئے کہا کہ اسمبلیاں تحلیل کرنے کے حوالے سے فیصلہ اتفاق رائے سے کیا جائے گا۔

منظور وٹو نے کہا کہ گورنر ہٹانے کا مطالبہ درست نہیں، نگران سیٹ اپ میں بھی  گورنروں کے پاس اتھارٹی نہیں ہوگی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستانی قیادت جمہوریت پرمتفق ہے اور اس کا تسلسل آئندہ بھی برقرار رہے گا۔

یہ پیش رفت اس وقت سامنے آئی ہے جب مسلم لیگ ن نے پالیمنٹ ہاؤس کے سامنے دھرنا دینے کا اعلان کیا ہے۔ اس حوالے سے پارٹی نے سندھ میں اپوزیشن رہنماؤں کو ان کا ساتھ دینے کی دعوت دی ہے۔

ادھر پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) ن لیگ کے فیصلے کی حمایت کا اعلان کیا تاہم چند گھنٹوں بعد دھرنے میں نہ بیٹھنے کا فیصلہ کیا گیا۔

اس حصے سے مزید

'طالبان کے مطالبات قبول کرنے میں کوئی حرج نہیں'

جماعتِ اسلامی کے امیر سراج الحق کا کہنا تھا کہ حکومت کو چاہیے کہ وہ مطالبات پر سنجیدگی سے غور کرے۔

وزیر اعظم کیخلاف توہینِ عدالت کی درخواست مسترد

لاہور ہائی کورٹ نے اپنے فیصلے میں مؤقف اختیار کیا کہ وزیرِ اعظم کو آئین کے تحت استثنیٰ حاصل ہے۔

ڈیرہ غازی خان: ٹریفک حادثے میں 14 ہلاکتیں

یہ واقعہ ڈیرہ غازی خان کے علاقے کوٹ چٹھہ میں اس وقت پیش آیا جب ایک تیز رفتار بس اسٹاپ پر کھڑے لوگوں پر چڑھ گئی۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے

دو قومی نظریہ اور ہندوستانی اقلیتیں

دو قومی نظریہ مسلمانوں اور ہندوؤں میں تو تفریق کرتا ہے لیکن دیگر اقلیتوں، خاص کر دلتوں کو یکسر فراموش کرتا ہے۔