20 اپريل, 2014 | 19 جمادی الثانی, 1435
ڈان نیوز پیپر

بجلی کی فراہمی جزوی طور پر بحال

فائل تصویر --.
فائل تصویر --.

لاہور: ملک میں پیر کی شام تک تقریباً تیس فیصد علاقے ایسے تھے جہاں شام کو دیر تک بجلی غائب رہی۔ وزارت پانی و بجلی کے ذرائع کے مطابق، سندھ، اندرونی پنجاب اور بلوچستان میں ابھی بھی کچھ علاقوں میں بجلی بحال ہونا باقی ہے۔

کل ان علاقوں میں بھی لمبے وقت تک لوڈ شیڈنگ کی گئی جہاں جہاں بجلی بحال کردی گئی تھی۔

پانی اور بجلی کے وزیر اور وزارت کے ترجمان سے جب اس معاملے پر جواب کے لیے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کسی فون کال اور میسج کا جواب نہیں دیا۔

شام میں جنریشن 6700 میگاواٹ تھی جبکہ اتوار کی شام کو جنریشن 8500 میگاواٹ تھی۔ نیشنل ٹرانسمیشن اور ڈسپیچ کمپنی (این ٹی ڈی سی) کے ایک عہدیدار نے کہا کہ بجلی کی پلانگ کرنے والے افسران جنریشن کے اعداد و شمار پر کام کرتے رہے۔

'این ٹی ڈی سی کو ان بجلی بحال ہونے والے علاقوں سے لوڈشیڈنگ کرکے دوسرے گرڈوں پر دینی پڑی تاکہ ان علاقوں کو باضابطہ طور پر بجلی بحال ہونے والے علاقوں کی گنتی میں شامل کیا جاسکے۔ این ٹی ڈی سی کے عہدیدار نے کہا کہ شام تک ستر فیصد علاقوں میں 'سرکاری طور' پر بجلی بحال کردی گئی تھی، اب آگر وہاں لوڈشیڈنگ کی گئی یا نہیں کی گئی یہ الگ مسئلہ ہے۔

پاکستان الیکٹرک پاور کمپنی کے سابق منیجنگ ڈائریکٹر، بصیر احمد نے اتوار کو ہونے والے بجلی کے سانحے کو نااہلی قرار دیا۔

ان کا کہنا تھا کہ حقیقت یہ ہے کہ نظام بیوروکریٹس چلا رہے ہیں جو پیداوار، ٹرانسمیشن اور تقسیم کی تکنیکی سے واقف نہیں ہیں اور یہی وجہ ہے کہ نظام بدحالی کی طرف جارہا ہے۔

دریں اثناء اچ پاور کے ترجمان نے اس بات کو ماننے سے انکار کیا کہ ان کے پلانٹ میں خرابی کی وجہ سے تمام مسئلہ کھڑا ہوا۔ انہوں نے ایسی رپاورٹوں کو غلط قرار دیا۔

اس حصے سے مزید

'طالبان کے مطالبات قبول کرنے میں کوئی حرج نہیں'

جماعتِ اسلامی کے امیر سراج الحق کا کہنا تھا کہ حکومت کو چاہیے کہ وہ مطالبات پر سنجیدگی سے غور کرے۔

وزیر اعظم کیخلاف توہینِ عدالت کی درخواست مسترد

لاہور ہائی کورٹ نے اپنے فیصلے میں مؤقف اختیار کیا کہ وزیرِ اعظم کو آئین کے تحت استثنیٰ حاصل ہے۔

ڈیرہ غازی خان: ٹریفک حادثے میں 14 ہلاکتیں

یہ واقعہ ڈیرہ غازی خان کے علاقے کوٹ چٹھہ میں اس وقت پیش آیا جب ایک تیز رفتار بس اسٹاپ پر کھڑے لوگوں پر چڑھ گئی۔


تبصرے بند ہیں.
مقبول ترین
بلاگ

دنیاۓ صحافت: داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

ایک فوجی کی طرح صحافی کو بھی ہرگز اکیلا نہیں چھوڑا جاسکتا، یہ سوچنا کہ یہ ہماری جنگ نہیں، سراسر حماقت ہے-

2 - پاکستان کی شہری تاریخ ... ہمیں سب ہے یاد ذرا ذرا

بھٹو حکومت کے ابتدائی سالوں میں قوم کا مزاج یکسر تبدیل ہو گیا تھا، کیونکہ ملک ایک نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہا تھا-

سچ، گولی اور بے بس جرنلسٹ

حامد میر پر حملہ ایک بار پھر صحافی برادری کی بے بسی کی طرف اشارہ کرتا ہے

دو قومی نظریہ اور ہندوستانی اقلیتیں

دو قومی نظریہ مسلمانوں اور ہندوؤں میں تو تفریق کرتا ہے لیکن دیگر اقلیتوں، خاص کر دلتوں کو یکسر فراموش کرتا ہے۔