20 اپريل, 2014 | 19 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

عام انتخابات کے لیے حتمی ضابطہ اخلاق جاری

۔۔۔۔۔فائل فوٹو
۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے لیے حتمی ضابطہ اخلاق جاری کردیا،حتمی ضابطہ اخلاق کے تحت صدر، گورنر، وزیراعظم اور وزراء انتخابی مہم میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔

ڈان نیوز کے مطابق، الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے جاری حتمی ضابطہ اخلاق چالیس سے چھیالیس نکات پر مشتمل ہے، جسے سیاسی جماعتوں کی مشاورت سے تیار کیا گیا ہے۔

انتخابی ضابطہ اخلاق کے مطابق صدر، گورنر، وزیراعظم وزرا، مشیروں کے انتخابی مہم میں حصہ لینے پر پابندی ہوگی جبکہ فنڈز کے اجرا، ترقیاتی سکیموں اور سرکاری مشینری کا استعمال ممنوع ہوگا۔

اس کے علاوہ خواتین کو الیکشن میں حصہ لینے یا ووٹ ڈالنے سے نہیں روکا جائے گا، خواتین کو ووٹ ڈالنے سے روکنے کیلئے سیاسی جماعتیں آپس میں کوئی معاہدہ بھی نہیں کریں گی۔

انتخابی ضابطہ اخلاق کے مطابق پولنگ سٹیشنز کی ایک سو گز کی حدود میں ووٹ مانگنے پر پابندی ہوگی اور پولنگ اسٹیشن کی چار سو گز کی حدود کے اندر انتخابی مہم بھی نہیں چلائی جاسکے گی۔

خیال رہے کہ انتخابی مہم کے دوران وال چاکنگ اور لاؤڈ سپیکر کے استعمال پر پابندی ہوگی۔

امیدوار انتخابی اخراجات کیلئے اکاؤنٹ مختص کریں گے، اور انتخابی اخراجات کی رسیدیں بھی رکھیں گے تاہم انتخابی مہم کے دوران امیدواران پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا پر دباؤ نہیں ڈالا جائے گا۔

انتخابی ضابطہ اخلاق میں مزید کہا گیا ہے کہ پولنگ کے ایک دن بعد بھی اسلحہ کی نمائش پر پابندی ہوگی، انتخابی شیڈول جاری ہونے سے نتائج آنے تک ڈی آر اوز اور آر اوز کو درجہ اول مجسٹریٹ کے اختیارات حاصل ہوں گے جبکہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر جرمانہ اور نااہلی کی سزا ہوگی۔

اس حصے سے مزید

وزیرِ اعظم نے حامد میر حملے کی جوڈیشل تحقیقات کا حکم دیدیا

کمیشن کیلئے سپریم کورٹ سے درخواست کی جائے گی، قاتلوں کی اطلاع پر ایک کروڑ روپے انعام کا اعلان۔

پرویز مشرف کراچی پہنچ گئے

پرویز مشرف کا طیارہ کراچی ایئرپورٹ لینڈ کرگیا جہاں ان کی آمد کے پیش نظر سخت سیکورٹی اقدامات کیے گئے ہیں۔

'دہشت گردی ختم کیے بغیر مضبوط دفاع کا قیام ناممکن'

مضبوط معیشت اور دہشت گردی ختم کیے بغیر ملکی دفاع کا قیام ناممکن ہے،وزیر اعظم کا کاکول اکیڈمی میں پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے

دو قومی نظریہ اور ہندوستانی اقلیتیں

دو قومی نظریہ مسلمانوں اور ہندوؤں میں تو تفریق کرتا ہے لیکن دیگر اقلیتوں، خاص کر دلتوں کو یکسر فراموش کرتا ہے۔