02 ستمبر, 2014 | 6 ذوالقعد, 1435
ڈان نیوز پیپر

نگران حکومت سے متعلق مشاورت مکمل کرلی، کائرہ

وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات قمرزمان کائرہ میڈیا سے گفتگو کر رہے ہیں ۔ — اے پی پی فائل فوٹو
وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات قمرزمان کائرہ میڈیا سے گفتگو کر رہے ہیں ۔ — اے پی پی فائل فوٹو

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے اطلاعات و نشریات قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی نے اسمبلیوں کی تحلیل اور نگران حکومت سے متعلق مشاورت مکمل کرلی ہے، اس حوالے سے اتحادیوں سے اب مشاورت شروع کریں گے۔

ڈان نیوز کے مطابق، منگل کو اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے قمر زمان کا کہنا تھا کہ نگران وزیراعظم کے نام پر مشاورت شروع نہیں ہوئی تو کسی نام کو حتمی شکل کیسے دی جا سکتی ہے، حکومت اور اسمبلیاں اپنے آخری دن تک کام کر سکتی ہیں جبکہ حکومت طاہرالقادری کے ساتھ معاہدے پر پابند ہے۔

انہوں نے کہا کہ قائد حزب اختلاف نگران وزیراعظم کے لیے 6 کے بجائے 2 نام وزیراعظم کو دیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ن لیگ کی نئے صوبے کی سفارشات کی مخالفت افسوسناک ہے اور فرحت اللہ بابر کے بارے میں چوہدری نثار کا رویہ مناسب نہیں، چوہدری نثار الفاظ استعمال کرنے میں احتیاط کریں ورنہ احترام نہیں رہے گا۔

کائرہ کا کہنا تھا کہ ن لیگ دھرنے کی بجائے مذاکرات کا راستہ اپنائے، مسلم لیگ ن پہلے واضح کرے کہ الیکشن کمیشن کے ساتھ ہیں یا مخالفت میں ہیں، الیکشن کمیشن کو بااختیار بنانے کا فورم سڑکیں نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کراچی میں حلقہ بندیوں کا مسئلہ حکومت کا نہیں جبکہ حکومت نے بھرتیوں پر پابندی سے متعلق الیکشن کمیشن سے رابطہ کیا ہے۔

اس حصے سے مزید

پی ٹی آئی اور پی اے ٹی قائدین کو بغاوت کے مقدمے کا سامنا

پی ٹی آئی اور پی اے ٹی کی قیادت کے خلاف بغاوت اور دہشتگردی سمیت مختلف دفعات کے تحت پانچ مقدمات درج کیے گئے ہیں۔

'مظاہرین جانتے تھے کہ وہ پی ٹی وی میں کررہے ہیں'

یہ لوگ حیرت انگیز طور پر پی ٹی وی کے اہم دفاتر، مرکزی نیوز روم اور نیوز اسٹوڈیوز کے مقامات سے واقف تھے۔

ڈاکٹروں کا ' گولی کو گولی' کہنے سے گریز

پنی جانوں سے ہاتھ دھونے والے دو افراد کی ہلاکت " تیز رفتار دھاتی متحرک چیز" کی وجہ سے ہوئی ہے۔


تبصرے بند ہیں.
سروے
مقبول ترین
قلم کار

احتیاطی نظربندی کا غلط قانون

فوجی اور سویلین حکومتوں نے باقاعدگی سے احتیاطی نظربندی کو اپنے مخالفین کو خاموش کرنے اوردھمکانے کے لیے استعمال کیا ہے۔

توجہ طلب شعبہ

بجلی کی لائنیں لگانے اور مرمت کرنے کو دنیا کے دس خطرناک ترین پیشوں میں شمار کیا جاتا ہے-

بلاگ

سیاست اور اخلاقیات

پتہ نہیں وہ کون سے ملک یا قومیں ہوتی ہیں جن کے عہدیدار کسی بھی ناکامی کی صورت میں فوراً اپنے عہدے سے مستعفی ہوجاتے ہیں۔

تاریخ کی تکرار

پولیس پر تشدد اور دہشت گردی کا الزام لگانے والے کیا اپنے گھروں پر کسی ایرے غیرے نتھو خیرے کو چڑھائی کی اجازت دیں گے؟

آبی مسائل کا ذمہ دار ہندوستان یا خود پاکستان؟

پاکستان میں پانی اور بجلی کے بحران کی وجہ پچھلے 5 عشروں سے پانی کے وسائل کی خراب مینیجمنٹ ہے۔

نوازشریف: قوت فیصلہ سے محروم

نواز شریف اپنے بادشاہی رویے کی وجہ سے پھنس چکے ہیں، جو فیصلے انہیں چھ ماہ پہلے کرنے چاہیے تھے وہ آج کر رہے ہیں۔