24 اپريل, 2014 | 23 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

بجلی کی فراہمی جزوی طور پر بحال

فائل تصویر --.
فائل تصویر --.

لاہور: ملک میں پیر کی شام تک تقریباً تیس فیصد علاقے ایسے تھے جہاں شام کو دیر تک بجلی غائب رہی۔ وزارت پانی و بجلی کے ذرائع کے مطابق، سندھ، اندرونی پنجاب اور بلوچستان میں ابھی بھی کچھ علاقوں میں بجلی بحال ہونا باقی ہے۔

کل ان علاقوں میں بھی لمبے وقت تک لوڈ شیڈنگ کی گئی جہاں جہاں بجلی بحال کردی گئی تھی۔

پانی اور بجلی کے وزیر اور وزارت کے ترجمان سے جب اس معاملے پر جواب کے لیے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کسی فون کال اور میسج کا جواب نہیں دیا۔

شام میں جنریشن 6700 میگاواٹ تھی جبکہ اتوار کی شام کو جنریشن 8500 میگاواٹ تھی۔ نیشنل ٹرانسمیشن اور ڈسپیچ کمپنی (این ٹی ڈی سی) کے ایک عہدیدار نے کہا کہ بجلی کی پلانگ کرنے والے افسران جنریشن کے اعداد و شمار پر کام کرتے رہے۔

'این ٹی ڈی سی کو ان بجلی بحال ہونے والے علاقوں سے لوڈشیڈنگ کرکے دوسرے گرڈوں پر دینی پڑی تاکہ ان علاقوں کو باضابطہ طور پر بجلی بحال ہونے والے علاقوں کی گنتی میں شامل کیا جاسکے۔ این ٹی ڈی سی کے عہدیدار نے کہا کہ شام تک ستر فیصد علاقوں میں 'سرکاری طور' پر بجلی بحال کردی گئی تھی، اب آگر وہاں لوڈشیڈنگ کی گئی یا نہیں کی گئی یہ الگ مسئلہ ہے۔

پاکستان الیکٹرک پاور کمپنی کے سابق منیجنگ ڈائریکٹر، بصیر احمد نے اتوار کو ہونے والے بجلی کے سانحے کو نااہلی قرار دیا۔

ان کا کہنا تھا کہ حقیقت یہ ہے کہ نظام بیوروکریٹس چلا رہے ہیں جو پیداوار، ٹرانسمیشن اور تقسیم کی تکنیکی سے واقف نہیں ہیں اور یہی وجہ ہے کہ نظام بدحالی کی طرف جارہا ہے۔

دریں اثناء اچ پاور کے ترجمان نے اس بات کو ماننے سے انکار کیا کہ ان کے پلانٹ میں خرابی کی وجہ سے تمام مسئلہ کھڑا ہوا۔ انہوں نے ایسی رپاورٹوں کو غلط قرار دیا۔

اس حصے سے مزید

ملک آمریت کا متحمل نہیں ہوسکتا: خورشید شاہ

اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ سیاستدان ماضی سے سبق سیکھ چکے ہیں اور ملک کی بقا کے لیے معمولی غلطیاں نظر انداز کرنی ہوں گی۔

دھرتی کا بیٹا ننانوے برس بعد لوٹ آیا

خوشونت سنگھ کی راکھ ان کے آبائی قصبے ہڈالی میں اس سکول کی دیوار میں رکھ دی گئی، جہاں انہوں نے ابتدائی تعلیم حاصل کی تھی

جماعت اسلامی کا طالبان سے مستقل جنگ بندی کا مطالبہ

امیرِ جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ گولیوں کے بجائے منطقی دلائل کا تبادلہ کیا جانا چاہیٔے۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

مقدّس ریپ

دو دن وہ اسی گاؤں میں ماں کے بازؤں میں تڑپتی رہی۔ گھر میں پیسے ہی کہاں تھے کہ علاج کے لئے بدین تک ہی پہنچ پاتے۔

میڈیا اور نقل بازی کا کینسر

ایسا نہیں کہ میں کوئی پہلا انسان ہوں جس کے خیالات پر نقب لگائی گئی ہو، مگر آخری ضرور بننا چاہتا ہوں

!مار ڈالو، کاٹ ڈالو

مجھے احساس ہوا کہ مجھے اس پر شدید غصہ آ رہا ہے اور میں اسے سچ بولنے پر چیخ چیخ کر ڈانٹنا چاہتا ہوں-

خطبہء وزیرستان

کس سازش کے تحت 'آپکو' بدنام کرنے کے لئے دھماکے کیے جاتے ہیں؟ کس صوبے کے مظلوم عوام آپکے بھائی ہیں؟